News Ticker
  • “We cannot expect people to have respect for law and order until we teach respect to those we have entrusted to enforce those laws.” ― Hunter S. Thompson
  • “And I can fight only for something that I love
  • love only what I respect
  • and respect only what I at least know.” ― Adolf Hitler
  •  Click Here To Watch Latest Movie Jumanji (2017) 

Welcome to Funday Urdu Forum

Guest Image

Welcome to Funday Urdu Forum, like most online communities you must register to view or post in our community, but don't worry this is a simple free process that requires minimal information for you to signup. Be apart of Funday Urdu Forum by signing in or creating an account via default Sign up page or social links such as: Facebook, Twitter or Google.

  • Start new topics and reply to others
  • Subscribe to topics and forums to get email updates
  • Get your own profile page and make new friends
  • Send personal messages to other members.
  • Upload or Download IPS Community files such as:  Applications, Plugins etc.
  • Upload or Download your Favorite Books, Novels in PDF format. 

Search the Community

Showing results for tags 'waqt'.



More search options

  • Search By Tags

    Type tags separated by commas.
  • Search By Author

Content Type


Forums

  • Help Support
    • Announcement And Help
    • Funday Chatroom
  • Poetry
    • Shair-o-Shaa'eri
    • Famous Poet
  • Islam - اسلام
    • QURAN O TARJUMA قرآن و ترجمہ
    • AHADEES MUBARIK آحدیث مبارک
    • Ramazan ul Mubarik - رمضان المبارک
    • Deen O Duniya - دین و دنیا
  • Other Forums
    • Chitchat and Greetings
    • Urdu Adab
    • Entertainment
    • Common Rooms
  • Music, Movies, and Dramas
    • Movies Song And Tv.Series
  • Science, Arts & Culture
    • Education, Science & Technology
  • IPS Community Suite
    • IPS Community Suite 4.1
    • IPS Download
    • IPS Community Help/Support And Tutorials

Blogs

  • Ishq_janoon_Dewanagi
  • Uzee khan
  • Beauty of Words
  • Tareekhi Waqaiyaat
  • Geo News Blog
  • The Pakistan Tourism
  • My BawaRchi_KhaNa
  • Mukaam.e.Moahhabt
  • FDF Members Poetry
  • Sadqy Tmhary
  • FDF Online News
  • Pakistan
  • Dua's Kitchen
  • Raqs e Bismil
  • HayDay Game

Categories

  • Books
    • Urdu Novels
    • Islamic
    • General Books
  • IPS Community Suite 4
    • Applications
    • Plugins
    • Themes
    • Language Packs
    • IPS Extras
  • IPS Community Suite 3.4
    • Applications
    • Hooks/BBCodes
    • Themes/Skins
    • Language Packs
    • Miscellaneous XML Files
  • XenForo
    • Add-ons
    • Styles
    • Language Packs
    • Miscellaneous XML Files
  • Web Scripts
  • PC Softwares

Categories

  • Articles

Categories

  • Records

Calendars

  • Community Calendar
  • Pakistan Holidays

Genres

  • English
  • New Movie Songs
  • Old Movies Songs
  • Single Track
  • Classic
  • Ghazal
  • Pakistani
  • Indian Pop & Remix
  • Romantic
  • Punjabi
  • Qawalli
  • Patriotic
  • Islam

Categories

  • Islam
  • Online Movies
    • English
    • Indian
    • Punjabi
    • Hindi Dubbed
    • Animated - Cartoon
    • Other Movies
    • Pakistani Movies
  • Video Songs
    • Coke Studio
  • Mix Videos
  • Online Live Channels
    • Pakistani Channels
    • Indian Channels
    • Sports Channels
    • English Channels
  • Pakistani Drama Series
    • Zara Yaad ker
    • Besharam (ARY TV series)
  • English Series
    • Quantico Season 1
    • SuperGirl Season 1
    • The Magicians
    • The Shannara Chronicles
    • Game of Thrones

Found 9 results

  1. ایک بحر میں پانچ غزلیں *********************** 1. نہ آیا ہوں نہ میں لایا گیا ہوں میں حرفِ کن ہوں فرمایا گیا ہوں میری اپنی نہیں ہے کوئی صورت ہر اک صورت سے بہلایا گیا ہوں بہت بدلے میرے انداز لیکن جہاں کھویا وہیں پایا گیا ہوں وجودِ غیر ہو کیسے گوارا تیری راہوں میں بے سایا گیا ہوں نجانے کون سی منزل ہے واصف جہاں نہلا کے بلوایا گیا واصف علی واصف _______ 2. فلک سے خاک پر لایا گیا ہوں کہاں کھویا کہاں پایا گیا ہوں میں زیور ہوں عروسِ زِندگی کا بڑے تیور سے پہنایا گیا ہوں نہیں عرض و گزارش میرا شیوہ صدائے کُن میں فرمایا گیا ہوں بتا اے انتہائے حسنِ دنیا میں بہکا ہوں کہ بہکایا گیا ہوں مجھے یہ تو بتا اے شدتِ وصل میں لِپٹا ہوں کہ لِپٹایا گیا ہوں بدن بھیگا ہوا ہے موتیوں سے یہ کِس پانی سے نہلایا گیا ہوں اگر جانا ہی ٹھہرا ہے جہاں سے تو میں دنیا میں کیوں لایا گیا ہوں یہ میرا دل ہے یا تیری نظر ہے میں تڑپا ہوں کہ تڑپایا گیاہوں مجھے اے مہرباں یہ تو بتا دے میں ٹھہرا ہوں کہ ٹھہرایا گیا ہوں تِری گلیوں سے بچ کر چل رہا تھا تِری گلیوں میں ہی پایا گیا ہوں جہاں روکی گئی ہیں میری کِرنیں وہاں میں صورتِ سایہ گیا ہوں عدیم اِک آرزو تھی زِندگی میں اُسی کے ساتھ دفنایا گیا ہوں عدیم ہاشمی _______ 3. جہاں قطرے کو ترسایا گیا ہوں وہیں ڈوبا ہوا پایا گیا ہوں بلا کافی نہ تھی اک زندگی کی دوبارہ یاد فرمایا گیا ہوں سپرد خاک ہی کرنا ہے مجھ کو تو پھر کاہے کو نہلایا گیا ہوں اگرچہ ابرِ گوہر بار ہوں میں مگر آنکھوں سے برسایا گیا ہوں کوئی صنعت نہیں مجھ میں تو پھر کیوں نمائش گاہ میں لایا گیا ہوں مجھے تو اس خبر نے کھو دیا ہے سنا ہے میں کہیں پایا گیا ہوں حفیظ اہل زباں کب مانتے تھے بڑے زوروں سے منوایا گیا ہوں حفیظ جالندھری ______ 4. جہاں معبود ٹھہرايا گيا ہوں وہيں سولی پہ لٹکايا گيا ہوں سنا ہر بار ميرا کلمۂ صدق مگر ہر بار جھٹلايا گيا ہوں مرے نقشِ قدم نظروں سے اوجھل مگر ہر موڑ پر پايا گيا ہوں کبھی ماضی کا جيسے تذکرہ ہو زباں پر اس طرح لايا گيا ہوں جو موسی ہوں تو ٹھکرايا گيا تھا جو عيسی ہوں تو جھٹلايا گيا ہوں جہاں ہے رسم قتلِ انبيا کی وہاں مبعوث فرمايا گيا ہوں ابھی تدفين باقی ہے ابھی تو لہو سے اپنے نہلايا گيا ہوں دوامی عظمتوں کے مقبرے ميں ہزاروں بار دفنايا گيا ہوں ميں اس حيرت سرائے آب و گل ميں بحکمِ خاص بھجوايا گيا ہوں کوئی مہمان ناخواندہ نہ سمجھے بصد اصرار بلوايا گيا ہوں بطورِ ارمغاں لايا گيا تھا بطورِ ارمغاں لايا گيا ہوں ترس کيسا کہ اس دارالبلا ميں ازل کے دن سے ترسايا گيا ہوں اساسِ ابتلا محکم ہے مجھ سے کہ ديواروں ميں چنوايا گيا ہوں کبھی تو نغمۂ داؤد بن کر سليماں کے لئے گايا گيا ہوں نجانے کون سے سانچے ميں ڈھاليں ابھی تو صرف پگھلايا گيا ہوں جہاں تک مہرِ روز افروز پہنچا وہيں تک صورتِ سايہ گيا ہوں رئیس امروہوی ______ 5. تمناؤں میں الجھایا گیا ہوں کھلونے دے کے بہلایا گیا ہوں دلِ مضطر سے پوچھ اے رونقِ بزم میں خود آیا نہیں لایا گیا ہوں لحد میں کیوں نہ جاؤں منہ چھپائے بھری محفل سے اٹھوایا گیا ہوں ہوں اس کوچے کے ہر ذرے سے آگاہ ادھر سے مدتوں آیا گیا ہوں سویرا ہے بہت اے شورِ محشر ابھی بے کار اٹھوایا گیا ہوں قدم اٹھتے نہیں کیوں جانبِ دیر کسی مسجد میں بہکایا گیا ہوں کجا میں اور کجا اے شاد دنیا کہاں سے کس جگہ لایا گیا ہوں شاد عظیم آبادی ♡♡♡♡♡
  2. دکھ کی لہر نے چھیڑا ھوگا یاد نے کنکر پھینکا ھوگا آج تو میرا دل کہتا ھے تو اس وقت اکیلا ھوگا میرے چومے ہوئے ہاتھوں سے اوروں کو خط لکھتا ھوگا بھیگ چلیں اب رات کی پلکیں تو اب تھک کے سویا ھوگا ریل کی گہری سیٹی سن کر رات کا جنگل گونجا ھوگا شہر کے خالی اسٹیشن پر کوئی مسافر اترا ھوگا آنگن میں پھر چڑیاں بولیں تو اب سو کر اٹھا ھوگا یادوں کی جلتی شبنم سے پھول سا مکھڑا دھویا ھوگا موتی جیسی شکل بنا کر آئینے کو تکتا ھوگا شام ہوئی اب تو بھی شاید اپنے گھر کو لوٹا ھوگا نیلی دھندلی خاموشی میں تاروں کی دھن سنتا ھوگا میرا ساتھی شام کا تارا تجھ سے آنکھ ملاتا ھوگا شام کے چلتے ہاتھ نے تجھ کو میرا سلام تو بھیجا ھوگا پیاسی کرلاتی کونجوں نے میرا دکھ تو سنایا ھوگا میں تو آج بہت رویا ھوں تو بھی شاید رویا ھوگا ناصر تیرا میت پرانا تجھ کو یاد تو آتا ھوگا۔۔
  3. poetry

    ﻭﻗﺖ ﮐﯽ ﻋﺪﺍﻟﺖ ﻣﯿﮟ . .. ﺧﻮﺍﺏ ﺩﯾﮑﻬﻨﮯ ﻭﺍﻟﻮﮞ ﮐﻮ ... ﺳﺰﺍﺋﮯ ﻣﻮﺕ ﮨﻮﺗﯽ ﮨﮯ ... ﺯﻣﯿﻦ ﮐﯽ ﻗﯿﺪ ﻣﻠﺘﯽ ﮨﮯ ..... ﮐﻮﺉ ﺳﺎﺗﻬﯽ ... ﮐﻮﺉ ﮨﺎﻣﯽ .... ﮐﻮﺉ ﻋﯿﺴﯽ ﻧﮩﯿﮟ ﻣﻠﺘﺎ ... ﺟﺐ ﻭﻗﺖ ﭼﺎﻝ ﭼﻠﺘﺎ ﮨﮯ ... ﺑﺴﺎﻃﯿﮟ ﺍﻟﭧ ﺟﺎﺗﯽ ﮨﯿﮟ . .... ﮐﻮﺉ ﺗﺠﻮﯾﺰ .... ﮐﻮﺉ ﺗﺪﺑﯿﺮ ... ﮐﻮﺉ ﺟﺎﺩﻭ ﻧﮩﯿﮟ ﭼﻠﺘﺎ .. ﺧﻮﺍﺑﻮﮞ ﮐﯽ ﺣﻘﯿﻘﺖ ﺟﺐ ... ﺟﺎﻥ ﻟﯽ ﺗﻢ ﻧﮯ ... ﺗﻮ ﭘﻬﺮ ﺳﻦ ﻟﻮ ... ﮐﻮﺉ ﻣﻨﺰﻝ ... ﮐﻮﺉ ﺭﺳﺘﮧ ... ﮐﻮﺉ ﻣﺮﺷﺪ ﻧﮩﯿﮟ ﻣﻠﺘﺎ ...♡
  4. لاکھ ضبطِ خواہش کے بے شمار دعوے ہوں اُس کو بھُول جانے کے بے پناہ اِرادے ہوں اور اس محبت کو ترک کر کے جینے کا فیصلہ سُنانے کو کتنے لفظ سوچے ہوں دل کو اس کی آہٹ پر برَملا دھڑکنے سے کون روک سکتا ہے پھر وفا کےصحرا میں اُس کے نرم لہجے اور سوگوار آنکھوں کی خُوشبوؤں کو چھُونے کی جستجو میں رہنے سے رُوح تک پگھلنے سے ننگے پاؤں چلنے سے کون روک سکتا ہے آنسوؤں کی بارش میں چاہے دل کے ہاتھوں میں ہجر کے مُسافر کے پاؤں تک بھی چھُو آؤ جِس کو لَوٹ جانا ہو اس کو دُور جانے سے راستہ بدلنے سے دُور جا نکلنے سے کون روک سکتا ہے
  5. ﺩﮬﻤﺎﻝ ﺩُﮬﻮﻝ ﺍُﮌﺍﺋﮯ ، ﺗﻮ ﻋﺸﻖ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ ﻭﺟﻮﺩ ﻭﺟﺪ ﻣﯿﮟ ﺁﺋﮯ ، ﺗﻮ ، ﻋﺸﻖ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ ﺑﮩﺎ ﺭﮨﺎ ﮨﮯ ﻭﮦ ﺟﻠﺘﮯ ﭼﺮﺍﻍ ﭘﺎﻧﯽ ﻣﯿﮟ ﺍُﺗﺮ ﮐﮯ ﺗﮩﮧ ﻣﯿﮟ ﺟﻼﺋﮯ ﺗﻮ ﻋﺸﻖ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ ﺗﭙِﺶ ﺗﻮ ﮨﻮﺗﯽ ﮨﮯ ﻟﯿﮑﻦ ﺩﮬﻮﺍﮞ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﻮﺗﺎ ﺟﻮ ﺁﮒ ﺍﺷﮏ ﻟﮕﺎﺋﮯ ﺗﻮ ﻋﺸﻖ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ ﺩﮐﺎﻥِ ﻭﺻﻞ ﺗﻮ ﮐﮭﻮﻟﮯ ﺍُﺩﺍﺱ ﺩﻝ ﻣﯿﮟ ﻣﮕﺮ ﺧﻮﺷﯽ ﺳﮯ ﮨﺠﺮ ﮐﻤﺎﺋﮯ ﺗﻮ ﻋﺸﻖ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ ﺟﻮ ﺧﺎﻝ ﻭ ﺧﺪ ﻣﯿﮟ ﻣﻘﯿّﺪ ﮨﻮ ﺳﻨﮓ ﮐﯽ ﺻﻮﺭﺕ ﭘﮕﮭﻞ ﮐﮯ،ﺍُﺱ ﮐﻮ ﺩﮐﮭﺎﺋﮯ ﺗﻮ ﻋﺸﻖ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ ﻗﺪﻡ ﻗﺪﻡ ﻭﮦ ﺩﮬﻤﮏ ﮨﻮ،ﺯﻣﯿﮟ ﺩﮬﮍﮎ ﺍُﭨّﮭﮯ ﻓﻠﮏ ﻏﺒﺎﺭ ﻣﯿﮟ ﺁﺋﮯ ﺗﻮ ﻋﺸﻖ ﮨﻮﺗﺎ ﮬﮯ ﻋﺼﺎﺋﮯ ﺟﺬﺏ ﮐﯽ ﺿﺮﺑﻮﮞ ﺳﮯ ﺗﻮﮌ ﮐﺮ ﺩﻧﯿﺎ ﻧﺌﮯ ﺳﺮﮮ ﺳﮯ ﺑﻨﺎﺋﮯ ﺗﻮ ﻋﺸﻖ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ ﺟﻮ ﺩﺭﺩ ﺍُﭨﮭﺘﺎ ﮨﮯ ﺭﮦ ﺭﮦ ﮐﮯ ﺳﯿﻨﮧﺀ ﺷَﻖ ﻣﯿﮟ ﮨﻮ ﺁﭖ ﺍﭘﻨﺎ ﺍُﭘﺎﺋﮯ ﺗﻮ ﻋﺸﻖ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ ﺩﺑﺎ ﮨﻮﺍ ﮨﻮ ﺟﻮ ﺍﭘﻨﯽ ﺍﻧﺎ ﮐﮯ ﻣﻠﺒﮯ ﻣﯿﮟ ﻭﮦ ﺧﻮﺩ ﮐﻮ ﺧﻮﺩ ﺳﮯ ﮨﭩﺎﺋﮯ ﺗﻮ ﻋﺸﻖ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ ﻧﮕﺮ ﻣﯿﮟ ﺭﮦ ﮐﮯ ﺑﮭﯽ ﻋﺎﺷﻖ ﺭﮨﮯ ﮔﺎ ﺩﺷﺖ ﻧﻮﺭﺩ ﻧﮩﯿﮟ ﮐﮧ ﺧﺎﮎ ﺍُﮌﺍﺋﮯ ﺗﻮ ﻋﺸﻖ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ ﺻﺪﺍ ﻟﮕﺎﺋﮯ ﺗﻮ ﺧﻮﺩ ﺑﮭﯽ ﺻﺪﺍ ﻣﯿﮟ ﮈﮬﻞ ﺟﺎﺋﮯ ﻓﻘﯿﺮ ﻧﺎﺩ ﺑﺠﺎﺋﮯ ﺗﻮ ﻋﺸﻖ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ ﻭﮦ ﻋﮑﺲ ﺁﻧﮑﮫ ﻣﯿﮟ ﺁﺋﮯ ﺗﻮ ﮐﭽﮫ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﻮﺗﺎ ﺷﺒﯿﮩﮧ ﺩﻝ ﻣﯿﮟ ﺳﻤﺎﺋﮯ ﺗﻮ ﻋﺸﻖ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ ﻓﻠﮏ ﻓﺮﯾﺐ ﮨﻮﮞ ﺑﺎﺗﯿﮟ،ﺯﻣﯿﮟ ﻓﺮﯾﺐ ﻋﻤﻞ ﮐﻮﺋﯽ ﺑﮭﯽ ﺭﻣﺰ ﻧﮧ ﭘﺎﺋﮯ ﺗﻮ ﻋﺸﻖ ﮨﻮﺗﺎ ﮬﮯ ﻏُﺒﺎﺭ ﮨﻮﺗﺎ ﮬﮯ ﺁﺋﮯ ﺟﻮ ﺯﺭ ﮐﮯ ﺭﺳﺘﮯ ﺳﮯ ﻏِﻨﺎ ﮐﯽ ﺭﺍﮦ ﺳﮯ ﺁﺋﮯ ﺗﻮ ﻋﺸﻖ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ ﺑﮕﻮﻟﮧ ﻭﺍﺭ ﻭﮦ ﺟﺘﻨﺎ ﺯﻣﯿﮟ ﭘﮧ ﺭﻗﺺ ﮐﺮﮮ ﺯﻣﯿﮟ ﮐﻮ ﺳﺎﺗﮫ ﮔﮭﻤﺎﺋﮯ ﺗﻮ ﻋﺸﻖ ﮨﻮﺗﺎ ﮬﮯ ﯾﮧ ﺳﻮﺯِ ﺟﺴﻢ ﺳﮯ ﺁﮔﮯ ﮐﯽ ﺁﮒ ﮨﮯ ﻧﯿّﺮ ﺍﻻﺅ ﺭﻭﺡ ﺟﻼﺋﮯ ﺗﻮ ﻋﺸﻖ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ !!
  6. میری جاں ٹهیک کہتی ہو میں سب کچهہ بهول جاوں گا تمہاری خواب سی آنکهیں تمہارا شبنمی لہجہ دبا کر ہونٹ کا کونا تمہارا مسکرانا بهی میری باتوں سے چڑ جانا مجهے اکثر "برا" کہنا مجهے اپنے مقابل جان کر نہ بیٹهنے دینا میرے تحفوں کے ریپرز کو بہت سنبهال کر رکهنا میرے سنگ واک پر جانا وہ مجهہ سے روٹهہ کر کہنا "میں واپس جا رہی ہوں تم میرے پیچهے نہیں آنا" مگر میرے بلانے پر میری جانب پلٹ آنا میری جاں ٹهیک کہتی ہو میں سب کچهہ بهول جاوں گا مگر یہ بات بهی سچ ہے میں ان لمحوں میں جیتا ہوں کہ جب یوں بے ارادہ ہی میرے شانے پہ سر رکهہ کر مجهے تم نے بتایا تها "محبت کے الاو میں اکیلے تم نہیں جلتے" !...میری جاں تم ہی بتلاو میں جن میں سانس لیتا ہوں میں ان اقرار کے لمحات کو کیا بهول سکتا ہوں؟ میری جاں ٹهیک کہتی ہو میں سب کچهہ بهول جاوں گا ,,,,,مگر اقرار کے لمحات کیسے بهول پاوں گا
  7. میں تمہیں پھر ملوں گی کہاں؟ کس طرح؟ پتہ نہیں شاید تمہارے خیالوں کی چنگاری بن کر تمہارے کینوس پر اتروں گی یا ایک پر اسرار لکیر بن کر خاموش بیٹھی تمہیں دیکھتی رہوں گی یا شاید سورج کی لو بن کر تمہارے رنگوں میں گھلوں گی یا تمہارے رنگوں کی بانہوں میں بیٹھ کر کینوس پر پھیل جاؤں گی پتہ نہیں کس طرح؟ کہاں؟ لیکن تمہیں ملوں گی ضرور یا شاید ایک چشمہ بنوں گی اور جیسے چشمے کا پانی ابلتا ہے میں پانی کے قطرے تمہارے بدن پر ملوں گی اور ایک ٹھنڈک سی بن کر تمہارے سینے سے لگوں گی میں اورتو کچھ نہیں جانتی لیکن یہ معلوم ہے کہ وقت جدھر بھی کروٹ لے گا یہ جنم میرے ساتھ چلے گا یہ جسم خاک ہوتا ہے تو سب کچھ ختم ہوتا ہوا محسوس ہوتاہے لیکن یادوں کے دھاگے کائناتی ذروں سے بنے ہوتے ہیں ....میں وہی ذرے چنوں گی ........دھاگوں کو بٹوں گی ......اور تمہیں پھر ملوں گی
  8. اک بار جو بچھڑ جائے وہ دوبارا نہیں ملتا مل جائے کوئی شخص تو سارا نہیں ملتا . اُس کی بھی نکل آتی ہے اظہار کی صورت جس شخص کو لفظوں کا سہارا نہیں ملتا . پھر دوبارا یہ بات بہت سوچ لے پہلے ہر لاش کو دریا کا کنارا نہیں ملتا . یہ سوچ کر دل پھر سے آمادہ ء الفت ہے ہر بار محبت میں خسارا نہیں ملتا . وہ شہر بھلا کیسے لگے اپنا جہاں پر اک شخص بھی ڈھونڈے سے ہمارا نہیں ملتا
  9. سب کچھ اپنا واری بیٹھاں جتی بازی،،،، ہاری بیٹھاں دم کسے دا بھردے بھردے اپنا آپ،،، وساری بیٹھاں مجرم،،، اپنا آپ اى آں میں ہتھیں کھیڈ اجاڑی بیٹھاں ویچ کے ٹوٹے خواباں دے سپنا میں وپاری بیٹھاں مرضی دا،،، ہک ساہ نہ لیا اُنج میں عمر گزاری بیٹھاں ہواواں،،،،،،، راکھ اڈاون پئیاں اِنج میں قسمت ساڑی بیٹھاں اوہلے،،،، کی میں رکھدا یارو زندگی اس توں واری بیٹھاں اپنے آپ نوں،، قیدی کر کے اُچیاں کنداں چاڑی بیٹھاں کوئی کسے دا دردی نئیں ساری گل، نتاری بیٹھاں مُکیئے آپ ایہہ غم نئیں مکدے ہن ایہہ سوچ وچاری بیٹھاں