Zarnish Ali

tu na kah ishq

13 posts in this topic

ﺗﻮ ﻧﮯ ﮐﮩﺎ ﻋﺸﻖ ﮈﮬﻮﻧﮓ ﮨﮯ
ﺗﺠﮭﮯ ﻋﺸﻖ ﮨﻮ ﺧﺪﺍ ﮐﺮﮮ
ﺗﺠﮭﮯ ﺍُﺱ ﺳﮯ ﮐﻮﺋﯽ ﺟﺪﺍ ﮐﺮﮮ
ﺗﯿﺮﮮ ﮨﻮﻧﭧ ﮨﻨﺴﻨﺎ ﺑﮭﻮﻝ ﺟﺎﺋﯿﮟ
ﺗﯿﺮﯼ ﺁﻧﮑﮫ ﭘﺮ ﻧﻢ ﺭﮨﺎ ﮐﺮﮮ
ﺗﻮ ﺍُﺳﯽ ﮐﯽ ﺑﺎﺗﯿﮟ ﮐﯿﺎ ﮐﺮﮮ
ﺗﻮ ﺍُﺳﯽ ﮐﯽ ﺑﺎﺗﯿﮟ ﺳﻨﺎ ﮐﺮﮮ
ﺍُﺳﮯ ﺩﯾﮑﮫ ﮐﮯ ﺗﻮ ﺭﮎ ﺟﺎﺋﮯ
ﻭﮦ ﻧﻈﺮ ﺟﮭﮑﺎ ﮐﮧ ﻣﻼ ﮐﺮﮮ
ﺗﺠﮭﮯ ﺩﻭﺳﺘﯽ ﺑﮭﯽ ﻧﮧ ﺭﺍﺱ ﺁﺋﮯ
ﺗﻮ ﺗﻨﮩﺎ ﺗﻨﮩﺎ ﭘﮭﺮﺍ ﮐﺮﮮ
ﺗﺠﮭﮯ ﮨﺠﺮ ﮐﯽ ﻭﮦ ﺟﮭﮍﯼ ﻟﮕﮯ
ﺗﻮ ﻣﻠﻦ ﮐﯽ ﮨﺮ ﭘﻞ ﺩُﻋﺎ ﮐﺮﮮ
ﺗﯿﺮﮮ ﺧﻮﺍﺏ ﺑﮑﮭﺮﯾﮟ ﭨﻮﭦ ﮐﺮ
ﺗﻮ ﮐﺮﭼﯽ ﮐﺮﭼﯽ ﭼﻨﺎ ﮐﺮﮮ
ﺗﻮ ﮔﻠﯽ ﮔﻠﯽ ﺳﺪﺍ ﮐﺮﮮ
ﺗﻮ ﻧﮕﺮ ﻧﮕﺮ ﭘﮭﺮﺍ ﮐﺮﮮ
ﺗﺠﮭﮯ ﻋﺸﻖ ﭘﺮ ﭘﮭﺮ ﯾﻘﯿﻦ ﮨﻮ
ﺍﺳﮯ ﺗﺴﺒﯿﺤﻮﮞ ﭘﮧ ﮔﻨﺎ ﮐﺮﮮ
ﭘﮭﺮ
ﻣﯿﮟ ﮐﮩﻮﮞ ﻋﺸﻖ ﮈﮬﻮﻧﮓ ﮨﮯ
ﺗﻮ ﻧﮩﯿﮟ ﻧﮩﯿﮟ ﮐﯿﺎ ﮐﺮﮮ
ﺗﺠﮭﮯ ﻋﺸﻖ ﮨﻮ ﺧﺪﺍ ﮐﺮﮮ
ﺗﺠﮭﮯ ﺍُﺱ ﺳﮯ ﮐﻮﺋﯽ ﮐﻮ ﺟﺪﺍ ﮐﺮﮮ
ﭘﺮﻭﯾﻦ ﺷﺎﮐﺮ

12717969_1003414166374431_5354905022682792015_n.jpg

4 people like this

Share this post


Link to post
Share on other sites

ALLAH itni bad'duaain touba touba touba.. =)) 

2 people like this

Share this post


Link to post
Share on other sites

:carnaval:

4 people like this

Share this post


Link to post
Share on other sites

:hurrayyy:

2 people like this

Share this post


Link to post
Share on other sites

آپ برہم ہی سہی بات تو کر لیں ہم سے 
کچھ نہ کہنے سے محبت کا گماں ہوتا ہے

پروین شاکر

2 people like this

Share this post


Link to post
Share on other sites

میں کچھ نہ کہوں اور چاھوں کہ میری بات....
خوشبو کیطرح اڑ کہ تیرے دل میں اتر جائے..!!!
پروین شاکر

16807704_659947564192780_2042079533992543663_n.jpg

2 people like this

Share this post


Link to post
Share on other sites

شور مچاتی موجِ آب
ساحل سے ٹکراکے جب واپس لوٹی تو
پاؤں کے نیچے جمی ہُوئی چمکیلی سنہری ریت
اچانک سرک گئی
کچھ کچھ گہرے پانی میں
کھڑی ہُوئی لڑکی نے سوچا
یہ لمحہ کتنا جانا پہچانا لگتا ہے

پروین شاکر

 

00.jpg

2 people like this

Share this post


Link to post
Share on other sites

ھُوئی برباد محبت کیسے ؟؟
کیسے بکھرے ھیں خواب لکھوں گی

”پروین شاکر“

زندگی پر کتاب لکھوں گی
اُس میں سارے حِساب لکھوں گی

پیار کو وقت گزاری لِکھ کر
چاھتوں کو عذاب لکھوں گی

ھُوئی برباد محبت کیسے ؟؟
کیسے بکھرے ھیں خواب لکھوں گی

اپنی خواھش کا تذکرہ کر کے
اُس کا چہرہ گلاب لکھوں گی

میں اُس سے جُدائی کا سبب
اپنی قسمت خراب لکھوں گی.

 

16865046_1264350283614150_1735119955020624104_n.jpg

2 people like this

Share this post


Link to post
Share on other sites

کہیں رہے وہ، مگر خیریت کے ساتھ رہے
اُٹھائے ہاتھ تو یاد ایک ہی دُعا آئی 

سمندروں کے اُدھر سے کوئی صدا آئی
دلوں کے بند دریچے کُھلے، ہَوا آئی

سرک گئے تھے جو آنچل، وہ پھر سنور سے گئے
کُھلے ہُوئے تھے جو سر، اُن پہ پھر رِدا آئی

اُتر رہی ہیں عجب خوشبوئیں رگ و پے میں
یہ کس کو چُھو کے مرے شہر میں صبا آئی

اُسے پکارا تو ہونٹوں پہ کوئی نام نہ تھا
محبتوں کے سفرمیں عجب فضا آئی

کہیں رہے وہ، مگر خیریت کے ساتھ رہے
اُٹھائے ہاتھ تو یاد ایک ہی دُعا آئی
پروین شاکر

 

17155320_1274103985972113_2684582744176778713_n.jpg

1 person likes this

Share this post


Link to post
Share on other sites

ایک لمحے کی توجہ نہیں حاصل اس کی 
اور یہ دل کہ اسے حد سے سوا چاہتا ہے 

پروین شاکر 

 

18698545_1360888673960310_5019785279682833371_n.jpg

1 person likes this

Share this post


Link to post
Share on other sites

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!


Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.


Sign In Now

  • Recently Browsing   0 members

    No registered users viewing this page.

  • Forum Statistics

    1,689
    Total Topics
    7,545
    Total Posts