Jump to content

Please Disable Your Adblocker. We have only advertisement way to pay our hosting and other expenses.  

Blogs

Our community blogs

  1. Hareem Naz
    Latest Entry

    By Hareem Naz,

    کوئی دھوپ چھاؤں کا موسم ہو.
    اور مدھم مدھم بارش ہو💕

    ہم گہری سوچ میں بیٹھے ہوں
    سوچوں میں سوچ تمھاری ہو💕

    اُس وقت تم ملنے آجاؤ
    اور خوشی سے پلکیں بھاری ہو💕

    ہم تم دونوں خاموش رہیں
    اور زباں پہ آنکھیں ہاوی ہو💕

    تم تھام لو میرے ہاتھوں کو
    اور لفظ زباں سے جاری ہوں💕

    میں تم سے محبت کرتی ہوں
    اور جذبوں میں سرشاری ہو💕

    ہاتھوں کی لیکریں مل جائیں
    سنگ چلنے کی تیاری ہو💕

    سب خوابوں کو تعبیر ملے
    اور ہم پر خوشیاں واری ہو💕

    کوئی دھوپ چھاؤں کا موسم ہو
    اور مدھم مدھم بارش ہو💕

    be09103a645ddcd-a-nw-p.jpg

  2. لمحہ بھر اپنا خوابوں کو بنانے والے
    اب نہ آئیں گے پلٹ کر کبھی جانے والے

    کیا ملے گا تجھے بکھرے ہوئے خوابوں کے سوا
    ریت پر چاند کی تصویر بنانے والے

    سب نے پہنا تھا بڑے شوق سے کاغذ کا لباس
    اس قدر لوگ تھے بارش میں نہانے والے

    مر گئے ہم تو یہ کتبے پر لکھا جائے گا
    سو گئے آپ زمانے کو جگانے والے

    در و دیوار پر حسرت سی برستی ہے محسن!
    جانے کس دیس گئے پیار نبھانے والے

     

    18619965_1355210007861510_2181347456266809950_n.jpg

  3. 2018 was the year of crossovers, and no, it's not just because 'Avengers: Infinity War' released this year, the biggest crossover ever, or so we thought. Thanks to the movie, we saw a bunch of hilarious memes about what people thought was a bigger crossover than 'Infinity War' but those were simply jokes.

    In India, we saw some real Bollywood-Hollywood, desi-videshi crossovers and it was all truly unexpected. Here are some that prove that 2018 was even wilder than we remembered.

    1. Priyanka Chopra & Nick Jonas

    The Wildest Desi-Videshi Crossovers Of The Year© Priyanka Chopra/Instagram

    Obviously, we have the biggest crossover to start off the list, of course. Prick is officially married and Nick is now the national jiju, as Priyanka has so nicely put it. It's the season of Bollywood weddings and Nick and Priyanka went all out and gave us the Hollywood-Bollywood crossover we all needed.

    2. Sansa Stark in a lehenga!

    The Wildest Desi-Videshi Crossovers Of The Year© Twitter

    Who would've thought that we would ever see Sophie Turner in Indian traditional clothes but the year was full of surprises. Along with the entire Jonas clan, Sophie - a to-be-Jonas - did not hold back and went all out for her future brother-in-law's wedding.

    3. Parineeti Chopra & Nick Jonas fighting over 'joota churai'

    The Wildest Desi-Videshi Crossovers Of The Year© Parineeti Chopra/Instagram

    The Prick wedding followed all the traditions so obviously joota churai had to be a part of it, especially with Parineeti Chopra being responsible for it. 

    During an interview a few months ago, Parineeti said, “I was sitting with Nick only two nights ago and I was telling him that we needed to lock in our final amount. I quoted $5 million (Approximately Rs 37 crore). He said 'OK, I'll give you $10. So you can see the price negotiation is going to be difficult. But main bahut bahut paise lene waali hoon because I have to be his favourite saali." 

    4. Sophie Turner & Salman Khan's sister in the same picture

    The Wildest Desi-Videshi Crossovers Of The Year© Parineeti Chopra/Instagram

    What? How? There's an extended connection between Sophie Turner and Salman Khan. Actually, the connection is between the entire Jonas family and Salman Khan, all through Sallu bhai's sister Arpita. After all, she was a bridesmaid at the Prick wedding. Why wasn't Salman invited, though? Is it because Priyanka walked out of his movie and got married instead?

    5. Drake commenting on Athiya Shetty's Instagram

    The Wildest Desi-Videshi Crossovers Of The Year© Instagram

    What a plot twist! Everyone thought Athiya could be the famous 'Kiki' as well, before moving on to Kim Kardashian. But, never in my wildest dreams, I would have imagined Drake and Athiya Shetty to be close friends who comment on each other's Instagram pictures.

    6. Drake being a Suniel Shetty fan

    The Wildest Desi-Videshi Crossovers Of The Year© Instagram

    Now, this is a plot twist no one saw coming. If you ask any Indian who their favourite actor is, I can guarantee no one would say, Suniel Shetty. No offence. 

    But, he seems to have found a fan in everyone's fav Drake, who not only shocked the desi population by commenting on Athiya Shetty's Instagram picture, but also by calling Suniel Shetty a legend in that comment.

    7. Beyoncé performing at Isha Ambani's pre-wedding bash

    The Wildest Desi-Videshi Crossovers Of The Year© Beyoncé/Instagram

    Guess Queen B could not stay away from the lure of attending a big fat Indian wedding. Can't even imagine how lucky the guests were to witness her majesty live! 

    8. Hillary Clinton attending the Ambani wedding

    The Wildest Desi-Videshi Crossovers Of The Year© Twitter

    A former USA presidential candidate flew down to India for a wedding. Yep. It wasn't enough that the Ambanis got Beyoncé to perform, they even invited Hillary Clinton. Turns out that the Clintons and Ambanis go way back, which is not that surprising when you think about it, but it's a big crossover nonetheless.

    MeToo And The Sum Of Its Parts

  4. Hareem Naz
    Latest Entry

    ﺁﺝ ﺍﯾﺴﺎ ﮐﺮﺗﮯ ﮨﯿﮟ

    ﺑﮍﮮ ﺳﺎﺩﮦ سے ﻟﻔﻈﻮﮞ ﻣﯿﮟ

    ﻭﺟﮧِ ﺯﻧﺪﮔﯽ ﮐﮩﮧ ﮐﮯ

    ﻭﺻﻞ ﮐﯽ ﺿﺮﻭﺭﺕ ﭘﺮ

    ﭘﮭﺮ ﺳﮯ ﺯﻭﺭ ﺩﯾﺘﮯ ﮨﯿﮟ

    ﺁﺝ ﺍﯾﺴﺎ ﮐﺮﺗﮯ ﮨﯿﮟ 

    ﺫﮐﺮ ﻭﮦ ﮨﯽ ﮐﺮﺗﮯﮨﯿﮟ

    ﻧﺎﻡ ﺍﻭﺭ ﺩﯾﺘﮯ ﮨﯿﮟ

     

    ﺿﺒﻂ ﮐﮯ ﮐﻨﺎﺭﻭﮞ ﺳﮯ ، ﺩﺭﺩ ﺁﻥ ﻟﭙﭩﺎ ﮨﮯ

    ﭨﻮﭨﺘﮯ ﮐﻨﺎﺭﮮ ﺍﺏ 

    ﺩﺭﺩ ﺍﻭﺭ ﺩﯾﺘﮯ ﮨﯿﮟ

    ﺁﺝ ﺍﯾﺴﺎ ﮐﺮﺗﮯ ﮨﯿﮟ 

    ﺩﺭﺩ ﺳﮯ ﺍﻟﺠﮭﺘﮯﮨﯿﮟ

    ﺿﺒﻂ ﭼﮭﻮﮌ ﺩﯾﺘﮯ ﮨﯿﮟ

     

    ﺗﺎﺭ ﺗﺎﺭ ﺩﺍﻣﻦ ﮐﻮ ﺧﺎﺭ ﺧﺎﺭ ﺭﺍﮨﻮﮞ ﻣﯿﮟ

    ﺭﻧﺠﺸﯿﮟ ﺑﮭﻼ ﮐﮯ ﮨﻢ

    ﺁ ﮐﮯ ﺟﻮﮌ ﺩﯾﺘﮯ ﮨﯿﮟ

    ﺁﺝ ﺍﯾﺴﺎ ﮐﺮﺗﮯ ﮨﯿﮟ

    ﺧﻮﺩ ﻧﮩﯿﮟ ﭘﻠﭩﺘﮯ ﮨﯿﮟ

    ﺭﺍﮦ ﻣﻮﮌ ﺩﯾﺘﮯ ﮨﯿﮟ

     

    ﺳﺒﺰ ﺳﺒﺰ ﻣﻮﺳﻢ ﻣﯿﮟ

    ﻻﻝ ﻻﻝ ﺁﻧﮑﮭﻮﮞ ﮐﮯ 

    ﺧﻮﺍﺏ ﮐﯽ ﺭﮔﻮﮞﺳﮯ ﮨﻢ

    ﺧﻮﮞ ﻧﭽﻮﮌ ﺩﯾﺘﮯ ﮨﯿﮟ

    ﺁﺝ ﺍﯾﺴﺎ ﮐﺮﺗﮯ ﮨﯿﮟ 

    ﯾﮧ ﺑﮭﯽ ﮐﺮ ﮔﺰﺭﺗﮯﮨﯿﮟ

    ﺧﻮﺍﺏ ﺗﻮﮌ ﺩﯾﺘﮯ ﮨﯿﮟ

     

    ﺁﺅ ﺍﺏ ﺩُﻋﺎﺅﮞ ﮐﻮ

    ﻣﺎﺗﻤﯽ ﺭﺩﺍﺅﮞ ﻣﯿﮟ

    ﭘﮭﺮ ﺳﮯ ﮐﺮ ﮐﮯ ﺍﻟﻮﺩﺍﻉ

    ﻣﻮﻗﻊ ﺍﻭﺭ ﺩﯾﺘﮯ ﮨﯿﮟ

    ﺁﺝ ﺍﯾﺴﺎ ﮐﺮﺗﮯ ﮨﯿﮟ

    ﺩﺭﯾﺎ ﻣﯿﮟ ﺍُﺗﺮﺗﮯ ﮨﯿﮟ

    ﺭﺏ ﭘﮧ ﭼﮭﻮﮌ ﺩﯾﺘﮯ ﮨﯿﮟ

    5b136b59795ff71-a-nw-p.jpg

  5. Jannat malik
    Latest Entry

    احساس 
    محبت خود تلاش کرتی ہے وہ شخص جو بھینٹ چڑھنا چاہتا ہے ۔  ہم جیسے سیدھے سادھے لوگ پیار کی راہ پہ محبوب کی انگلی تھامے اندھا دھند چل پڑتے ہیں ۔ اور ناسمجھ مر جاتے ہیں کب پتا نہیں چلتا ۔ کیوںکہ ایک شخص کو ہم اپنی کل کائنات سمجھ بیٹھتے ہیں ۔  اور جب وہ شخص ہی دھوکہ دیتا ہے نا تو ایک آنسوئوں کی لڑی آنکھوں سے نکلتی ہے۔ اور ضبط کا شیرازہ بکھر جاتا ہے ۔ جی چاہتا ہے روئیں دھاڑیں ماریں ہمارے ساتھ ہی ایسا کیوں ؟ پھر جواب ملتا ہے  صاحب تم کیا سمجھتے تھے محبت کیا حسین باغ ہے جہاں پہ تتلیاں پر پھیلاتی ہیں ۔ جہاں ہر وقت بہار رہتی ہے ۔  نہیں بلکل بھی نہیں ۔ محبت ایک باغ تو ہے جہاں جب خزاں آتی ہے نا تو انسان کی ذات بھی اس خزاں کا شکار ہو جاتی ہے  مان لو  بچ جاؤ۔ دل کو سنبھالو اپنے کہیں تم بھی ریزہ ریزہ نا ہو جانا کیونکہ محبت اپنا شکار خود چنتی ہے ۔ کبھی چکور کو دیکھا جو پورے چاند کی رات اس کی دیوانگی میں پوری قوت کے ساتھ چاند کی طرف اڑتا ہے لیکن گر جاتا ہے لیکن پھر بھی اس کی محبت میں کمی نہیں آتی ۔ فرق اتنا ہے کہ وہ محبت دل سے کرتا ہے لیکن ہم لوگ اب محبت دماغ سے کرتے ہیں ۔ اور کسی کے جزباتوں کا قتل کرکے کہتے ہیں کہ میں نے کیا کیا ۔

     

    FB_IMG_1540627205114.jpg

  6. l_204466_070807_updates.jpg [embed_video1 url=http://stream.jeem.tv/vod/b8c11997c447ae39005c94a2a469f3c8.mp4/playlist.m3u8?wmsAuthSign=c2VydmVyX3RpbWU9Ny8yMy8yMDE4IDI6MjU6NDUgUE0maGFzaF92YWx1ZT1qL041QW94RDdqWUo0SFN1WWtRYTdBPT0mdmFsaWRtaW51dGVzPTYwJmlkPTE=...

  7.  

    Lady

    Town visitors are non-player characters (NPCs) who automatically visit the player's town in order to purchase services in service buildings.

    They arrive by either the EGGspress train (which comes every 6 hours) or the personal train (which can be sent to neighbors' towns by the player).

    They are unlocked at experience level 34.

     

     

     

    Visitors

    10 different characters come to visit towns:The ActressThe Actress

    The Actress
    The Actress
    The Cowboy
    The Cowboy
    Dancer.png
    The Dancer
    Grand Master.png
    The Grand Master

     

     

     

     

     

    Lady.png
    The Lady

     

    The Local
    The Local
    Salesman.png
    The Salesman
    Mechanic.png
    The Mechanic
     

     

    Teacher.png
    The Teacher

     

     

     

    Strongman.png
    The Strongman

     

     

     

    Multiple iterations of a visitor can be in a given town at one time.

     

    The visitors are assigned random names by the game. These names change every time the visitors come to the town. However, visitors picked up from a neighbor's town with the Personal Train retain their names from the previous town.

     

    The number of visitors who can go into the player's town is determined by the level of the Town Hall, which can be upgraded to a maximum of 42 by using Stone BlocksHammers & Paint Buckets.

     


     

    Sending visitors to service buildings

     

    To serve a visitor, players need to send them to one of the buildings they wish to go to. There are two ways to do so:

     

    • tap on the visitor then send them to one of the buildings.
    • tap on the Town Hall, select the Idle tab, tap on the desired visitor, and on See Visitor, and then tap on the building the player wishes to send the visitor.

     


     

    Serving visitors

     

    Once a visitor is sent to a building, players can give the visitor the items they have requested, or reject them by using the toggle icon. This sends the rejected visitor back to the train station (the latter can only be done once the player has reached reputation level 3). A rejected visitor waits on the train platform to be picked up by the EGGspress train or a neighbor's Personal Train.

     

    Alternatively, a visitor can be served or rejected by going through the Town Hall under the Waiting Tab.

     

    If players do not have some of the items, the visitor can wait in the building forever.

     

    Visitors cannot be served until the player has all of the items they want in stock.

     


     

    Waiting time

     

    Once a visitor has been served, service time begins. The time it takes to serve each visitor varies depending on the service building. During this time, it is not possible to send the visitor away without using diamonds.

     

    To speed up the service time, players can upgrade the service building, and then upgrade the service time (see Service Buildings for details). The minimum length of the service time is dependent on the service building level.

     


     

    Rewards

     

    After the service time is complete, the visitor will be standing outside the building, and waiting to give the player rewards.

     

    There are three ways to receive these rewards:

     

    1. tap on the visitor,
    2. tap on the building where he/she had been served,
    3. or go to the Town Hall, select the Ready tab, tap on the visitor you wish to release, and select Collect Reward

     

    Rewards are a combination of coinsexperience points, and reputation points. The amounts of rewards can be raised by upgrading the buildings (see Service Buildings for details).

     


     

    Gifts

     

    Town Visitors Gift

     

    If a visitor has visited all of the service buildings they wanted to go to, and been served in all of them, they will present the player with a gift. The gift can be any kind of supply item.

     

    Visitors with a paw print next to the list of buildings they wish to visit will want to see a certain sanctuary animal at the end of their visit. If players serve them fully and have the specified animal in their sanctuary, the visitor goes watch the animal for a short while, makes a comment (shown briefly in a bubble over his head), then leaves an extra gift next to the book stand. The gift can be coins, a voucher or a supply item.

     

    They will then go back to the train station.

     

    Only visitors brought to the town on the Eggspress Train may be interested in seeing the sanctuary. Rejected visitors without being fully served will go directly to the Train Station.

     

     

     


     

    Keeping track of visitors

     

    Town Hall Stage 4

     

    Main article: Town Hall

     

    Players can keep track of visitors by tapping on the Town Hall. This tells them where each visitor is, what their status is, what building they have already visited, how many and which visitors standing on the platform are ready to go home (having already visited 2 towns) or ready to be picked up by the Personal Train of a neighbor.

     

     

     


     

    Keeping track of orders

     

    Town Order Board

     

    The order board located next to the farm train station sums up orders from visitors who are waiting in buildings.

     

     

     


     

    Picking up visitors from neighboring towns

     

    Personal Train Stage 3

     

    Main article: Personal Train

     

    At reputation level 4 players can repair the personal train to pick up visitors from neighboring towns.

     

    Visitors picked up from other towns only ask to visit one service building. Picking up a visitor from a neighbor's town rewards this neighbor with one reputation point. When these visitors have been served, they will present the gift and ready to go home and cannot be picked up by a neighbor.

     

    The Personal Train can be upgraded to pick up a maximum of 10 visitors from a neighbor or upgraded to shorten the maintenance time to a minimum of 1.5 hours.

     

     

     


     

    Strategy tips

     

    • If your main goal is to get gifts, send away visitors who want to go to three different buildings and prioritize two-building visitors or, even better, visitors from neighboring towns (brought in by the Personal train) as they only visit one building. At the Town Hall, under the Idle tab, you have the option of serving only the ones you wish to serve and at the bottom, you can tap on Send All Away to reject the rest.
    • Sending visitors to a building through the Town Hall has the advantage of not releasing visitors who are already served and waiting at the front of the building. This is useful to know when the player is preparing for a Town Visitor derby task and not ready to release certain served visitors. Note that those served no longer occupy a space in the building and more visitors can be placed into the building. However, if they are not released, they still occupy a space in town and could limit how many visitors the next Eggspress Train or Personal Train can bring into town.
    • If the player is doing a Specific Visitor derby task and need to release only certain visitors, it is best done through Town Hall. Go to the Ready tab, select the desired visitor and tap on Collect Reward. If you tap on See Visitor, you will be sent to the building and it would be difficult to release ONLY the visitor you want to release.
    • For town at reputation level below 3, you aren't allowed to send visitors away. If you can't make the items they request yet try buying them from other players' farms or requesting them from your neighbors.

     


     

    Did you know?

     

    MrMiyagi

     

    The Grand Master is a reference to Mister Miyagi from the movie The Karate Kid. In the movie, there is a famous scene where Mr. Miyagi explains that a man who can catch a fly with chopsticks can accomplish anything. The reference can be seen in Hay Day when the Grand Master stops walking, sees a fly and quickly catches it with his chopsticks.

     

     

     


     

    See also

     

    Other characters

    Alfred Angus Ernest Greg Rose Tom Lady Mike

  8. RattiGali lake....(12130 ft)
    Neelam Valley...Kashmir❤ Pakistan🇵🇰. 04.9.2017
    Lυѕн    ° ☾ °☆  ¸. ● .   ★  ★ ° ☾ ☆ ¸. ¸ ✷  :.  . •○Lσνєℓу *。  ☆ 。 ★    。   ☆Bєαυтιƒυℓ ° :.  * • ○ ° ★  .  *  .       .   °  .● .Mιη∂ Bℓσωιηg   ° ☾ °☆  ¸. ● .  ★  Wση∂єяƒυℓ★°☾ ☆✷
    :. .• ○  *。  ☆     * • ○ °★  .  *  . Gяєαт    .   °  .● .   ° ☾ °☆ Fαвυℓσυѕ ¸. ● .   ★  ★°☾ ☆ ✷  :.   . • ○ *。  ☆ 。★   。   ☆° :.   * • ○°Mαяνєʟʟʘυs ★  .  *  .       .   °  .● .       ° ☾ °☆  ¸. ● .   вєsт★  ★ ° ☾ ☆¸. ¸ ✷  :.  . • ○ *。Fαηтαsтιc☆。★  。☆   °:.   * • ○ ° ★  .  *  . νιþ    cʘʘʟ.   °  .● .      ° ☾ °☆  ¸. ● .   ★  ★ ° ☾ ☆¸. ¸ ✷  :.  . •ηιcє ○ *。  ☆    。★。☆Sυρєяв☾ °☆  ¸. ● . ★ .  Lυѕн  ° ☾ °☆  ¸. ● .  ★  ★ ° ☾ ☆ ¸. ¸ ✷   :.  . •○Lσνєℓу *。  ☆。★  。   ☆Bєαυтιƒυℓ° :.  * • ○ ° ★  .   *  .       . °  .● .Mιη∂ Bℓσωιηg ° ☾ °☆  ¸. ●.   ★   Wση∂єяƒυℓ★° ☾ ☆✷
    :.  .• ○ *。  ☆     * • ○ ° ★  .  *  .
     Gяєαт     .   °  .● .     ° ☾ °☆ Fαвυℓσυѕ ¸. ● .   ★  ★°☾ ☆ ✷  :.   . • ○ *。  ☆ 。★συтsтαηdιηg   。   ☆° :.   * • ○°Mαяνєʟʟʘυs ★  .  *  .       . °  .● .  ° ☾ °☆  ¸. ● .   вєsт★ Lυѕн    ° ☾ °☆  ¸. ● .   ★  ★ ° ☾ ☆ ¸. ¸ ✷  :.  . •○Lσνєℓу *。  ☆ 。 ★    。   ☆Bєαυтιƒυℓ ° :.  * • ○ ° ★  .  *  .       .   °  .● .Mιη∂ Bℓσωιηg   ° ☾ °☆  ¸. ● .  ★  Wση∂єяƒυℓ★°☾ ☆✷
    :. .• ○  *。  ☆     * • ○ °★  .  *  . Gяєαт    .   °  .● .   ° ☾ °☆ Fαвυℓσυѕ ¸. ● .   ★  ★°☾ ☆ ✷  :.   . • ○ *。  ☆ 。★   。   ☆° :.   * • ○°Mαяνєʟʟʘυs ★  .  *  .       .   °  .● .       ° ☾ °☆  ¸. ● .   вєsт★  ★ ° ☾ ☆¸. ¸ ✷  :.  . • ○ *。Fαηтαsтιc☆。★  。☆   °:.   * • ○ ° ★  .  *  . νιþ    cʘʘʟ.   °  .● .      ° ☾ °☆  ¸. ● .   ★  ★ ° ☾ ☆¸. ¸ ✷  :.  . •ηιcє ○ *。  ☆    。★。☆Sυρєяв☾ °☆  ¸. ● . ★ .  Lυѕн  ° ☾ °☆  ¸. ● .  ★  ★ ° ☾ ☆ ¸. ¸ ✷   :.  . •○Lσνєℓу *。  ☆。★  。   ☆Bєαυтιƒυℓ° :.  * • ○ ° ★  .   *  .       . °  .● .Mιη∂ Bℓσωιηg ° ☾ °☆  ¸. ●.   ★   Wση∂єяƒυℓ★° ☾ ☆✷
    :.  .• ○ *。  ☆     * • ○ ° ★  .  *  .
     Gяєαт     .   °  .● .     ° ☾ °☆ Fαвυℓσυѕ ¸. ● .   ★  ★°☾ ☆ ✷  :.   . • ○ *。  ☆ 。★συтsтαηdιηg   。   ☆° :.   * • ○°Mαяνєʟʟʘυs ★  .  *  .       . °  .● .  ° ☾ °☆  ¸. ● .   вєsт★
    like.png 1
    Azmat Yar Khan
    Ma Sha Allah zabardast. Behtar tu yeh tha k Shirt pehn k pic li jati. Iss mey ** The Pakistan Tourism ** ki shaan mey mazeed izafa ho jata. Anyhow its a excellent view.
    like.png 1
    police mans tea shirt

    The Pakistan Tourism

  9. ایک صاحب اور ان کی بیوی پر کسی جادوگر نے انتہائی سخت جادو کا وار کیا یہ جادوگر اس جادو پر باقاعدہ پہرہ بھی دیا کرتا اور کسی عامل کو اس کا توڑ نہ کرنے دیتا۔ وہ صاحب فرماتے ہیں کہ ان کی بیوی کے ہاں اول تو حمل ہی نہ ٹھہرتا اور اگر ٹھہر بھی جاتا تو ساقط ہوجاتا اگر کسی طریقہ 9 ماہ پورے ہوتے تو بچے کی پیدائش مردہ حالت میں ہوتی۔ یہ صاحب انتہائی باکردار اور پانچ وقت کے نمازی تھے اور بچوں کو مسجد میں قرآن بھی پڑھایا کرتے تھے۔ بہت علاج کروائے بڑے سے بڑا عامل بلوایا اور علاج کروایا اور ایڑی چوٹی کا زور لگادیا مگر نتیجہ صفر نکلتا۔ ایک دن ایک انتہائی درویش باعمل عالم اور عامل کے پاس جانا ہوا۔ یہ صاحب اپنے استخارہ کے لیے مشہور تھے اور ان کا استخارہ ایک منٹ کا ہوا کرتا تھا۔ ایک منٹ میں سارا کچا چٹھا کھول کے رکھ دیتے۔ اللہ نے بہت عطا کیا تھا ان کو… اب یہ پریشانی لے کر ان کی خدمت میں حاضر ہوئے۔ مولوی صاحب نے بتایا کہ یہ کسی عام زور آور جادوگر کا وار نہیں بلکہ یہ تو کسی خبیث العین (جادو کی دنیا کا انتہائی غلیظ اور ماہر جادوگر) کا وار ہے اور یہ میرے بس سے باہر ہے۔ میں اس عمر میں اتنی سخت محنت نہیں کرسکتا۔ اس کا توڑ بھی کوئی خبیث العین ہی کرسکتا ہے۔یہ چونکہ مجبور تھے اس لیے پوچھنے لگے کہ کچھ تو حل ہوگا۔ مولوی صاحب فرمانے لگے کہ سندھ کے فلاں علاقے فلاں جگہ پر ایک گاؤں کے باہراسی خبیث العین نے ان دنوں ڈیرہ لگایا ہے تو فوراً اس کے پاس چلا جا۔

    یہ صاحب فوراً سندھ روانہ ہوگئے اور جیسے ہی اس گاؤں کے باہر پہنچے تو دور سے ایک آگ کا دہکتاالاؤ لگا ہوا دکھائی دیا۔ انہوں نے بزرگوں کی بتائی ہوئی نشانی دیکھ کر اس کی طرف بڑھنا شروع کیا‘ دور سے دیکھتے ہیں کہ ایک آدمی آگ کے پاس بیٹھا ہوا ہے اور اردگرد اس کے ماننے والوں کا جمگٹھا ہے۔ ابھی ایک ایکڑ دور تھے کہ وہ شخص اچھل کر کھڑا ہوگیا اور زور زور سے چلانے لگا کہ وہ دیکھو آگیا‘ جادو کا ڈسا… وہ آگیا قرآن پڑھانے والا… یہ اس کے پاس پہنچے اور اپنا مقصد بتایا۔ اب خبیث العین خوشی سے پاگلوں کی طرح ناچنے لگا اور بولا جاؤ فلاں کے پاس… جاؤ فلاں کے پاس… یہ گرہ جولگی ہے کھلواؤ اپنے مولویوں سے… غرض اس نے مولوی صاحبان کے ساتھ ساتھ ان صاحب کو بھی برا بھلا کہا اور بڑے بڑے خدائی کے دعوے بھی کیے اور جادو توڑنے سے انکار کردیا۔

    یہ صاحب واپس آئے اور اپنے رب کو پکارا کہ یااللہ! یہ بھی مخلوق ہے تو چاہے تو کیا نہیں ہوسکتا‘ یہ ظالم مجھ پر غالب آگئے ہیں اور ظلم کرنے سے باز نہیں آرہے اور رو رو کے اللہ کے حضور التجائیں کیں۔ دفعتاً دل میں القا ہوا کہ جادو کا توڑ تو آقا ﷺ نے معوذتین سے کیا تھا اور جادو بھی انتہائی سخت بلکہ آخری درجے کا تھا جب آقاﷺ نے معوذتین سے یہ جادو توڑا تو میں بھی معوذتین ہی پڑھتا ہوں۔

    اب انہوں نے اللہ کا نام لیا اور اسی رات سے باوضو ہوکر مسجد میں جاکر معوذتین اس جادو کی توڑ کی نیت سے پڑھنی شروع کی۔ یہ پوری رات پڑھتے رہے اور وقتاً فوقتاً دن کو بھی ورد چلتا رہتا ہر وقت باوضو رہنے لگے‘ غالباً چھٹے دن رات کو اونگھ آگئی اور اچانک خون کی پوری بالٹی ان کے اوپر جیسے کسی نے گرا دی ہو۔ یہ بہت پریشان ہوئے اٹھے مسجد کے ساتھ ہی کنواں تھا وہاں نہائے دھوئے اور کپڑے بھی پاک کیے‘ مسجد دھوئی۔ اب سوچا بی بی کی بھی خبر لوں‘ گھر پہنچے تو وہاں بھی یہی حال تھا اور بیوی انتہائی پریشان تھی۔ بیوی کو دلاسہ دیا اور فرمانے لگے کہ بھلی مانس اب کچھ ہلچل ہوگئی ہے‘ انشاء اللہ اب کام بن جائے گا۔

    ایک نئے ولولے سے اسی رات سے پھر دوبارہ مسجد میں عمل شروع کردیا نویں دن پھر وہی ہوا اونگھ آئی اور دونوں میاں بیوی پر خون کی بالٹی گرادی گئی۔ انہوں نے ہمت نہ ہاری اور پڑھنا جاری رکھا۔ تیرہویں دن صبح کے وقت وہی سندھ والا خبیث العین مسجد میں داخل ہوا اور آتے ہی پیروں میں گر کے معافیاں مانگنے لگا۔ ان صاحب نے اسے بولا کہ تو مجھ سے کیوں معافیاں مانگ رہا ہے؟ کہنے لگا کہ اللہ کے واسطے مجھے معاف کردیجئے‘ پھر بتاؤں گا۔ انہوں نے معاف کردیا اور وجہ پوچھی۔ کہنے لگا کہ آپ میاں بیوی پر جادو میں نے کیا تھا جب آپ مسجد میں عمل کرنے بیٹھے تومیں بھی آپ کے مقابلے پر بیٹھ گیا اور روزانہ میرا کیا ہوا جادو مجھ پر ہی الٹا چلنے لگا اور میرے مؤکل میرے دشمن ہوگئے۔ یہ صاحب فرمانے لگے کہ اگر یہ بات تو نے مجھے پہلے بتا دی ہوتی تو تجھے میں کبھی معاف نہ کرتا۔ بہرحال یہ جادوگر معافی مانگ کر اپنی جان بچا کر واپس سندھ لوٹ گیا۔ کیونکہ اگر وہ معافی نہ مانگتا تو جان سے ہاتھ دھو بیٹھتا۔ انہوں نے اللہ کا شکر ادا کیا مگر جادوگر کی صلح کا اعتبار بھی نہ کیا اور اکتالیس دن مسلسل عمل کرتے رہے اس کے بعد اللہ نے ان کو نرینہ صحت مند اولاد سے نوازا اور دو سے زائد بیٹے عطا فرمائے اور بندش ہمیشہ کیلئے ٹوٹ گئی۔

    جادو کا حتمی علاج 
    قرآن پاک کی آخری دو سورتیں جنہیں معوز تین کہا جاتا ہے 
    سحر کے علاج میں مغز کی حثیت رکھتی ہیں -
    یعنی سورہ فلق اور سورہ والناس -
    انہیں گیارہ گیارہ مرتبہ صبح و شام پڑھنا چاہئے اور بچوں پر پڑھ کر دم کرنا چاہئے - یہ بے نظیر و بے مثال عمل ہے -
    انہیں آیات کے پڑھنے سے حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کو سحر سے شفاء ملی -

  10. 1.jpg

     

    1891

    میں پیدا ہونے والے مہاراجا بھوپندر سنگھ آف پٹیالہ نے 1938 ء میں وفات پائی تو اس کی پانچ بیویاں ، 88 اولادیں اور 350 سے زیادہ داشتائیں تھیں۔

    بھوپندر سنگھ مہاراجہ اعلیٰ سنگھ کی نسل میں سے تھا۔ اس خاندان کے سربراہ نے تاریخی ہیروں اور دیگر نایاب جواہرات پر مشتمل خزانہ چھوڑا تھا۔ اس نے ایک بڑی ریاست قائم کی تھی اور اپنی اولاد کو اقتدار دے گیا تھا۔

    مہاراجہ بھوپندر سنگھ بہت قابل انسان تھا۔ اس کے وزیر اور افسر نہایت لائق افراد تھے۔ ہندوستان کے ہر علاقے کا لائق ترین شخص چن کر اس کا وزیر بنایا گیا تھا۔ اس کے وزیر ساری زندگی اس کے وفادار رہے۔ آزاد ہندوستان کا سفیر برائے چین، مصر اور فرانس سردار کے ایم پانیکر اس کا بااعتماد وزیر خارجہ تھا۔ ایک سابق بھارتی وزیراعلیٰ کرنل رگھبیر سنگھ بھی پٹیالہ کا وزیر داخلہ رہ چکا تھا۔ نواب لیاقت حیات خان کئی سال پٹیالہ کا وزیراعظم رہا۔ قانون کا وزیر الٰہ آباد کا ممتاز وکیل ایم اے رائنا تھا۔ دیوان جرمنی داس زراعت، صنعت اور جنگلات کا وزیر ہونے کے علاوہ مہاراجا کی صحت کے امور کا انچارج تھا۔ بھوپندر سنگھ نے

    ریاست کا انتظام چلانے میں اپنی مدد کے لیے نہایت لائق افراد کو منتخب کیا تھا۔

    2.jpg

    مہاراجا بھوپندر سنگھ کا باپ مہاراجہ سر راجندر سنگھ سی سی ایس آئی شراب نوشی کے ہاتھوں صرف 28 سال کی عمر میں مر گیا تھا۔ مہاراجا کے مشیر اس امر کا خا ص خیال رکھتے تھے کہ وہ اپنے باپ دادا کی طرح شراب کا عادی نہ ہو جائے۔ اسے ایک انگریز ٹیوٹر نے بچپن سے تعلیم و تربیت دی تھی۔ اس کے علاوہ اسے ہندو اور سکھ ٹیوٹر بھی تعلیم و تربیت دیا کرتے تھے۔ 18سال کی عمر میں وہ بہت سی خوبیوں کا مالک بن چکا تھا۔

    جب وہ بالغ ہوا تو اس کے درباریوں نے اسے عورت اور شراب کے مزے سے آشنا کروانا چاہا۔ تاہم مہاراجا ان تمام ترغیبات سے بچا رہا۔ چونکہ مہاراجا کے بگڑنے ہی میں درباریوں کا مفاد تھا اس لیے جلد ہی مہاراجا ان کی سازشوں کا شکار ہو گیا۔

    3.jpg

     

    درباری ولن اسے نوجوان عورتوں کے ذریعے بھٹکانے کی کوشش کرتے رہے۔ وہ نوجوان تھا اس لیے ایسی 
    ترغیبات سے زیادہ عرصہ نہ بچ سکا۔ ان عورتوں کو ہندوستان کے مختلف علاقوں سے لایا جاتا تھا۔ وہ بہت کم عمر اور نہایت حسین ہوا کرتی تھیں۔ جب وہ مرا تو اس کے حرم میں تقریباً 322 عورتیں تھیں۔ ان میں سے صرف دس مہارانیاں تسلیم کی گئی تھیں، تقریباً پچاس کو رانی کہا جاتا جبکہ باقی سب کنیزیں تھیں۔ وہ سب مہاراجا کے اشارے کی منتظر رہتی تھیں۔ وہ دن یا رات کے کسی بھی لمحے ان کے ساتھ قربت اختیار کر سکتا تھا۔

    چھوٹی چھوٹی بچیوں کو محل میں لایا جاتا اور انہیں پالا پوسا جاتا یہاں تک کہ وہ بالغ ہو جاتیں۔ انہیں مہاراجا کی پسند کے مطابق تربیت دی جاتی تھی۔ محل میں شروع شروع میں ان لڑکیوں کا بہت خیال رکھا جاتا تھا۔ انہیں صرف مہاراجا کو سگریٹ اور شراب پیش کرنے یا دوسری خدمات ادا کرنے کا کہا جاتا تھا۔ مہارانیاں ان کو آغوش میں لیتی اور چومتی تھیں۔ پہلے وہ لڑکیاں محض کنیزیں ہوتی تھیں لیکن مہاراجا کو پسند آنے پر ان کا رتبہ بڑھتا جاتا یہاں تک کہ وہ اعلیٰ ترین رتبے پر پہنچ کر مہارانی کہلاتیں۔ جب مہاراجا کسی عورت کو مہارانی منتخب کر لیتا تو حکومت ہندوستان کو اس امر کی اطلاع دیتا اور حکومت اس عورت کو مہارانی تسلیم کر لیتی۔ اس کے بطن سے جنم لینے والے لڑکے کو مہاراجا کا جائز بیٹا تصور کیا جاتا اور اسے شہزادے کے حقوق دیے جاتے تھے۔

    8.jpg

     

     مہارانیوں اور داشتاؤں میں اور بھی فرق تھے۔ مہارانیوں کو دوپہر اور رات کا کھانا اور چائے سونے کے برتنوں میں پیش کیے جاتے تھے۔ رانیوں کو چاندی کے برتنوں میں کھانا پیش کیا جاتا تھا۔ ان کو پچاس اقسام کے کھانے پیش کیے جاتے تھے۔ اعلیٰ تر رتبے کی آرزو مند دیگر عورتوں کو پیتل کے برتنوں میں کھانا پیش کیا جاتا تھا۔ ان کو بیس اقسام کے کھانے پیش کیے جاتے تھے۔ خود مہاراجا کو ہیرے جڑے سونے کے برتنوں میں کھانا پیش کیا جاتا تھا۔ اسے 150 سے زیادہ اقسام کے کھانے پیش کیے جاتے تھے۔

     

    4.jpg

    مہاراجا ، مہارانیوں اور شہزادوں یا شہزادیوں کی سالگرہ پر عظیم الشان تقریبات برپاکی جاتیں۔ دو سو پچھتر یا تین سو مہمانوں کے لیے میز لگائی جاتیں۔ مردوں میں صرف مہاراجا، اس کے بیٹے، داماد اور چند خاص مدعوئین ہوتے جبکہ عورتوں میں صرف مہارانیاں اور محل کی چند منتخب عورتیں ہوتیں۔ ان تقریبات میں اطالوی، فرانسیسی اور انگریز بیرے اور خانساماں ہوتے تھے اور کھانے اور شرابیں نہایت مزیدار ہوتے۔ پکوانوں کو بڑی بڑی پلیٹوں میں لا کر اوپر تلے رکھ دیا جاتا۔ یہ ڈھیر کھانے والوں کے منہ تک پہنچ جاتا تھا۔ بعض اوقات دس سے بیس پلیٹوں تک کی قطاریں بن جاتی تھیں۔ کھانے کے بعد موسیقی کی محفل ہوتی، جس میں مختلف ریاستوں سے بلوائی گئیں رقاصائیں مہاراجا، مہارانیوں اور مہمانوں کا جی بہلاتیں۔ ایسی تقریبات صبح سویرے انجام کو پہنچتیں۔ اس وقت تک سب لوگ نشے میں دھت ہو چکے ہوتے تھے۔ یہ سلسلہ کئی سال جاری رہا۔ محل میں ایسی عورتیں بھی تھیں جنہیں یورپ، نیپال اور قبرص سے لایا گیا تھا۔ محل کی عورتوں نے ایسا لباس اور ہیرے جواہرات پہنے ہوتے تھے کہ دنیا میں ان کی مثال ملنا ناممکن تھی۔ تقریب کے اختتام پر مہاراجا عورتوں میں سے چند ایک کو منتخب کر لیتا اور انہیں لے کر اپنے محل میں چلا جاتا۔ یہ عورتیں مہاراجا کی توجہ حاصل کرنے کے لیے بہت سی ترکیبیں استعمال کرتی تھیں۔ مہاراجا کے دل میں ان سب کے لیے نرم گوشہ تھا۔ وہ روزانہ اپنے معائنے کے لیے آنے والے ڈاکٹروں کو اپنی بیماریوں کے بارے میں بتاتی تھی۔

    5.png

     

    یہ عورتیں بعض اوقات مہاراجا کی محبت اور فرقت میں خودکشی کرنے کی دھمکی دیتیں۔ سچ تو یہ ہے کہ ان میں سے  چند ایک نے کمرے کی چھت سے رسی باندھ کر اس کے ذریعے خودکشی کی کوشش بھی تھی۔ جب کوئی عورت تنہائی کا شکوہ کرتی تو مہاراجا خوفزدہ ہو جاتا۔ عموماً وہ اس سے ملتا اور ہر ممکن طریقے سے اسے دلاسا دینے کی کوشش کرتا۔ مہاراجا کے حرم میں ایسی بدنصیب عورتیں بھی تھیں جنہیں زندگی میں ایک مرتبہ بھی مہاراجا سے ہم آغوش ہونے کا موقع نہیں ملا تھا۔ مہاراجا کو اپنی ساری مہارانیوں، رانیوں اور دیگر عورتوں سے محبت تھی اور وہ سب کے ساتھ برابر کا محبت بھرا سلوک روا رکھنے کی کوشش کرتا تھا۔ عورتیں بھی جواباً اسے اپنا واحد مرد مانتی تھیں۔

    6.jpg

    وہ جب بھی یورپ جاتا کم از کم ایک درجن عورتوں کواپنے ساتھ لے کر جاتا تھا۔ ہندوستان سے باہر ان مہارانی، رانی اور کنیز والی تفریق ختم ہو جاتی۔ ان کے کھانوں، کپڑوں اور رہائش میں کوئی فرق نہ رہتا۔ موتی باغ محل کا پروٹوکول پیرس اور لندن میں ایک طرف رکھ دیا جاتا تھا۔

    مہارانیاں اور دوسری عورتیں موتی باغ کہلانے والے بڑے محل کے عقب میں واقع مختلف محلات میں رہتی تھیں۔ موتی باغ محل مہاراجا کی رہائش گاہ تھا۔ باہر سے کسی شخص کا محل کے ان اندرونی حصوں میں داخل ہونا انتہائی مشکل تھا۔ اگر کوئی شخص موتی باغ محل میں داخل ہونا چاہتا تو پہلے اسے تقریباً آدھا میل لمبا باغ عبور کرنا پڑتا، پھراسے بے شمار کمروں اور متعدد ہال کمروں سے گزرنا پڑتا۔ محل میں ہر بیس قدم کے فاصلے پر فوجی گارڈ موجود ہوتے۔ ان سب مراحل سے گزرنے کے بعد وہ شخص ایک چھوٹے گیٹ تک پہنچتا، جہاں سے داخلی محلات میں پہنچا جا سکتا تھا۔ اندرونی محل میں مہاراجا  سے ملنے کے لیے آنے والوں کو شفاف اور قیمتی ریشمی لباس میں ملبوس اور ہیرے جواہرات سے لدی پھندی نہایت حسین و جمیل عورتیں مہاراجا کے خصوصی احکامات کی تعمیل میں مسکراہٹوں سے نوازتیں اور شراب پیش کرتیں۔ پنجابی لباس میں ملبوس چند عورتیں مہمانوں کو سگریٹ پیش کرتیں جبکہ ساڑھی میں ملبوس چند دیگر عورتیں شراب اور پھل پیش کرتیں۔ پٹیالہ کے دربار کی شان و شوکت کے سامنے الف لیلوی شان و شوکت ماند تھی۔

    مہاراجا اپنی عورتوں سے حسد نہیں کرتا تھا اور اپنے مہمانوں کو ان سے گھلنے ملنے کی اجازت دے دیتا تھا۔ تاہم وہ گھٹیا پن اور بدتمیزی کو ذرا بھی برداشت نہیں کرتا تھا۔ مہاراجا کے پیروں میں درجنوں عورتیں پڑی رہتی تھیں۔ چند عورتیں اس کی ٹانگیں دبا رہی ہوتیں اور چند عورتیں پیغامات ادھر سے ادھر پہنچا رہی ہوتیں۔ مہاراجا کی پسندیدہ عورت اس کی دیوی ہوتی اور سب کی نگاہیں اس پر جمی ہوتیں۔ عموماً وہ مہاراجا کے گھٹنے کے پاس بیٹھی ہوتی۔ اس نے نہایت خوبصورت سرخ رنگ کا شفاف لباس پہنا ہوتا، ناک میں سونے کا کوکا، گلے میں موتیوں کا ہار اور کلائیوں میں ہیروں کے کنگن ڈالے ہوتے۔ حرم کی عیاشانہ زندگی اور ہمسایہ ریاستوں اور ہندوستان کے وائسرائے کے ساتھ چپقلشوں کی وجہ سے مہاراجا کو ہائی بلڈ پریشر کا عارضہ لاحق ہو گیا۔ فرانس کے مشہور ڈاکٹروں پروفیسر ابرامی اور ڈاکٹر آندرے سے لچوٹز نے ریڑھ کی ہڈی میں انجکشن لگا کر بلڈ پریشر کو گھٹانے کا نیا طریقہ دریافت کیا تھا۔ مہاراجا نے انہیں فرانس سے پٹیالہ بلوا لیا۔ مہاراجا علاج کے لیے یورپ بھی گیا لیکن بلڈ پریشر کنٹرول نہ ہو سکا، جس کا خاص سبب یہ تھا کہ اس نے ڈاکٹروں کی ہدایت کے برعکس عورتوں اور شراب کو نہیں چھوڑا۔ مہاراجہ صرف 47 برس کی عمر میں چل بسا۔

     

    7.jpg

  11. ????
    Masala Beef Pulao With Shami Kabab 
    My Mama's Recipe <3
    May The Soul Of My Mother Rest In Peace, Aameen

     

    ___________________________

    MASALA=BEEF=PULAO (Recipe)
    Recipe & Made By Dua Fasih 

     

     

    FOR PULAO STOCK (YAKHNI)

     

    Ingredients:

    Beef,   Half Kg
    Fennel seeds (Sonf), 2 Table Spoon
    Whole Dry Coriander , 2 Table Spoon
    Salt, To Taste
    Whole Garlic, 6 to 7 cloves
    Whole Ginger, 1 to 2 Inch
    Whole Medium Size Onion, 1 (cut in 4 pieces)
    Black Pepper Corns, 8 to 10
    Water, 7 to 8 Glass 

     

    Method,
    Take a pot add all ingredients and cook until meat is tender (make sure we need 2 cups Remaining Beef Yakhni to add in Pulao), Then seive the yakhni and separate the meat and yakhni, Discard all remaining ingredients, (if you use to make potli you can do so, but i don't prefer :)

     

    FOR MASALA BEEF PULAO

     

    Ingredients:

    Basmati Rice, Half Kg OR 3/4 KG (sock in water)
    Onion (Sliced) 2 to 3
    Cinnamon Sticks, 2
    Green Cardamom, 4 to 5
    Black Cardamon, 2
    Cumin Seeds, 1 Tea Spoon
    Bay Leaf, 1
    Black Pepper Corns 8 to 10
    Aniseed (Baadyaan ka phool), 2
    Cloves, 2 to 3
    Fresh Ginger Garlic Paste, 2 Table Spoon
    Tomatoes, 2 (Medium Size)
    Fresh Mint Leaves, Half Bunch 
    Green Chili, 8 to 10 (cut in to two pieces)
    Garam Masala Powder, 1 Tea Spoon
    Salt, To Taste
    Oil OR Ghee, 1 Cup
    Zarda Color , a small pinch (mix with 2 Table spoon of kewra water)
    * * *Cook beef With Stock (Yakhni) * * *

     

    Method,
    Heat oil in a pot add all Whole Garam Masala & onion, When onion become golden brown then add ginger garlic paste and saute, Then add Beef, tomatoes, mint, salt, garam masala powder and green chili and cook till tomatoes are tender. Add Yakhni cover led n cook for 4 to 5 mins in full flame, then add pre-soaked rice (adjust the rice and water ratio according to you) Let this cook on high heat for 2-3 minutes then reduce the heat to medium and keep cooking it, until the water diminishes, giving it a stir every now with slow hand and then to make sure all the rice is cooked evenly and perfectly.

    Once you find there is very little water left in the rice, reduce the heat to the lowest point possible. then add kewra n food color mixture Seal your pan by using a tight lid or wetting a kitchen towel and placing it over the pan then placing a lid on top of it. Leave the rice to continue steaming on very low heat for a good 10 mins. Switch off, and serve :)

     

     

     

    BeefMasalaPulaoWithShamiKabab.jpg

  12. Ayesha Mirza
    Latest Entry
    Quote

     

    آج بازار میں پابجولاں چلو

    چشمِ نم ، جانِ شوریدہ کافی نہیں

    تہمتِ عشق پوشیدہ کافی نہیں

    آج بازار میں پابجولاں چلو

    دست افشاں چلو ، مست و رقصاں چلو

    خاک بر سر چلو ، خوں بداماں چلو

    راہ تکتا ہے سب شہرِ جاناں چلو

    حاکم شہر بھی ، مجمعِ عام بھی

    تیرِ الزام بھی ، سنگِ دشنام بھی

    صبحِ ناشاد بھی ، روزِ ناکام بھی

    ان کا دم ساز اپنے سوا کون ہے

    شہرِ جاناں میں اب باصفا کون ہے

    دستِ قاتل کے شایاں رہا کون ہے

    رختِ دل باندھ لو دل فگارو چلو

    پھر ہمیں قتل ہو آئیں یارو چلو

     

    13435366_1806134046285193_7557522680415405624_n.jpg

     

     

  13. Meerab Raza
    Latest Entry

    اے میرے دل!!

    "درد کی لے دھیمی رکھ"

    آج پھر رقصاں ہیں سلگتی یادیں

    سر دشت جاں، کسی وحشت کی طرح

    پھر ٹکرایا ہے فصیل_جاں سے

    کسی گم گشتہ محبت کا جنوں

    دونوں ہاتھوں میں اٹھاۓ ہوۓ

    انا کا بے جان وجود

    ایک ہارے ہوۓ لشکر کے سپاہی کی طرح

    میں چپ چاپ کھڑا، دیکھ رہا ہوں

    پھیلے ہوۓ ہر سمت تباہی کے مناظر

    اے میرے دل_______!!

    "درد کی لے دھیمی رکھ"

    اے میرے دشمن_جاں______!!

    مجھے جینے دے!

  • Recently Browsing   0 members

    No registered users viewing this page.

  • Blog Statistics

    15
    Total Blogs
    43,005
    Total Entries


×