Jump to content
Search In
  • More options...
Find results that contain...
Find results in...
  • entries
    159
  • comments
    345
  • views
    63,170

About this blog

Welcome All

Entries in this blog

 

Mera ishq teri zaat

میرا عشق ہو...-                     تیری ذات ہو...-            پھر حُسْن عشق کی بات ہو...-                  کبھی میں ملوں...-                    کبھی تو ملے...-           کبھی ہم ملیں ملاقات ہو...-                 کبھی تو ہو چُپ...-                کبھی میں ہوں چُپ...-        کبھی دونوں ہم چُپ چاپ ہوں...-                   کبھی گفتگو..-                   کبھی تذکرے...-                   کوئی ذکر ہو...-                   کوئی بات ہو...-         کبھی حجر ہو تو دن کو ہو...-

Hareem Naz

Hareem Naz

 

Wajah e zindagi

ﺁﺝ ﺍﯾﺴﺎ ﮐﺮﺗﮯ ﮨﯿﮟ ﺑﮍﮮ ﺳﺎﺩﮦ سے ﻟﻔﻈﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﻭﺟﮧِ ﺯﻧﺪﮔﯽ ﮐﮩﮧ ﮐﮯ ﻭﺻﻞ ﮐﯽ ﺿﺮﻭﺭﺕ ﭘﺮ ﭘﮭﺮ ﺳﮯ ﺯﻭﺭ ﺩﯾﺘﮯ ﮨﯿﮟ ﺁﺝ ﺍﯾﺴﺎ ﮐﺮﺗﮯ ﮨﯿﮟ  ﺫﮐﺮ ﻭﮦ ﮨﯽ ﮐﺮﺗﮯﮨﯿﮟ ﻧﺎﻡ ﺍﻭﺭ ﺩﯾﺘﮯ ﮨﯿﮟ   ﺿﺒﻂ ﮐﮯ ﮐﻨﺎﺭﻭﮞ ﺳﮯ ، ﺩﺭﺩ ﺁﻥ ﻟﭙﭩﺎ ﮨﮯ ﭨﻮﭨﺘﮯ ﮐﻨﺎﺭﮮ ﺍﺏ  ﺩﺭﺩ ﺍﻭﺭ ﺩﯾﺘﮯ ﮨﯿﮟ ﺁﺝ ﺍﯾﺴﺎ ﮐﺮﺗﮯ ﮨﯿﮟ  ﺩﺭﺩ ﺳﮯ ﺍﻟﺠﮭﺘﮯﮨﯿﮟ ﺿﺒﻂ ﭼﮭﻮﮌ ﺩﯾﺘﮯ ﮨﯿﮟ   ﺗﺎﺭ ﺗﺎﺭ ﺩﺍﻣﻦ ﮐﻮ ﺧﺎﺭ ﺧﺎﺭ ﺭﺍﮨﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﺭﻧﺠﺸﯿﮟ ﺑﮭﻼ ﮐﮯ ﮨﻢ ﺁ ﮐﮯ ﺟﻮﮌ ﺩﯾﺘﮯ ﮨﯿﮟ ﺁﺝ ﺍﯾﺴﺎ ﮐﺮﺗﮯ ﮨﯿﮟ ﺧﻮﺩ ﻧﮩﯿﮟ ﭘﻠﭩﺘﮯ ﮨﯿﮟ ﺭﺍﮦ ﻣﻮﮌ ﺩﯾﺘﮯ ﮨﯿﮟ

Hareem Naz

Hareem Naz

 

Kaha tha Na

کہا تھا ناں!!!!! مری خاموشیوں کو تم کوئی معنی نہیں دینا جدائی کی سبھی باتیں مری آنکھوں میں پڑھ لینا   مری اس مسکراہٹ میں  اگر محسوس کر پاؤ تو  میرے آنسوؤں کی تم  نمی محسوس کر لینا کہیں جو رہ گئی ہے  وہ کمی محسوس کر لینا   مری سوچیں، مرے الفاظ کا جب روپ لیتی ہیں تمہارا عکس بنتا ہے مری نیندوں میں  جب جب رتجگوں کے دیپ جلتے ہیں تمہارا ذکر چلتا ہے       تمہاری یاد ماضی کے  دریچے کھول دیت

Hareem Naz

Hareem Naz

 

zindagi k Melay

میں گھر میں ہونے والی ایک تلخی پر ناخوش ہو کر ﮔﮭﺮ ﺳﮯ ﻧﮑﻝ ﮐﺮ ﺮﻭﮈ ﭘﺮ ﭼﻼ ﺟﺎ ﺭﮨﺎ ﺗﮭﺎ کہ پڑوس میں رہنے والے بابا جی نے روک کر پوچھا۔ بیٹا اداس لگ رہے ہو خیریت تو ہے۔ بابا جی کی بات سن کر میں نے اپنی شکائتوں کا دفتر کھول دیا۔ بابا جی زیر لب مسکرائے اور ﺯﻣﯿﻦ ﺳﮯ ﭼﮭﻮﭨﯽ ﺳﯽ ﭨﮩﻨﯽ ﻟﯽ ﺍﻭﺭ ﻓﺮﺵ ﭘﺮ ﺭﮔﮍ ﮐﺮ اس کی چوب بنا کر بولے بھولے بادشاہ آ ﻣﯿﮟ ﺗﻤﮩﯿﮟ ﺍﻧﺴﺎﻥ ﮐﻮ ﺑﻨﺪﮦ ﺑﻨﺎﻧﮯ ﮐﺎ ﻧﺴﺨﮧ ﺑﺘﺎﺗﺎ ﮨﻮﮞ  ﺍﭘﻨﯽ ﺧﻮﺍﮨﺸﻮﮞ ﮐﻮ ﮐﺒﮭﯽ ﺍﭘﻨﮯ ﻗﺪﻣﻮﮞ ﺳﮯ ﺁﮔﮯ ﻧﮧ ﻧﮑﻠﻨﮯ ﺩﻭ ‘  ﺟﻮ ﻣﻞ ﮔﯿﺎ ﺍﺱ ﭘﺮ ﺷﮑﺮ ﮐﺮﻭ ‘ ﺟﻮ ﭼﮭﻦ ﮔﯿﺎ ﺍﺱ ﭘﺮ ﺍﻓﺴﻮﺱ ﻧﮧ ﮐﺮﻭ ‘ ﺟﻮ ﻣﺎﻧ

Hareem Naz

Hareem Naz

 

ilhami Mohabbat

وہ دل جو محبت کر چکا ہو دنیا میں کسی کو محبت کیوں عطا ہوتی ہے؟ یہ ہے وہ سوال جو ہم میں سے بہت کم سمجھ پاتے ہیں۔ محبت صرف اسلئے نہیں ہوتی کہ کسی کو حاصل کر لیا جائے۔ کسی کو حاصل کرنے کیلئے تو اور دوسرے ہزاروں معمولی راستے موجود ہیں۔ نہیں جناب! اگر کسی کو یہاں محبت عطا ہوتی ہے تو اسکا ہرگز یہ مطلب نہیں ہوتا کہ کسی کو حاصل کرنے کے گرد زندگی بن لی جائے۔ محبت تو وہ ضرب ہے جس کے بعد دل پہلے سا نہیں رہتا۔ محبت کی بھٹی میں سمجھیں جل کر کندن ہو جاتا ہے۔ ایک پارس پتھر بن جاتا ہے جس سے ٹکرا کر ہم

Hareem Naz

Hareem Naz

 

Allah o Akbar

لکھوں پہلے حمدِ علیِ عظیم علیمٌ حکیمٌ رحیمٌ کریم   بدیع السمٰوات و الارض ہے عبادت اسی کی فقط فرض ہے   وہی واجب و خالقِ ممکنات کہا اس نے کُن، ہو گئی کائنات   نہیں کوئی موجود اس کے سوا نہیں کوئی معبود اس کے سوا   اسی سے وجود اور اسی سے عدم اسی سے حدوث اور اسی سے قدم   اسی کے ہیں وارفتہ یہ ماہ و مہر اسی کے ہیں سرگشتہ ساتوں پہر   نہ وہ جسم ہے اور نہ وہ جان ہے ہر اک جسم و جاں اِس میں حیران ہے   وہ

Hareem Naz

Hareem Naz

 

Aik haqeeqat

" اگلے روز انہوں نے مجھے مدینہ منورہ سے رخصت کردیا میں نے بہت عذر کیا کہ میرا یہاں سے ہلنے کو جی نہیں چاہتا لیکن وہ نہ مانے فرمانے لگے پانی کا برتن بہت دیر تک آگ پر پڑا رہے تو پانی ابل ابل کر ختم ہو جاتا ہے اور برتن خالی رہ جاتا ہے دنیا داروں کا ذوق شوق وقتی ابال ہوتا ہے کچھ لوگ یہاں رہ کر بعد میں پریشان ہوتے ہیں ان کا جسم تو مدینے میں ہوتا ہے لیکن دل اپنے وطن کی طرف لگا رہتا ہے اس سے بہتر ہے کہ انسان رہے تو اپنے وطن میں مگر دل مدینے میں لگا رہے .........!!”

Hareem Naz

Hareem Naz

 

Ismay e Muhammad

سارے حرفوں میں اک حرف، پیارا بہت اور یکتا بہت سارے ناموں میں اک نام ، سوہنا بہت اور ہمار ا بہت اس کی شاخوں پر زمانو ں کے موسم بسیرا کریں اک شجر جس کے دامن کا سایہ بہت اور گھنیرا بہت ایک آہٹ کی تحویل میں ہیں زمیں آسماں کی حدیں ایک آواز دیتی ہے پہرہ بہت اور گہرا بہت جس د ئیے کی توانائی ارض و سما کی حرارت بنی اس دیے کا ہمیں بھی حوالہ بہت اور اجالا بہت میری بینا ئی سے اور میرے ذہن سے محو ہوتا نہیں میں نے روئے محمد ﷺ کو سوچا بہت اور چاہا بہت میرے ہاتھوں سے اور

Hareem Naz

Hareem Naz

 

Mareez Gham

سبق پڑھا ہے یہی مکتبِ محبت میں کسی کی یاد رہے اور سب بھلا دینا مریضِ غم کو کسی طرح سے شفا دینا دوا نہیں نہ سہی زہر ہی پلا دینا دو آتشہ مرے ساقی مجھے پلا دینا جلا کے دل مرا دل کی لگی بڑھا دینا جو وقتِ قتل مرے شوق میں کمی دیکھو تو مسکرا کے مرا حوصلہ بڑھا دینا پیامبر مرے دردِ فراق کی حالت سنے سنے نہ سنے وہ مگر سنا دینا تم ایک بار مری مان لو پھر اس کے بعد جو کچھ کہوں تو زبان کو قلم کرا دینا تمہارے ہوتے طبیبوں کا کون لے احسان تم ہی نے درد دیا ہے تم ہی دوا د

Hareem Naz

Hareem Naz

 

Dasht e janoon k sodai

ہم دشتِ جنوں کے سودائی۔۔۔ ۔۔۔ ۔ ہم گردِ سفر، ہم نقشِ قدم۔۔ ہم سوزِطلب، ہم طرزِ فغاں--- ہم رنج چمن، ہم فصل خزاں ۔۔۔  ہم حیرت و حسرت و یاس و الم--- ہم دشت جنوں کے سودائی یہ دشتِ جنوں، یہ پاگل پن ۔۔ یہ پیچھا کرتی رسوائی--- یہ رنج و الم، یہ حزن و ملال۔۔۔  یہ نالہء شب، یہ سوزِ کمال--- دل میں کہیں بے نام چبھن۔۔ اور حدِ نظر تک تنہائی  ہم دشتِ جنوں کے سودائی--- اب جان ہماری چُھوٹے بھی۔۔ یہ دشتِ جنوں ہی تھک جائے -- جو روح و بدن کا رشتہ تھا۔۔ کئی سال ہوئے وہ ٹوٹ گیا -

Hareem Naz

Hareem Naz

 

Do bond Ansoo

دو بوند آنسو دو بوند انسو یا دو قطرے پانی پیاس تو دل کی جو انکھوں سے ٹپک جائے یہ قطرہ قطرہ دل پر گریں تو دامن بھگو دیں کسی کا دامن گیلا خوشیوں سے اور کسی کی زمیں پھر بھی پیاسی صدیوں سے  انسان ہمیشہ اپنے دل کی قیمت ادا کرتا دوسروں کے لیے بہائے گئے آنسو سمندر میں بھی اپنا وجود برقرار رکھتے اور اپنے لیے تنہائی میں بہائے گئے آنسو اپنی قیمت وصول کرنا جانتے بہت مہنگا سودا کرتا انسان ہر بوند انسان کے دل پر گرتی شاید خسارہ ہی اس کا مقدر انکھیں خالی ہوں یا پانی کی بوندوں سے بھری خالی دل کا پتہ دیتیں

Hareem Naz

Hareem Naz

 

tery nam ki mohabbat

‏😘😘😘تیرے نام کی ہر ‎#لڑکی سے محبت ہے 😍🙈 اب بتا اور کیا ‎#ثبوت دوں ‎#محبت کا ؟😂😂🙈🙈 

Hareem Naz

Hareem Naz

 

zindagi ki yahi kahani

‎ زندگی کی یہی کہانی ہے  سانس آنی اور جانی ہے  تم جو ہوتے تو بات کچھ ہوتی  اب کہ بارش تو صرف پانی ہے  اک طرف اس کہ بولتی آنکھیں  اک طرف میری بے زبانی ہے  یوں ہی سنتے رہیں اگر دل کی  یاد رکھئے کہ جان جانی ہے  دھوپ لگتی ہے بادلوں جیسے  یہ محبت کی سائبانی ہے  بہتی جاتی ہوں ایک سمندر میں  اس کی یادوں کی بادبانی ہے  ہر طرف خار خار ہیں گلشن  باغباں خوب باغبانی ہے  آشنا ہوں میں اب سرابوں سے  میں نے صحرا کی خاک چھانی ہے  چاندنیؔ کی غزل وزل صاح

Hareem Naz

Hareem Naz

 

Qeemti

✡🎀 ‏ہمیں #ڈھـــــانــپ کر وہی رکھتــــا ہــے۔۔۔۔ ✡🎀 جـــس کــے لیــے ہم #قیمــــتی ہوتــے ہیــں۔۔۔۔ ✡🎀 چاہـے وہ ہمـارا #رب ہو۔۔۔۔یا۔۔۔۔۔ کوئی #انســان۔۔۔

Hareem Naz

Hareem Naz

 

Mohabbat ho to keh dena

یہ لمحے عشق و مستی کے سدا پابند نہیں رہتے  سدا خوشیاں نہیں رہتی ہمیشہ غم نہیں رہتے   ذرا دیکھو کہ دروازے پہ دستک کون دیتا ہے   محبت ہو تو کہہ دینا یہاں اب ہم نہیں رہتے

Hareem Naz

Hareem Naz

 

kun se la tk ka safar

کُن سے لَا تک کا سفر کچھ لوگ کنویں کی طرح ہو تے ہیں جن میں سے ہر کوئی استطاعت بھر پانی نکالتا ہے سیراب ہوتا چلا جاتا ہے۔اور پھر وہ دن بھی آتے ہیں کہ کنواں خود پیاسا ہوجا تا ہے مگر پھر بھی مشکیں بھر بھر بانٹتا ہے۔صحرا نوردوں کو پیا سوں کو آوازیں لگاتا ہے آؤ اور پیاس بجھاؤ۔ مگر اس کنویں کا سیراب ہونا لوگوں کے ہاتھوں نہیں اللّٰہ کے ہاتھوں ہوتا ہے۔کبھی باراں رحمت برسا کر تو کبھی زمین کے بند دروازے کھول کر اسے سیراب کر دیا جاتا ہے۔ جو بس دینا جانتے ہیں ،بانٹنا جا نتے ہیں انکو سیراب کر نے وال

Hareem Naz

Hareem Naz

 

sajday ka shouq

یہ خلا ہے عرشِ بریں نہیں، کہاں پاؤں رکھوں زمیں نہیں ترے دَر پہ سجدے کا شوق ہے، جو یہاں نہیں تو کہیں نہیں     کسی بُت تراش نے شہر میں مجھے آج کتنا بدل دیا میرا چہرہ میرا نہیں رہا، یہ جبیں بھی میری جبیں نہیں     ہے ضرور اِس میں بھی مصلحت، وہ جو ہنس کے پوچھے ہے خیریت کہ محبتوں میں غرض نہ ہو، نہیں ایسا پیار کہیں نہیں     وہیں درد و غم کا گُلاب ہے، جہاں کوئی خانہ خراب ہے جسے جُھک کے چاند نہ چُوم لے، وہ محبتوں کی زمیں نہیں  

Hareem Naz

Hareem Naz

 

Mohabbat k Asool

محبت کے اصولوں سے کبھی الجھا نہیں کرتے یہ الحاد حقیقت ھے، سنو ایسا نہیں کرتے بہت کم ظرف لوگوں سے بہت محتاط رھتے ھیں بنا سوچے سمندر میں یونہی اترا نہیں کرتے تیری ساقی سخاوت پہ میں سانسیں وار دوں لیکن میرے کامل کا فرماں ھے  کبھی بہکا نہیں کرتے محبت سے ضروری ھے  غم دنیا کا افسانہ محبت کے حسیں قصوں میں کھو جایا نہیں کرتے جسے دیکھو ، اسے سوچو ،  جسے سوچو ،  اسے پاؤ جسے نہ پا سکو…  اسکو کبھی دیکھا نہیں کرتے مجھے تائب ، وفا بردار لوگوں سے شکایت ھے بہت تنق

Hareem Naz

Hareem Naz

 

Toota hua glass

🌹 ٹوٹا ہوا گلاس 🌹 عربی اخبار میں شائع ہونے والی ایک خوبصورت تحریر " یہ ایک سعودی طالبعلم کے ساتھ پیش آنے والا واقعہ ہے جو حصول تعلیم کے لیے برطانیہ میں مقیم تھا وہ طالبعلم بیان کرتا ہے کہ مجھے ایک ایسی انگریز فیملی کے ساتھ ایک کمرہ کرائے پر لے کر رہنے کا اتفاق ہوا جو ایک میاں بیوی اور ایک چھوٹے بچے پر مشتمل تھی۔ ایک دن وہ دونوں میاں بیوی کسی کام سے باہر جا رہے تھے تو انہوں نے مجھ سے پوچھا کہ اگر آپ گھر پر ہی ہیں تو ہم اپنے بچے کو کچھ وقت کے لیے آپ کے پاس چھوڑ دیں ؟ میرا باہر جانے کا کوئ ا

Hareem Naz

Hareem Naz

 

Aurat k naam

Aankhon ki bandgi nigahain Jhuka k Chal, Shanun se Gir gia hai Dopata Utha K Chal, Qomun ki zindgi Teri Aaghosh Men Pali. Qomun ki zindgi Ka Muqadar Jaga k chal, Ankhon K Teer Tery Badan Se Paray Rahen, Sharm_o_Haya Ko Apna Lubada Bana K Chal, Gar Ho sakay To Serat_e_Zohra Pe Kar Amal, Is Zindgi Ko yon Na Tamasha Bana k Chal, Ban Ja Sheaar_e_Azamat_e_Aslaaf ka NIshan, Har Ek Gunah Se Daman_e_Ismat Bacha K Chal, Mana Hawa Kharab Hai Mahool Bhe Gha

Hareem Naz

Hareem Naz

 

DUA BI NA KR SAKY

ﺑﭽﮭﮍﮮ ﺗﻮ ﻗﺮﺑﺘﻮﮞ ﮐﯽ ﺩﻋﺎ ﺑﮭﯽ ﻧﮧ ﮐﺮ ﺳﮑﮯ ﺍﺏ ﮐﮯ ﺗﺠﮭﮯ ﺳﭙﺮﺩ ﺧﺪﺍ ﺑﮭﯽ ﻧﮧ ﮐﺮ ﺳﮑﮯ ﺗﻘﺴﯿﻢ ﮨﻮ ﮐﮯ ﺭﮦ ﮔﺌﮯ ﺻﺪ ﮐﺮﭼﯿﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﮨﻢ ﻧﺎﻡِ ﻭﻓﺎ ﮐﺎ ﻗﺮﺽ ﺍﺩﺍ ﺑﮭﯽ ﻧﮧ ﮐﺮ ﺳﮑﮯ ﻧﺎﺯﮎ ﻣﺰﺍﺝ ﻟﻮﮒ ﺗﮭﮯ ﮨﻢ ﺟﯿﺴﮯ ﺁﺋﯿﻨﮧ ﭨﻮﭨﮯ ﮐﭽﮫ ﺍﺱ ﻃﺮﺡ ﮐﮧ ﺻﺪﺍ ﺑﮭﯽ ﻧﮧ ﮐﺮ ﺳﮑﮯ ﺧﻮﺵ ﺑﮭﯽ ﻧﮧ ﺭﮐﮫ ﺳﮑﮯ ﺗﺠﮭﮯ ﮨﻢ ﺍﭘﻨﯽ ﭼﺎﮦ ﻣﯿﮟ ﺍﭼﮭﯽ ﻃﺮﺡ ﺳﮯ ﺗﺠﮫ ﮐﻮ ﺧﻔﺎ ﺑﮭﯽ ﻧﮧ ﮐﺮ ﺳﮑﮯ ﺍﯾﺴﺎ ﺳﻠﻮﮎ ﮐﺮ ﮐﮯ ﺗﻤﺎﺷﺎﺋﯽ ﮨﻨﺲ ﭘﮍﯾﮟ ﮐﻮﺋﯽ ﮔﻠﮧ ﮔﺰﺍﺭ ، ﮔﻠﮧ ﺑﮭﯽ ﻧﮧ ﮐﺮ ﺳﮑﮯ ﮨﻢ ﻣﻨﺘﻈﺮ ﺭﮨﮯ ﮐﻮﺋﯽ ﻣﺸﻖِ ﺳﺘﻢ ﺗﻮ ﮨﻮ ﺗﻢ ﻣﺼﻠﺤﺖ ﺷﻨﺎﺱ ﺟﻔﺎ ﺑﮭﯽ ﻧﮧ ﮐﺮ ﺳﮑﮯ

Hareem Naz

Hareem Naz

 

suno

ﺳﻨﻮ !! ﺁﻧﮑﮭﻮﮞ ﺳﮯ ﭘﮍﮪ ﻟﯿﻨﺎ ﻭﮦ ﺳﺎﺭﯼ ﺍﻥ ﮐﮩﯽ ﺑﺎﺗﯿﮟ ﮐﻮﺋﯽ ﭘﻮﭼﮭﮯ ﺗﻮ ﮐﮩﮧ ﺩﯾﻨﺎ _____ ﺑﮩﺖ ﮨﯽ ﺭﺍﺯﺩﺍﺭﯼ ﮬﮯ

Hareem Naz

Hareem Naz

 

Betiayo ka pyar

بیٹئ ﻟﮍﮐﯿﻮﮞ ﮐﮯ ﺍﺳﮑﻮﻝ ﻣﯿﮟ ﺁﻧﮯ ﻭﺍﻟﯽ ﻧﺌﯽ ﭨﯿﭽﺮ ﺧﻮﺑﺼﻮﺭﺕ ﺍﻭﺭ ﺑﺎ ﺍﺧﻼﻕ ﮨﻮﻧﮯ ﮐﮯ ﺳﺎﺗﮫ ﺳﺎﺗﮫ ﻋﻠﻤﯽ ﻃﻮﺭ ﭘﺮ ﺑﮭﯽ ﻣﻀﺒﻮﻁ ﺗﮭﯽ ﻟﯿﮑﻦ ﺍُﺱ ﻧﮯ ﺍﺑﮭﯽ ﺗﮏ ﺷﺎﺩﯼ ﻧﮩﯿﮟ ﮐﯽ ﺗﮭﯽ ﺳﺐ ﻟﮍﮐﯿﺎﮞ ﺍﺱ ﮐﮯ ﺍﺭﺩﮔﺮﺩ ﺟﻤﻊ ﮨﻮ ﮔﺌﯿﮟ ﺍﻭﺭ ﻣﺬﺍﻕ ﮐﺮﻧﮯ ﻟﮕﯿﮟ ﮐﮧ ﻣﯿﮉﻡ ﺁﭖ ﻧﮯ ﺍﺑﮭﯽ ﺗﮏ ﺷﺎﺩﯼ ﮐﯿﻮﮞ ﻧﮩﯿﮟ ﮐﯽ *؟؟* ﻣﯿﮉﻡ ﻧﮯ ﺩﺍﺳﺘﺎﻥ * ﮐﭽﮫ * ﯾﻮﮞ ﺷﺮﻭﻉ ﮐﯽ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ﺍﯾﮏ ﺧﺎﺗﻮﻥ ﮐﯽ ﭘﺎﻧﭻ ﺑﯿﭩﯿﺎﮞ ﺗﮭﯿﮟ ، ﺷﻮﮨﺮ ﻧﮯ ﺍﺱ ﮐﻮ ﺩﮬﻤﮑﯽ ﺩﯼ ﮐﮧ ﺍﮔﺮ ﺍﺱ ﺩﻓﻌﮧ ﺑﮭﯽ ﺑﯿﭩﯽ ﮨﻮﺋﯽ ﺗﻮ ﺍﺱ ﺑﯿﭩﯽ ﮐﻮ ﺑﺎﮨﺮ ﮐﺴﯽ * ﺳﮍﮎ * ﯾﺎ ﭼﻮﮎ * ﭘﺮ * ﭘﮭﯿﻨﮏ ﺁﻭﮞ ﮔﺎ ، ﺧﺪﺍ ﮐﯽ ﺣﮑﻤﺖ ﺧﺪﺍ ﮨﯽ ﺟﺎﻧﮯ ﮐﮧ ﭼﮭﭩﯽ ﻣﺮﺗﺒﮧ ﺑﮭﯽ ﺑﯿﭩﯽ ﭘﯿﺪﺍ ﮨﻮﺋﯽ

Hareem Naz

Hareem Naz

 

Betiayo ka pyar

بیٹئ ﻟﮍﮐﯿﻮﮞ ﮐﮯ ﺍﺳﮑﻮﻝ ﻣﯿﮟ ﺁﻧﮯ ﻭﺍﻟﯽ ﻧﺌﯽ ﭨﯿﭽﺮ ﺧﻮﺑﺼﻮﺭﺕ ﺍﻭﺭ ﺑﺎ ﺍﺧﻼﻕ ﮨﻮﻧﮯ ﮐﮯ ﺳﺎﺗﮫ ﺳﺎﺗﮫ ﻋﻠﻤﯽ ﻃﻮﺭ ﭘﺮ ﺑﮭﯽ ﻣﻀﺒﻮﻁ ﺗﮭﯽ ﻟﯿﮑﻦ ﺍُﺱ ﻧﮯ ﺍﺑﮭﯽ ﺗﮏ ﺷﺎﺩﯼ ﻧﮩﯿﮟ ﮐﯽ ﺗﮭﯽ ﺳﺐ ﻟﮍﮐﯿﺎﮞ ﺍﺱ ﮐﮯ ﺍﺭﺩﮔﺮﺩ ﺟﻤﻊ ﮨﻮ ﮔﺌﯿﮟ ﺍﻭﺭ ﻣﺬﺍﻕ ﮐﺮﻧﮯ ﻟﮕﯿﮟ ﮐﮧ ﻣﯿﮉﻡ ﺁﭖ ﻧﮯ ﺍﺑﮭﯽ ﺗﮏ ﺷﺎﺩﯼ ﮐﯿﻮﮞ ﻧﮩﯿﮟ ﮐﯽ *؟؟* ﻣﯿﮉﻡ ﻧﮯ ﺩﺍﺳﺘﺎﻥ * ﮐﭽﮫ * ﯾﻮﮞ ﺷﺮﻭﻉ ﮐﯽ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ﺍﯾﮏ ﺧﺎﺗﻮﻥ ﮐﯽ ﭘﺎﻧﭻ ﺑﯿﭩﯿﺎﮞ ﺗﮭﯿﮟ ، ﺷﻮﮨﺮ ﻧﮯ ﺍﺱ ﮐﻮ ﺩﮬﻤﮑﯽ ﺩﯼ ﮐﮧ ﺍﮔﺮ ﺍﺱ ﺩﻓﻌﮧ ﺑﮭﯽ ﺑﯿﭩﯽ ﮨﻮﺋﯽ ﺗﻮ ﺍﺱ ﺑﯿﭩﯽ ﮐﻮ ﺑﺎﮨﺮ ﮐﺴﯽ * ﺳﮍﮎ * ﯾﺎ ﭼﻮﮎ * ﭘﺮ * ﭘﮭﯿﻨﮏ ﺁﻭﮞ ﮔﺎ ، ﺧﺪﺍ ﮐﯽ ﺣﮑﻤﺖ ﺧﺪﺍ ﮨﯽ ﺟﺎﻧﮯ ﮐﮧ ﭼﮭﭩﯽ ﻣﺮﺗﺒﮧ ﺑﮭﯽ ﺑﯿﭩﯽ ﭘﯿﺪﺍ ﮨﻮﺋﯽ

Hareem Naz

Hareem Naz

 

Aurat ki Mohabbat

عوﺭﺕ ﺟﺲ ﻧﮯ ﮬﻤﯿﺸﮧ ﺩﻋﻮﯼ ﮐﯿﺎ ﮐﮧ ﻣﺮﺩ ﺳﮯ ﺯﯾﺎﺩﮦ ﻣﺤﺒﺖ ﮐﺮﺗﯽ ﮨﮯ ﺗﻮ ﺍﺱ ﮐﺎ ﯾﮧ ﻭﻋﻮﯼ ﺳﭻ ﮨﯽ ﮨﮯ ﻗﺼﻮﺭ ﻣﺮﺩ ﮐﺎ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﻮﺗﺎ ﻗﺼﻮﺭ ﻋﻮﺭﺕ ﮐﺎ ﺑﮭﯽ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﻮﺗﺎ ﮐﯿﻮﮞ ﮐﮧ ﻓﻄﺮﺕ ﺍﻧﺴﺎﻧﯽ ﮨﯽ ﻧﮯ ﺩﻭﻧﻮﮞ ﮐﻮ ﻣﺨﺘﻠﻒ ﺑﻨﺎﯾﺎ ﮬﮯ ﻣﺮﺩ ﺑﮩﺖ ﺟﻠﺪﯼ ﺍﮐﺘﺎ ﺟﺎﻧﮯ ﮐﯽ ﻓﻄﺮﺕ ﺭﮐﮭﺘﺎ ﮨﮯ ﺟﺐ ﮐﮧ ﻋﻮﺭﺕ ﮬﻤﯿﺸﮧ ﻣﺮﺗﮯ ﺩﻡ ﺗﮏ ﭼﺎﮬﻨﮯ ﺍﻭﺭ ﻧﺒﮭﺎﻧﮯ ﮐﯽ ﻓﻄﺮﺕ ﻟﮯ ﮐﺮ ﭘﯿﺪﺍ ﮨﻮﺉ ﮬﮯ ﻣﺮﺩ ﮐﯿﻮﮞ ﺍﮐﺘﺎ ﺟﺎﺗﺎ ﮨﮯ ﮐﯿﻮﻧﮑﮧ ﻣﺮﺩ ﺁﺯﺍﺩ ﺍﻭﺭ ﺍﭘﻨﯽ ﻣﺮﺿﯽ ﮐﮯ ﻣﺎﻟﮏ ﮬﻮﻧﮯ ﮐﯽ ﮐﯿﻔﯿﺖ ﮐﺎ ﻧﺎﻡ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﻣﺮﺩ ﺣﺎﮐﻢ ﭘﯿﺪﺍ ﮨﻮﺍ ﮨﮯ ﺟﺐ ﮐﮧ ﻋﻮﺭﺕ ﭘﺮﺩﮮ ﻣﯿﮟ ﮈﮬﮑﯽ ﭼﮭﭙﯽ ﭼﯿﺰ ﮐﺎ ﻧﺎﻡ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﻣﺤﮑﻮﻣﮧ ﭘﯿﺪﺍ ﮐﯽ ﮔﺌﯽ ﮬﮯ ﻋﻮﺭﺕ

Hareem Naz

Hareem Naz

×
×
  • Create New...