Jump to content
Search In
  • More options...
Find results that contain...
Find results in...

Welcome to Fundayforum.com

Take a moment to join us, we are waiting for you.

Leaderboard


Popular Content

Showing content with the highest reputation on 05/21/2018 in all areas

  1. 1 point
    حضرت عائشہ صدیقہ رضی اﷲ عنہا سے روایت ہے : ’ایک صحابی حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی خدمت میں حاضر ہو کر عرض گزار ہوئے کہ یارسول اﷲ! آپ مجھے میری جان اور میرے والدین سے بھی زیادہ محبوب ہیں۔ جب میں اپنے گھر میں ہوتا ہوں تو آپ کو ہی یاد کرتا رہتا ہوں اور اس وقت تک چین نہیں آتا جب تک حاضر ہو کر آپ کی زیارت نہ کر لوں۔ لیکن جب مجھے اپنی موت اور آپ کے وصال مبارک کا خیال آتا ہے تو سوچتا ہوں کہ آپ تو جنت میں انبیاء کرام کے ساتھ بلند ترین مقام پر جلوہ افروز ہوں گے اور جب میں جنت میں داخل ہوں گا تو خدشہ ہے کہ کہیں آپ کی زیارت سے محروم نہ ہو جاؤں۔ حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے اس صحابی کے جواب میں سکوت فرمایا، اس اثناء میں حضرت جبرئیل علیہ السلام تشریف لائے اور یہ آیت نازل ہوئی : ’’اور جو کوئی اللہ اور رسول (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) کی اطاعت کرے تو یہی لوگ (روزِ قیامت) اُن (ہستیوں) کے ساتھ ہوں گے جن پر اللہ نے (خاص) انعام فرمایا ہے۔ ‘‘ سيوطي، الدر المنثور، 2 : 2182 ابن کثير، تفسير القرآن العظيم، 1 : 3523 حوریہ
  2. 1 point
    🌷🌸🌷🌸🌷🌸🌷 علامہ شنقیطی رحمہ اللہ سے پوچھا گیا: عبادت کے موسموں کا استقبال کیسے کریں؟ فرمایا: استقبال کے لیے بہترین چیز استغفار کی کثرت ہے. اس لیے کہ گناہوں کی وجہ سے بندہ عبادت و طاعات کی توفیق سے محروم ہوجاتا ہے۔ جو بندہ استغفار کو لازم پکڑ لیتا ہے (استغفار کی کثرت کرتا ہے) تو: ❶ وہ گناہوں سے پاک صاف ہوجاتا ہے۔ ❷ اگر وہ کمزور ہے تو طاقتور بن جاتا ہے۔ ❸ بیمار ہے تو مکمل شفایاب ہوجاتا ہے۔ ❹ کسی مصیبت میں مبتلا ہے تو خلاصی پالیتا ہے۔ ❺ اگر حیران و سرگرداں ہے تو ہدایت پالیتا ہے۔ ❻ بے چین ہے تو قرار نصیب ہوجاتا ہے۔ ❼ رسول اللہﷺ کے بعد ہمارے لیے سب سے بڑی امان استغفار ہی ہے۔
This leaderboard is set to Karachi/GMT+05:00
×