Jump to content

Register now to gain access to all of our features. Once registered and logged in, you will be able to create topics, post replies to existing threads, give reputation to your fellow members, get your own private messenger, post status updates, manage your profile and so much more. If you already have an account, login here - otherwise create an account for free today!

Welcome to our forums
Welcome to our forums, full of great ideas.
Please register if you'd like to take part of our project.
Urdu Poetry & History
Here you will get lot of urdu poetry and history sections and topics. Like/Comments and share with others.
We have random Poetry and specific Poet Poetry. Simply click at your favorite poet and get all his/her poetry.
Thank you buddy
Thank you for visiting our community.
If you need support you can post a private message to me or click below to create a topic so other people can also help you out.

Safa mughal

Administrators
  • Content Count

    387
  • Joined

  • Last visited

  • Days Won

    26

Everything posted by Safa mughal

  1. میں سیاہ رنگ سے ترک تعلق کر لوں؟؟

    مجھے اس سے گہرا رنگ لا کر دے کوئی

    veil_woman_2-1.jpg

  2. لوﮒ ﺳﭻ ﮐﮩﺘﮯ ﮨﯿﮟ لوﮒ ﺳﭻ ﮐﮩﺘﮯ ﮨﯿﮟ ﻋﻮﺭﺗﯿﮟ ﺑﮩﺖ ﻋﺠﯿﺐ ﮨﻮﺗﯽ ﮨﯿﮟ ۔ ﺭﺍﺕ ﺑﮭﺮ ﭘﻮﺭﺍ ﺳﻮﺗﯽ ﻧﮩﯿﮟ ﺗﮭﻮﮌﺍ ﺗﮭﻮﮌﺍ ﺟﺎﮔﺘﯽ ﺭﮨﺘﯽ ﮨﯿﮟ ۔ ﻧﯿﻨﺪ ﮐﯽ ﺳﯿﺎﮨﯽ ﻣﯿﮟ ﺍﻧﮕﻠﯽ ﮈﻭﺑﻮ ﮐﺮ ﺩﻥ ﮐﺎ ﺣﺴﺎﺏ ﻟﮑﮭﺘﯽ ﮨﯿﮟ ﭨﭩﻮﻟﺘﯽ ﺭﮨﺘﯽ ﮨﯿﮟ ﺩﺭﻭﺍﺯﻭﮞ ﮐﯽ ﮐﻨﮉﯾﺎﮞ ﺑﭽﻮﮞ ﭼﺎﺩﺭ ۔۔ﺷﻮﮨﺮ ﮐﺎ ﻣﻦ ۔ ﺍﻭﺭ ﺟﺐ ﺟﺎﮔﺘﯽ ﮨﯿﮟ ۔۔ ﺗﻮ ﭘﻮﺭﺍ ﻧﮩﯿﮟ ﺟﺎﮔﺘﯽ ۔ﻧﯿﻨﺪ ﻣﯿﮟ ﮨﯽ ﺑﮭﺎﮔﺘﯽ ﮨﯿﮟ ۔ ﺳﭻ ﻣﯿﮟ ﻋﻮﺭﺗﯿﮟ ﺑﮩﺖ ﻋﺠﯿﺐ ﮨﻮﺗﯽ ﮨﯿﮟ ۔ ﮨﻮﺍ ﮐﯽ ﻃﺮﺡ ﮔﮭﻮﻣﺘﯽ ﮐﺒﮭﯽ ﮔﮭﺮ ﮐﺒﮭﯽ ﺑﺎﮨﺮ ۔ﭨﻔﻦ ﻣﯿﮟ ﺭﻭﺯ ﺭﮐﮭﺘﯽ ﻧﺌﯽ ﻧﻈﻤﯿﮟ ۔ﮔﻤﻠﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﺭﻭﺯ ﺑﻮﺗﯽ ﺍﻣﯿﺪﯾﮟ ۔ ﭘﺮﺍﻧﮯﻋﺠﯿﺐ ﺳﮯ ﮔﺎﻧﮯ ﮔﻨﮕﻨﺎﺗﯽ ﭼﻞ ﺩﯾﺘﯽ ﮨﯿﮟ ۔ ﭘﮭﺮ ﻧﺌﮯ ﺩﻥ ﮐﺎ ﻣﻘﺎﺑﻠﮧ ﮐﺮﻧﮯ ۔ﺳﺐ ﺳﮯ ﺩﻭﺭ ﮨﻮﮐﺮ ﺑﮭﯽ ﺳﺐ ﮐﮯ ﻗﺮﯾﺐ ﮨﻮﺗﯽ ﮨﯿﮟ ۔ ﻋﻮﺭﺗﯿﮟ ﺳﭻ ﻣﯿﮟ ﺑﮩﺖ ﻋﺠﯿﺐ ﮨﻮﺗﯽ ﮨﯿﮟ ۔ ﮐﺒﮭﯽ ﮐﻮﺋﯽ ﺧﻮﺍﺏ ﭘﻮﺭﺍ ﻧﮩﯿﮟ ﺩﯾﮑﮭﺘﯿﮟ ۔ ﺑﯿﭻ ﻣﯿﮟ ﮨﯽ ﭼﮭﻮﮌ ﮐﺮ ﺩﯾﮑﮭﻨﮯ ﻟﮕﺘﯽ ﮨﯿﮟ ﭼﻮﻟﮩﮯ ﭘﺮ ﭼﮍﮬﺎ ﺩﻭﺩﮪ ۔ ﮐﺒﮭﯽ ﮐﻮﺋﯽ ﮐﺎﻡ ﭘﻮﺭﺍ ﻧﮩﯿﮟ ﮐﺮﺗﯽ ۔ ﺑﯿﭻ ﻣﯿﮟ ﭼﮭﻮﮌ ﮐﺮﮈﮬﻮﻧﮉﻧﮯ ﻟﮕﺘﯿﮟ ﻣﻮﺯﮮ ۔ﺑﭽﻮﮞ ﮐﯽ ﭘﯿﻨﺴﻞ ۔ﺭﺑﮍ ۔ﺟﻮﺗﮯ ۔ ﺍﭘﻨﮯ ﺑﭽﭙﻦ ﮐﯽ ﯾﺎﺩﯾﮟ ۔ ﺳﮩﯿﻠﯿﻮﮞ ﮐﯽ ﺑﺎﺗﯿﮟ ۔۔ ﺑﮩﻨﻮ ﺳﮯ ﻟﮍﺍﺋﯽ ﺍﻭﺭ ﺍﻧﮑﺎ ﻣﺎﻧﻨﺎ ۔۔ ﺍﻭﺭ ﮐﭽﮫ ﻧﮩﯿﮟ ﺗﻮ ﺑﺲ ﻣﺎﮞ ﮐﻮ ﯾﺎﺩ ﮐﺮ ﮐﮧ ﺭﻭ ﺩﯾﻨﺎ ۔ ﺍﺑّﺎ ﮐﯽ ﮔﮍﯾﺎﮞ ﻻﻧﯽ ﯾﺎﺩ ﺁﺟﺎﺗﯽ ۔ ۔۔ ﺍﻭﺭ ﭘﺮﺍﻧﮯ ﺻﻨﺪﻭﻕ ﺳﮯ ﮐﭽﮫ ﺍﺩﮬﻮﺭﯼ ﯾﺎﺩﯾﮟ ﮈﮬﻮﻧﮉﻧﺎ ﮐﭽﮫ ﺍﻥ ﮐﮩﯽ ﻟﻔﻈﻮﮞ ﮐﯽ ﮐﮩﺎﻧﯽ ﮐﮭﻮﯾﺎ ﮨﻮﺍ ﻭﺭﻕ ﮈﮬﻮﻧﮉﻧﺎ ۔۔ ﺑﺮﺳﺎﺕ ﮐﻮ ﯾﺎﺩ ﮐﺮﻧﺎ ۔۔ ﺟﺐ ﮨﻮ ﺟﺎﺋﮯ ﺗﻮ ۔ﺑﮭﺎﮔﺘﮯ ﺭﮨﻨﺎ ﮐﭙﮍﮮ ﺑﮭﯿﮓ ﻧﺎ ﺟﺎﺋﮯ ۔ﺍﭼﺎﺭ ۔ﭘﺎﭘﮍ ﺧﺮﺍﺏ ﻧﺎ ﮨﻮ ﺟﺎﺋﮯ ۔۔ ﺳﭻ ﻣﯿﮟ ﻋﻮﺭﺗﯿﮟ ﺑﮩﺖ ﻋﺠﯿﺐ ﮨﻮﺗﯽ ﮨﯿﮟ ﺧﻮﺷﯽ ﮐﯽ ﺍﻣﯿﺪ ﭘﺮ ﭘﻮﺭﯼ ﺯﻧﺪﮔﯽ ﺑﺘﺎ ﺩﯾﺘﯽ ﮨﯿﮟ ۔ ﺍﻥ ﮔﻨﺖ ﮐﮭﺎﺋﯿﻮﮞ ﮐﮯ ﭘﻞ ﮐﻮ ﭘﺎﭦ ﺩﯾﺘﯽ ﮨﯿﮟ ..... ﺳﭻ ﻣﯿﮟ ﻋﻮﺭﺗﯿﮟ ﻋﺠﯿﺐ ﮨﻮﺗﯽ ﮨﯿﮟ .galleria, .galleria-container { height:480px !important } .fullscreen { height:100% !important; }
  3. ساتھ چلتے جا رہے ہیں ساتھ چلتے جا رہے ہیں پاس آ سکتے نہیں اک ندی کے دو کناروں کو ملا سکتے نہیں دینے والے نے دیا سب کچھ عجب انداز سے سامنے دنیا پڑی ہے اور اٹھا سکتے نہیں اس کی بھی مجبوریاں ہیں میری بھی مجبوریاں روز ملتے ہیں مگر گھر میں بتا سکتے نہیں کس نے کس کا نام اینٹوں پر لکھا ہے خون سے اشتہاروں سے یہ دیواریں چھپا سکتے نہیں راز جب سینے سے باہر ہو گیا اپنا کہاں ریت پر بکھرے ہوئے آنسو اٹھا سکتے نہیں آدمی کیا ہے گزرتے وقت کی تصویر ہے جانے والے کو صدا دے کر بلا سکتے نہیں شہر میں رہتے ہوئے ہم کو زمانہ ہو گیا کون رہتا ہے کہاں کچھ بھی بتا سکتے نہیں اس کی یادوں سے مہکنے لگتا ہے سارا بدن پیار کی خوشبو کو سینے میں چھپا سکتے نہیں پتھروں کے برتنوں میں آنسووں کو کیا رکھیں پھول کو لفظوں کے گملوں میں کھلا سکتے نہیں بشیر بدر
  4. اب میں خود کو بگاڑ بیٹھا ہوں دل کی بستی اجاڑ بیٹھا ہوں سات رنگوں میں آٹھواں تھا میں اب تو حلیہ بگاڑ بیٹھا ہوں آنکھ مجھ کو نکالتا ، تُو ہے میں تو سورج پچھاڑ بیٹھا ہوں چُٹکلے نا سُنا مجھے پھر سے کاٹ غم کے پہاڑ بیٹھا ہوں یوں گلے تُو نہ پڑ مرے، چل جا بند کر سب کواڑ بیٹھا ہوں
  5. مر ہی جائے گی یہ اداسی اب دیکھ میں مسکرائے جاتا ہوں
  6. نام تو نام مجھے وہ شکل بھی اب یاد نہیں ہائے وہ لوگ وہ اعصاب پہ چھائے ہوئے لوگ
  7. خط کے چھوٹے سے تراشے میں نہیں آئیں گے غم زیادہ ہیں لفافے میں نہیں آئیں گے ہم نہ مجنوں ہیں، نہ فرہاد کے کچھ لگتے ہیں ہم کسی دشت تماشے میں نہیں آئیں گے مختصر وقت میں یہ بات نہیں ہو سکتی درد اتنے ہیں خلاصے میں نہیں آئیں گے اُس کی کچھ خیر خبر ہو تو بتاوْ یارو ہم کسی اور دلاسے میں نہیں آئیں گے جس طرح آپ نے بیمار سے رخصت لی ہے صاف لگتا ہے جنازے میں نہیں آئیں گے
  8. هم نے شب کی اداس آنکھوں میں اپنی نیندوں کو ، مرتے دیکھا هے
  9. کوئی کامل پیر فقیر دسو جہڑا دل دے نال دعا دیوے مایوس ھاں میں بہت عرصے توں میرے روندے نین ھسا دیوے
  10. ،تجھ سے وابستہ کوئی چیز نہ رکھی گھر میں ،‏میری خوش فہمی تھی یوں تجھ کو بُھلا سکتا ہوں
  11. اپنی آواز کی بھی خیرات نہیں کی اس نے میں نے چاہا بھی مگر بات نہیں کی اس نے
  12. مذہبِ عشق میں نہ کوئی شہنشاہ نہ کنیز۔۔ یہ وہ الہام ہے جو سب پہ اتر سکتا ہے۔۔! کوئی سمجھائے یہ اکبر کو "عبیدہ" جا کر، عشق دیوار میں چُنوانے سے مر سکتا ہے۔۔؟ New Content added Less than in a minutes & merged. بھول گئی وہ شکل بھی آخر ! کب تک یاد کوئی رہتا ہے
  13. ‏آوے نہ جے چین تے دسو کی کرئیے اکھاں ترلے لین تے دسو کی کرئیے ہاسے وِچ وی کاغذ کالے کر ویکھے اکھاں پاون وین تے دسو کی کرئیے جس نوں تکیا جی کیتا سی جیون تے مارن اوہدے نین تے دسو کی کرئیے ,میں تے قسمے اکھاں راہ تے تر آیاں موت نہ آوے لین تے دسو کی کرئیے ‏اودی یاد دے چھالے جانوں پیارے نیں کنڈے پیری پین تے دسو کی کرئیے
  14. !!!! ‏خود کشی، عشق، فنا، قتل، یا پھر ترکِ وفا کُچھ بھی کر سکتا ہے، جذبات میں آیا ہوا شخص
  15. عدل و انصاف کی پاسداری ایک دن شیر شاہ سوری کےسامنے ایک قتل کا مقدمہ پیش ہوا جس میں قاتل کا سراغ نہیں مل رہا تھا یہ قتل اٹاوہ کے کسی علاقے میں ہوا تھا۔ شیر شاہ سوری نے مقدمے کی سماعت کی۔ اس نے اٹاوہ کے شقدار کو حکم بھیجا کہ جس علاقے میں قتل ہوا ہے اس کے آس پاس واقع کسی درخت کو دو آدمی بھیج کر کٹوائے اور جو سرکاری عامل اس درخت کے کاٹنے کی اطلاع پا کر آئیں انہیں پکڑ کر ہمارے پاس بھیج دو۔ شقدار نے شاہی فرمان کے مطابق دو آدمی درخت کاٹنے کے لئے موقعہ واردات پر بھیجے۔ وہ ابھی درخت کاٹ ہی رہے تھے کہ علاقے کے مقدموں اور معتبروں نے انہیں موقع پر آن پکڑا۔ سادہ کپڑوں میں ملبوس اشخاص نے درخت کاٹنا چھوڑ دیا اور ان معتبروں کو پیش کیا گیا۔ بادشاہ نے ان سے دریافت کیا کہ تمہیں درخت کٹنے کی خبر تو ہو گئی لیکن ایک انسان کی گردن کٹ گئی اور تم اس سے بے خبر رہے۔ میں اسے تسلیم کرنے کے لئے تیار نہیں۔ تین دن کے اندر اند ر قاتل کو پیش کرو ورنہ سزا میں تم قتل کر دیئے جاؤ گے۔ معتبروں کے جسم پر لرزہ طاری ہو گیا اور تیسرے دن کا سورج ابھی طلوع بھی نہ ہوا تھا کہ “قاتل شاہی دربار کے دروازے پر زنجیر و سلاسل میں جکڑے ہوئے حاضر تھے” عدل و انصاف کی اسی پاسداری کی وجہ سے برصغیر کا ہر دیانت دار مورخ شیر شاہ سوری کا نام ادب سے لیتا ہے۔
  16. ہماری آنکھ میں ٹھہرا ہوا پانی بتاتا ہے محبت کی تھی ہم نے اور اس کا مان رکھا ہے _______________________ بہت سے زخم جن کو مستقل مہمان رکھا ہے بدن کی قید میں کچھ درد کا سامان رکھا ہے کبھی لگتا ہے کہ میں آسمان کو چھو کے آئی ہوں کبھی لگتا ہے رستے میں کوئی طوفان رکھا ہے ہر اک لمحہ گماں کی دسترس میں کیا بتائیں ہم کہاں اُمید رکھی ہے کہاں ایمان رکھا ہے ہماری آنکھ میں ٹھہرا ہوا پانی بتاتا ہے محبت کی تھی ہم نے اور اس کا مان رکھا ہے میرے آباء کے گھر کو بیچ کر مجھ سے وہ کہتا ہے وہیں کمرہ پڑا ہے اور وہیں دالان رکھا ہے ہماری ہمتوں کی داد دے کر لوٹ جائے گا ہمارے سامنے جس غم نے سینہ تان رکھا ہے
  17. میری تصویر کےٹکڑے جلا دینا ، بھلا دینا میری ہستی کو تم بلکل مٹا دینا ، بھلا دینا میں تم کو یاد آؤں گر،سلگتی چاندنی شب میں تو اپنے گھر کے سب پردے گرا دینا ، بھلا دینا کوئی تم سے اگر پوچھے، جو وجہ_ دیدہ_ پرنم تو میری ذات کو مٹی بنا دینا ، بھلا دینا فقط تنہائیاں ہی اب ہیں میری آخری منزل تم اپنی زندگی کو رخ نیا دینا ، بھلا دینا کہاں تم اک صبح _ روشن، کہاں میں ڈوبتا تارہ مجھے منظر سے بلکل ہی ہٹا دینا ، بھلا دینا دسمبر کی رتوں میں جب، جبیں تر ہو پسینے سے تو آتش دان کو فورآ بجھا دینا، بھلا دینا کتاب_ زیست میں لکھو گی جب اک اور افسانہ میرے کردار کو چہرہ نیا دینا، بھلا دینا سکون _ دل کبھی جب مانگنے بیٹھو مصلے پر میرا دم بھی نکل جائے دعا دینا، بھلا دینا نہ پوری ہو سکے گی یہ تمھاری آخری خواہش، میرے بس میں نہیں تم کو بھلا دینا ، بھلا دینا یہ بکھرے بال،سوکھے لب،یہ کیا صورت بنا لی ہے؟ ..... کہا تھا ناں، بھلا دینا ، بھلا دینا ، بھلا دینا (شاعر : زوہیب حسن)
  18. How to Train Your Dragon: The Hidden World 2019 Unlock the secrets of the Dragon Eye and come face to face with more dragonsthan anyone has ever imagined as Hiccup, Toothless and the Dragon Riders soar to the edge of adventure. Hiccup and the gang join Gobber on a quest to find alegendary boneclad Dragon.
  19. تیرے بغیر کُچھ بھی نہیں لذتِ حیات منزل ھے مُجھ کو شامِ غریباں تیرے بغیر۔
  20. Animated Gif Image https://fundayforum.com/gallery/

    © https://fundayforum.com/gallery/

  • Recently Browsing   0 members

    No registered users viewing this page.

×
×
  • Create New...