Jump to content

Please Disable Your Adblocker. We have only advertisement way to pay our hosting and other expenses.  

Search the Community

Showing results for tags 'amjad islam amjad'.



More search options

  • Search By Tags

    Type tags separated by commas.
  • Search By Author

Content Type


Forums

  • Help Support
    • Announcement And Help
    • Funday Chatroom
  • Poetry
    • Shair-o-Shaa'eri
    • Famous Poet
  • Islam - اسلام
    • QURAN O TARJUMA قرآن و ترجمہ
    • AHADEES MUBARIK آحدیث مبارک
    • Ramazan ul Mubarik - رمضان المبارک
    • Deen O Duniya - دین و دنیا
  • Other Forums
    • Quizzes
    • Chit chat And Greetings
    • Urdu Adab
    • Entertainment
    • Common Rooms
  • Science, Arts & Culture
    • Education, Science & Technology
  • IPS Community Suite
    • IPS Community Suite 4.1
    • IPS Download
    • IPS Community Help/Support And Tutorials

Blogs

There are no results to display.

There are no results to display.

Categories

  • Premium Files
  • IPS Community Suite 4.3
    • Applications 4.3
    • Plugins 4.3
    • Themes 4.3
    • Language Packs 4.3
    • IPS Extras 4.3
  • IPS Community Suite 4
    • Applications
    • Plugins
    • Themes
    • Language Packs
    • IPS Extras
  • Books
    • Urdu Novels
    • Islamic
    • General Books
  • XenForo
    • Add-ons
    • Styles
    • Language Packs
    • Miscellaneous XML Files
  • Web Scripts
  • PC Softwares

Find results in...

Find results that contain...


Date Created

  • Start

    End


Last Updated

  • Start

    End


Filter by number of...

Joined

  • Start

    End


Group


Facebook ID


FB Page/Group URL


Bigo Live


Website URL


Instagram


Skype


Interests


Location


ZODIAC

Found 4 results

  1. Dil Hai Be-Khabar, Zara Hosla دلِ بے خبر ، ذرا حوصلہ نہیں مُستقِل کوئی مَرحلہ کوئی ایسا گھر بھی ھے شہر میں جہاں ھر مکین ھو مطمئن کوئی ایسا دن بھی کہیں پہ ھے جسے خوفِ آمدِ شب نہیں یہ جو گردبادِ زمان ھے یہ ازل سے ھے کوئی اب نہیں دلِ بے خبر ، ذرا حوصلہ نہیں مُستقِل کوئی مَرحلہ یہ جو خار ھیں تیرے پاؤں میں یہ جو زخم ھیں تیرے ھاتھ میں یہ جو خواب پھرتے ھیں دَر بہ دَر یہ جو بات اُلجھی ھے بات میں یہ جو لوگ بیٹھے ھیں جا بجا کسی اَن بَنے سے دیار میں سبھی ایک جیسے ھیں سر گراں غَمِ زندگی کے فشار میں یہ سراب ، یونہی سدا سے ھیں اِسی ریگزارِ حیات میں یہ جو رات ھے تیرے چار سُو نہیں صرف تیری ھی گھات میں دلِ بے خبر ، ذرا حوصلہ نہیں مُستقِل کوئی مَرحلہ تیرے سامنے وہ کتاب ھے جو بِکھر گئی ھے وَرَق وَرَق ھمیں اپنے حصّے کے وقت میں اِسے جَوڑنا ھے سَبق سَبق ھیں عبارتیں ذرا مُختلف مگر ایک اصلِ سوال ھے جو سمجھ سکو ، تو یہ زندگی کسی ھفت خواں کی مثال ھے دلِ بے خبر، ذرا حوصلہ نہیں مُستقِل کوئی مَرحلہ کیا عجب ، کہ کل کو یقیں بنے یہ جو مُضطرب سا خیال ھے کسی روشنی میں ھو مُنقَلِب کسی سرخوشی کا نَقِیب ھو یہ جو شب نُما سی ھے بے دِلی یہ جو زرد رُو سا مَلال ھے۔ دلِ بے خبر، ذرا حوصلہ دِلِ بے خبر ، ذرا حوصلہ امجد اسلام امجؔد
    book of heart balloon of love love of life
  2. waqas dar

    Yun Duniya Mai Huta Kab Hai

    Yun Duniya Mai Huta Kab Hai یوں دنیامیں ہوتاکب ہے جوبچھڑےوہ ملتاکب ہے آئینہ کیادیکھ سکےگا وہ صورت میں اُتراکب ہے بھولےسےتم آتوگئےہو یہ توبتاؤ جاناکب ہے دیواروں پردرج ہےکیاکیا دیکھنےوالا،پڑھتاکب ہے رہبرجس پرلےکےچلاہے یہ منزل کارستہ کب ہے کیسےاس کی شکل بنےگی ہم نےاس کودیکھاکب ہے عرض نیازعشق پہ بولے "ہم نےتم سےپوچھاکب ہے" سن لیتاہےبات کبھی تو چاندتمہارےجیساکب ہے عقل نےکیاکیاسمجھایابھی عشق کسی کی سنتاکب ہے کام توکشتی ہی آئےگی دوست کسی کادریاکب ہے آجائےوہ لوٹ کےامجؔد ایسابخت ہماراکب ہے ۔ امجداسلام امجد
  3. waqas dar

    Meri baat bech mai reh gai

    تیرے اِرد گِرد وہ شور تھا ، میری بات بیچ میں رہ گئی نہ میں کہ سکا نہ تُو سُن سکا ، مِیری بات بیچ میں رہ گئی میرے دل کو درد سے بھر گیا ، مجھے بے یقین سا کرگیا تیرا بات بات پہ ٹوکنا ، میری بات بیچ میں رہ گئی تیرے شہر میں میرے ھم سفر، وہ دُکھوں کا جمِّ غفیر تھا مجھے راستہ نہیں مل سکا ، میری بات بیچ میں رہ گئی وہ جو خواب تھے میرے سامنے، جو سراب تھے میرے سامنے میں اُنہی میں ایسے اُلجھ گیا ، میری بات بیچ میں رہ گئی عجب ایک چُپ سی لگی مجھے، اسی ایک پَل کے حِصار میں ھُوا جس گھڑی تیرا سامنا، میری بات بیچ میں رہ گئی کہیں بے کنار تھی خواھشیں، کہیں بے شمار تھی اُلجھنیں کہیں آنسوؤں کا ھجوم تھا ، میری بات بیچ میں رہ گئی تھا جو شور میری صداؤں کا، مِری نیم شب کی دعاؤں کا ہُوا مُلتفت جو میرا خدا ، میری بات بیچ میں رہ گئی تیری کھڑکیوں پہ جُھکے ھوئے، کئی پھول تھے ھمیں دیکھتے تیری چھت پہ چاند ٹھہر گیا ، میری بات بیچ میں رہ گئی میری زندگی میں جو لوگ تھے، مِرے آس پاس سے اُٹھ گئے میں تو رہ گیا اُنہیں روکتا ، مِری بات بیچ میں رہ گئی ِِتِری بے رخی کے حِصار میں، غم زندگی کے فشار میں میرا سارا وقت نکل گیا، مِری بات بیچ میں رہ گئی مجھے وھم تھا ترے سامنے، نہیں کھل سکے گی زباں میری سو حقیقتاً بھی وھی ھُوا، میری بات بیچ میں رہ گئی امجد اسلام امجد
  4. waqas dar

    Teri Aahat

    تیری آہٹ سلگتی دوپہر کو ایک پل میں شام کرتی ہے اترتی ہے سوادِ ہجر میں کچھہ اسطرح جیسے صدائے آشنا کوئی گھنے،گہرے ، اندھیرے جنگلوں کی بے یقینی میں رُخِ منزل دکھاتی روشنی کا کام کرتی ہے ! امجد اسلام امجد
×