Jump to content

Welcome to Fundayforum.com

Take a moment to join us, we are waiting for you.

News Ticker

Search the Community

Showing results for tags 'لگی'.



More search options

  • Search By Tags

    Type tags separated by commas.
  • Search By Author

Content Type


Forums

  • Help Support
    • Announcement And Help
    • Funday Chatroom
  • Poetry
    • Shair-o-Shaa'eri
    • Famous Poet
  • Islam - اسلام
    • QURAN O TARJUMA قرآن و ترجمہ
    • AHADEES MUBARIK آحدیث مبارک
    • Ramazan ul Mubarik - رمضان المبارک
    • Deen O Duniya - دین و دنیا
  • Other Forums
    • Quizzes
    • Chitchat and Greetings
    • Urdu Adab
    • Entertainment
    • Common Rooms
  • Music, Movies, and Dramas
    • Movies Song And Tv.Series
  • Science, Arts & Culture
    • Education, Science & Technology
  • IPS Community Suite
    • IPS Community Suite 4.1
    • IPS Download
    • IPS Community Help/Support And Tutorials

Blogs

There are no results to display.

There are no results to display.

Categories

  • Books
    • Urdu Novels
    • Islamic
    • General Books
  • IPS Community Suite 4
    • Applications
    • Plugins
    • Themes
    • Language Packs
    • IPS Extras
  • IPS Community Suite 3.4
    • Applications
    • Hooks/BBCodes
    • Themes/Skins
    • Language Packs
    • Miscellaneous XML Files
  • XenForo
    • Add-ons
    • Styles
    • Language Packs
    • Miscellaneous XML Files
  • Web Scripts
  • PC Softwares

Categories

  • Islam
  • General Knowledge
  • Sports

Found 3 results

  1. اُداسی مُشتہر ہونے لگی ہے بھرے گھر میں تماشا ہو گئی ہُوں میں کن لوگوں میں ہوں کیا لکھ رہی ہُوں سُخن کرنے سے پہلے سوچتی ہُوں اُداسی مُشتہر ہونے لگی ہے بھرے گھر میں تماشا ہو گئی ہُوں کبھی یہ خواب میرا راستہ تھے مگر اب تو اذاں تک جاگتی ہُوں بس اِک حرفِ یقین کی آرزو میں مَیں کتنے لفظ لکھتی جا رہی ہُوں مَیں اپنی عُمر کی قیمت پہ تیرے ہر ایک دُکھ کا ازالہ ہو رہی ہُوں غضب کا خوف ہے تنہائیوں میں اب اپنے آپ سے ڈرنے لگی ہُوں نوشی گیلانی
  2. ﭨﮭﻮﮐﺮ ﻟﮕﯽ ﺗﻮ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ﺍﭘﻨﮯ ﻣﻘﺪﺭ ﭘﮧ ﺟﺎ ﮔﺮﺍ ﭘﮭﺮ ﯾﻮﮞ ﮨﻮﺍ ﮐﮧ۔۔۔۔۔۔۔۔ ﺁﺋﯿﻨﮧ ﭘﺘﮭﺮ ﭘﮧ ﺟﺎ ﮔﺮﺍ ﺍﺣﺴﺎﺱِ ﻓﺮﺽ ﺟﺐ ﺑﮭﯽ ﮨﻮﺍ ﻧﯿﻨﺪ ﺁ ﮔﺌﯽ ﭼﻠﻨﺎ ﺗﮭﺎ ﭘﻞِ ﺻﺮﺍﻁ ﭘﺮ۔۔۔۔۔۔۔ ﺑﺴﺘﺮ ﭘﮧ ﺟﺎ ﮔﺮﺍ ﺑﺎﺯﯼ ﻣﺤﺒﺘﻮﮞ ﮐﯽ ﺟﮩﺎﻟﺖ ﻧﮯ ﺟﯿﺖ ﻟﯽ ﻭﮦ ﺑﻦ ﮔﯿﺎ ﺧﻄﯿﺐ ﺟﻮ۔۔۔۔۔۔۔۔ ﻣﻤﺒﺮ ﭘﮧ ﺟﺎ ﮔﺮﺍ ﺧﻮﺷﺒﻮ ﻗﺼﻮﺭ ﻭﺍﺭ ﻧﮩﯿﮟ ﺍﺱ ﮐﻮ ﭼﮭﻮﮌ ﺩﻭ ﻣﯿﮟ ﭘﮭﻮﻝ ﺗﻮﮌﺗﮯ ﮨﻮﺋﮯ۔۔۔۔۔ ﺧﻨﺠﺮ ﭘﮧ ﺟﺎ ﮔﺮﺍ ﺻﺤﺮﺍﺅﮞ ﻣﯿﮟ ﻟﺌﮯ ﭘﮭﺮﮮ ﭘﺎﻧﯽ ﮐﯽ ﺟﺴﺘﺠﻮ ﺟﺐ ﭘﯿﺎﺱ ﻣﺮ ﮔﺌﯽ ﺗﻮ۔۔۔۔۔۔۔ ﺳﻤﻨﺪﺭ ﭘﮧ ﺟﺎ ﮔﺮﺍ ﺷﮩﺮِ ﻃﻠﺐ ﻣﯿﮟ ﺗﮭﯽ ﺍﺗﻨﯽ ﺍﻭﻗﺎﺕ ﻣﯿﺮﯼ ﺳﮑﮯ ﮐﯽ ﻃﺮﺡ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ﺩﺷﺖِ ﮔﺪﺍﮔﺮ ﭘﮧ ﺟﺎ ﮔﺮﺍ ﻗﺎﻧﻮﻥ ﻧﮯ ﺟﻮ ﺩﮬﻮ ﺩﯾﺎ ﻣﺠﺮﻡ ﮐﯽ ﺁﻧﮑﮫ ﺳﮯ ﻭﮦ ﺩﺍﻍ ﺑﮯ ﮔﻨﺎﮦ ﮐﯽ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ﭼﺎﺩﺭ ﭘﮧ ﺟﺎ ﮔﺮﺍ ﺳﺐ ﻟﻮﮒ ﺑﮯ ﻭﻓﺎﺋﯽ ﮐﯽ ﺧﻨﺪﻕ ﻣﯿﮟ ﺟﺎ ﭼﮭﭙﮯ ﻣﻠﺒﮧ ﻣﺤﺒﺖ ﮐﺎ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ﻣﺤﺴﻦ ﭘﮧ ﺟﺎ ﮔﺮﺍ محسن نقوی
  3. پیاس لگی تھی غضب کی مگر پانی میں زہر تھا پیتے تو مر جاتے اور نہ پیتے تو بھی مر جاتے بس یہی دو مسئلے،زندگی بھر نہ حل ہوئے نہ نیند پوری ہوئی ،نہ خواب مکمل ہوئے وقت نے کہا .... کاش تھوڑا سا صبر ہوتا صبر نے کہا .... کاش تھوڑا سا وقت ہوتا صبح صبح اٹھنا پڑتا ہے کمانے کے لیے صاحب آرام کمانے نکلتا ہوں آرام چھوڑ کر ہنر" سڑکوں پر تماشا کرتا ہے اور "قسمت" محلات میں راج کرتی ہے" عجیب سوداگر ہے یہ وقت بھی جوانی کا لالچ دے کر بچپن لے گیا اب امیری کا لالچ دے کر جوانی بھی لے جائیگا لوٹ آتا ہوں واپس گھر کی طرف ...ہر روز تھکا ہارا آج تک سمجھ نہیں آیا جینے کے کام کرتا ہوں یا کام کرنے کے لیے جیتا ہوں تھک گیا ہوں تیری نوکری سے اے زندگی مناسب ہو گا میرا حساب کر دے بھری جیب نے 'دنیا' کی پہچان کرائی اور خالی جیب نے 'اپنوں' کی ہنسنے کی خواہش نہ ہو تو بھی ہنسنا پڑتا ہے کوئی جب پوچھے کیسے ہو....؟ تو "مزے میں ہوں" کہنا پڑتا ہے یہ زندگی کا تھیٹر ہے دوستو یہاں ہر اک کو ڈرامہ کرنا پڑتا ہے ماچس کی ضرورت یہاں نہیں پڑتی !.....یہاں آدمی آدمی سے جلتا ہے
×