Jump to content
Search In
  • More options...
Find results that contain...
Find results in...

Welcome to Fundayforum.com

Take a moment to join us, we are waiting for you.

Search the Community

Showing results for tags 'یہاں'.



More search options

  • Search By Tags

    Type tags separated by commas.
  • Search By Author

Content Type


Forums

  • Help Support
    • Announcement And Help
    • Funday Chatroom
  • Poetry
    • Shair-o-Shaa'eri
    • Famous Poet
  • Islam - اسلام
    • QURAN O TARJUMA قرآن و ترجمہ
    • AHADEES MUBARIK آحدیث مبارک
    • Ramazan ul Mubarik - رمضان المبارک
    • Deen O Duniya - دین و دنیا
  • Other Forums
    • Quizzes
    • Chitchat and Greetings
    • Urdu Adab
    • Entertainment
    • Common Rooms
  • Science, Arts & Culture
    • Education, Science & Technology
  • IPS Community Suite
    • IPS Community Suite 4.1
    • IPS Download
    • IPS Community Help/Support And Tutorials

Blogs

There are no results to display.

There are no results to display.

Categories

  • IPS Community Suite 4.3
    • Applications 4.3
    • Plugins 4.3
    • Themes 4.3
    • Language Packs 4.3
    • IPS Extras 4.3
  • IPS Community Suite 4
    • Applications
    • Plugins
    • Themes
    • Language Packs
    • IPS Extras
  • Books
    • Urdu Novels
    • Islamic
    • General Books
  • XenForo
    • Add-ons
    • Styles
    • Language Packs
    • Miscellaneous XML Files
  • Web Scripts
  • PC Softwares

Find results in...

Find results that contain...


Date Created

  • Start

    End


Last Updated

  • Start

    End


Filter by number of...

Joined

  • Start

    End


Group


Facebook ID


FB Page/Group URL


Bigo Live


Website URL


Instagram


Skype


Location


Interests

Found 3 results

  1. کوئی نالہ یہاں رَسا نہ ہُوا اشک بھی حرفِ مُدّعا نہ ہُوا تلخی درد ہی مقدّر تھی جامِ عشرت ہمیں عطا نہ ہُوا ماہتابی نگاہ والوں سے دل کے داغوں کا سامنا نہ ہُوا آپ رسمِ جفا کے قائل ہیں میں اسیرِ غمِ وفا نہ ہوا وہ شہنشہ نہیں، بھکاری ہے جو فقیروں کا آسرا نہ ہُوا رہزن عقل و ہوش دیوانہ عشق میں کوئی رہنما نہ ہُوا ڈوبنے کا خیال تھا ساغرؔ ہائے ساحل پہ ناخُدا نہ ہُوا (ساغر صدیقی)
  2. ﯾﮩﺎﮞ ﺳﺐ ﺳﮯ ﺍﻟﮓ ﺳﺐ ﺳﮯ ﺟﺪﺍ ﮨﻮﻧﺎ ﺗﮭﺎ ﻣﺠﮫ ﮐﻮ ﻣﮕﺮ ﮐﯿﺎ ﮨﻮ ﮔﯿﺎ ﮨﻮﮞ، ﺍﻭﺭ، ﮐﯿﺎ ﮨﻮﻧﺎ ﺗﮭﺎ ﻣﺠﮫ ﮐﻮ ﺍﺑﮭﯽ ﺍﮎ ﻟﮩﺮ ﺗﮭﯽ ﺟﺲ ﮐﻮ ﮔﺰﺭﻧﺎ ﺗﮭﺎ ﺳﺮﻭﮞ ﺳﮯ ﺍﺑﮭﯽ ﺍﮎ ﻟﻔﻆ ﺗﮭﺎ ﻣﯿﮟ، ﺍﻭﺭ، ﺍﺩﺍ ﮨﻮﻧﺎ ﺗﮭﺎ ﻣﺠﮫ ﮐﻮ ﭘﮭﺮ ﺍﺱ ﮐﻮ ﮈﮬﻮﻧﮉﻧﮯ ﻣﯿﮟ ﻋﻤﺮ ﺳﺎﺭﯼ ﺑﯿﺖ ﺟﺎﺗﯽ ﮐﻮﺋﯽ ﺍﭘﻨﯽ ﮨﯽ ﮔﻢ ﮔﺸﺘﮧ ﺻﺪﺍ ﮨﻮﻧﺎ ﺗﮭﺎ ﻣﺠﮫ ﮐﻮ ﭘﺴﻨﺪ ﺁﯾﺎ ﮐﺴﯽ ﮐﻮ ﻣﯿﺮﺍ ﺁﻧﺪﮬﯽ ﺑﻦ ﮐﮯ ﺍﭨﮭﻨﺎ ﮐﺴﯽ ﮐﯽ ﺭﺍﺋﮯ ﻣﯿﮟ ﺑﺎﺩِ ﺻﺒﺎ ﮨﻮﻧﺎ ﺗﮭﺎ ﻣﺠﮫ ﮐﻮ ﻭﮨﺎﮞ ﺳﮯ ﺑﮭﯽ ﮔﺰﺭ ﺁﯾﺎ ﮨﻮﮞ ﺧﺎﻣﻮﺷﯽ ﺳﮯ ﺍﺏ ﮐﮯ ﺟﮩﺎﮞ ﺍﮎ ﺷﻮﺭ ﮐﯽ ﺻﻮﺭﺕ ﺑﭙﺎ ﮨﻮﻧﺎ ﺗﮭﺎ ﻣﺠﮫ ﮐﻮ ﺩﺭ ﻭ ﺩﯾﻮﺍﺭ ﺳﮯ ﺍﺗﻨﯽ ﻣﺤﺒﺖ ﮐﺲ ﻟﯿﮯ ﺗﮭﯽ ﺍﮔﺮ ﺍﺱ ﻗﯿﺪ ﺧﺎﻧﮯ ﺳﮯ ﺭﮨﺎ ﮨﻮﻧﺎ ﺗﮭﺎ ﻣﺠﮫ ﮐﻮ ﻣﯿﮟ ﺍﭘﻨﯽ ﺭﺍﮐﮫ ﺳﮯ ﺑﮯ ﺷﮏ ﺩﻭﺑﺎﺭﮦ ﺳﺮ ﺍﭨﮭﺎﺗﺎ ﻣﮕﺮ ﺍﮎ ﺑﺎﺭ ﺗﻮ ﺟﻞ ﮐﺮ ﻓﻨﺎ ﮨﻮﻧﺎ ﺗﮭﺎ ﻣﺠﮫ ﮐﻮ ﻣﯿﮟ ﺍﻧﺪﺭ ﺳﮯ ﮐﮩﯿﮟ ﺗﺒﺪﯾﻞ ﮨﻮﻧﺎ ﭼﺎﮨﺘﺎ ﺗﮭﺎ ﭘﺮﺍﻧﯽ ﮐﯿﻨﭽﻠﯽ ﻣﯿﮟ ﮨﯽ ﻧﯿﺎ ﮨﻮﻧﺎ ﺗﮭﺎ ﻣﺠﮫ ﮐﻮ ﻇﻔﺮ، ﻣﯿﮟ ﮨﻮ ﮔﯿﺎ ﮐﭽﮫ ﺍﻭﺭ، ﻭﺭﻧﮧ، ﺍﺻﻞ ﻣﯿﮟ ﺗﻮ ﺑﺮﺍ ﮨﻮﻧﺎ ﺗﮭﺎ ﻣﺠﮫ ﮐﻮ، ﯾﺎ ﺑﮭﻼ ﮨﻮﻧﺎ ﺗﮭﺎ ﻣﺠﮫ کو
  3. اے وصل کچھ یہاں نہ ہوا کچھ نہیں ہوا اس جسم کی میں جاں نہ ہوا کچھ نہیں ہوا تو آج میرے گھر میں جو مہماں ہے عید ہے تو گھر کا میزباں نہ ہوا کچھ نہیں ہوا کھولی تو ہے زبان مگر اس کی کیا بساط میں زہر کی دکاں نہ ہوا کچھ نہیں ہوا کیا ایک کاروبار تھا وہ ربط جسم و جاں کوئی بھی رائیگاں نہ ہوا کچھ نہیں ہوا کتنا جلا ہوا ہوں بس اب کیا بتاؤں میں عالم دھواں دھواں نہ ہوا کچھ نہیں ہوا دیکھا تھا جب کہ پہلے پہل اس نے آئینہ اس وقت میں وہاں نہ ہوا کچھ نہیں ہوا وہ اک جمال جلوہ فشاں ہے زمیں زمیں میں تا بہ آسماں نہ ہوا کچھ نہیں ہوا میں نے بس اک نگاہ میں طے کر لیا تجھے تو رنگ بیکراں نہ ہوا کچھ نہیں ہوا گم ہو کے جان تو مری آغوش ذات میں بے نام و بے نشاں نہ ہوا کچھ نہیں ہوا ہر کوئی درمیان ہے اے ماجرا فروش میں اپنے درمیاں نہ ہوا کچھ نہیں ہوا
×