Jump to content

Welcome to Fundayforum.com

Take a moment to join us, we are waiting for you.

News Ticker

Search the Community

Showing results for tags 'ﻣﺮﮮ'.



More search options

  • Search By Tags

    Type tags separated by commas.
  • Search By Author

Content Type


Forums

  • Help Support
    • Announcement And Help
    • Funday Chatroom
  • Poetry
    • Shair-o-Shaa'eri
    • Famous Poet
  • Islam - اسلام
    • QURAN O TARJUMA قرآن و ترجمہ
    • AHADEES MUBARIK آحدیث مبارک
    • Ramazan ul Mubarik - رمضان المبارک
    • Deen O Duniya - دین و دنیا
  • Other Forums
    • Quizzes
    • Chitchat and Greetings
    • Urdu Adab
    • Entertainment
    • Common Rooms
  • Music, Movies, and Dramas
    • Movies Song And Tv.Series
  • Science, Arts & Culture
    • Education, Science & Technology
  • IPS Community Suite
    • IPS Community Suite 4.1
    • IPS Download
    • IPS Community Help/Support And Tutorials

Blogs

There are no results to display.

There are no results to display.

Categories

  • Books
    • Urdu Novels
    • Islamic
    • General Books
  • IPS Community Suite 4
    • Applications
    • Plugins
    • Themes
    • Language Packs
    • IPS Extras
  • IPS Community Suite 3.4
    • Applications
    • Hooks/BBCodes
    • Themes/Skins
    • Language Packs
    • Miscellaneous XML Files
  • XenForo
    • Add-ons
    • Styles
    • Language Packs
    • Miscellaneous XML Files
  • Web Scripts
  • PC Softwares

Categories

  • Islam
  • General Knowledge
  • Sports

Found 5 results

  1. وہ گھر بتاتے ہوئے ڈر گئی مرے بارے پھر آج اُس نے انگوٹھی کہیں چھپا لی ہے پرانی ڈائری اک، آج شب نکالی ہے اسے پڑھا ہے تری یاد بھی منا لی ہے لگا چکا ہے ستاروں کو آج باتوں میں وہ تیری بات ترے چاند نے گھما لی ہے تُو اپنی تلخ زباں اس پہ جھاڑتا کیوں ہے؟ ارے یہ ماں ہے، بہت پیار کرنے والی ہے فقیر لوگ عجب بادشاہ ہوتے ہیں کہ کائنات ہے مٹھی میں، جیب خالی ہے وہ گھر بتاتے ہوئے ڈر گئی مرے بارے پھر آج اُس نے انگوٹھی کہیں چھپا لی ہے یہ تم سدا کے لئے اب بچھڑ رہے ہو کیا؟ نہیں؟ تو پھر مِری تصویر کیوں بنا لی ہے؟
  2. اپنی تنہائی مِرے نام پہ آباد کرے کون ہوگا جو مُجھے اُس کی طرح یاد کرے دل عجب شہر کہ جس پر بھی کھُلا در اِس کا وہ مُسافر اِسے ہر سمت سے برباد کرے اپنے قاتل کی ذہانت سے پریشان ہُوں میں روز اِک موت نئے طرز کی ایجاد کرے اتنا حیراں ہو مِری بے طلبی کے آگے وا قفس میں کوئی در خود میرا صیّاد کرے سلبِ بینائی کے احکام ملے ہیں جو کبھی روشنی چُھونے کی خواہش کوئی شب زاد کرے سوچ رکھنا، بھی جرائم میں ہے شامل اب تو وہی معصوم ہے، ہربات پہ جو صاد کرے جب لہو بول پڑے اُس کی گواہی کے خلاف قاضی شہر کچھ اِس بات میں ارشاد کرے اُس کی مُٹّھی میں بہت روز رہا میرا وجود میرے ساحر سے کہو اب مجھے آزاد کرے
  3. مرے پہلو میں رہ کر بھی کہیں رُوپوش ہو جانا مجھے پھر دیکھنا اور دیکھ کر خاموش ہو جانا قسم ہے چشمِ ذیبا کی مجھے بھولے نہیں بھولا تجھے کلیوں کا ایسے دیکھ کر مدہوش ہو جانا تجھے یہ شہر والے پھر مرے بارے میں پوچھیں گے نظر سے مسکرانا اور پھر خاموش ہو جانا زمانہ سانس بھی لینے نہیں دیتا ہمیں لیکن ہمارے واسطے تم چین کی آغوش ہو جانا نہ مجھ میں وصفِ موسیٰ تھے نہ میں محوِ تکلم تھا مرا بنتا نہیں تھا اس طرح بے ہوش ہو جانا مرے زخموں مرے نالوں کا اکلوتا محافظ ہے مرے شانوں پہ تیرے ہجر کا بَردوش ہو جانا سو اب اس نازنیں کی عادتوں میں یہ بھی شامل ہے چمن میں رات کر لینا، وہیں گُل پوش ہو جانا
  4. نہ ہوئی گر مرے مرنے سے تسلّی نہ سہی امتحاں اور بھی باقی ہو تو یہ بھی نہ سہی خار خارِ المِ حسرتِ دیدار تو ہے شوق گلچینِ گلستانِ تسلّی نہ سہی مے پرستاں خمِ مے منہ سے لگائے ہی بنے ایک دن گر نہ ہوا بزم میں ساقی نہ سہی نفسِ قیس کہ ہے چشم و چراغِ صحرا گر نہیں شمعِ سیہ خانۂ لیلی نہ سہی ایک ہنگامے پہ موقوف ہے گھر کی رونق نوحۂ غم ہی سہی نغمۂ شادی نہ سہی نہ ستائش کی تمنّا نہ صلے کی پروا گر نہیں ہیں مرے اشعار میں معنی؟ نہ سہی عشرتِ صحبتِ خوباں ہی غنیمت سمجھو نہ ہوئی غالب اگر عمرِ طبیعی نہ سہی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
  5. ﺗﻢ ﻣﺮﮮ ﭘﺎ ﺱ ﺭﮨﻮ ﻣﯿﺮﮮ ﻗﺎﺗﻞ ، ﻣﺮﮮ ﺩِﻟﺪﺍﺭ،ﻣﺮﮮ ﭘﺎﺱ ﺭﮨﻮ ﺟﺲ ﮔﮭﮍﯼ ﺭﺍﺕ ﭼﻠﮯ، ﺁﺳﻤﺎﻧﻮﮞ ﮐﺎ ﻟﮩﻮ ﭘﯽ ﮐﮯ ﺳﯿﮧ ﺭﺍﺕ ﭼﻠﮯ ﻣﺮﮨﻢِ ﻣُﺸﮏ ﻟﺌﮯ، ﻧﺸﺘﺮِﺍﻟﻤﺎﺱ ﻟﺌﮯ ﺑَﯿﻦ ﮐﺮﺗﯽ ﮨﻮﺋﯽ، ﮨﻨﺴﺘﯽ ﮨُﻮﺋﯽ ، ﮔﺎﺗﯽ ﻧﮑﻠﮯ ﺩﺭﺩ ﮐﮯ ﮐﺎﺳﻨﯽ ﭘﺎﺯﯾﺐ ﺑﺠﺎﺗﯽ ﻧﮑﻠﮯ ﺟﺲ ﮔﮭﮍﯼ ﺳﯿﻨﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﮈُﻭﺑﮯ ﮨُﻮﺋﮯ ﺩﻝ ﺁﺳﺘﯿﻨﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﻧﮩﺎﮞ ﮨﺎﺗﮭﻮﮞ ﮐﯽ ﺭﮦ ﺗﮑﻨﮯ ﻟﮕﯿﮟ ﺁﺱ ﻟﺌﮯ ﺍﻭﺭ ﺑﭽﻮﮞ ﮐﮯ ﺑﻠﮑﻨﮯ ﮐﯽ ﻃﺮﺡ ﻗُﻠﻘُﻞ ﻣﮯ ﺑﮩﺮِ ﻧﺎﺳﻮﺩﮔﯽ ﻣﭽﻠﮯ ﺗﻮ ﻣﻨﺎﺋﮯ ﻧﮧ ﻣَﻨﮯ ﺟﺐ ﮐﻮﺋﯽ ﺑﺎﺕ ﺑﻨﺎﺋﮯ ﻧﮧ ﺑﻨﮯ ﺟﺐ ﻧﮧ ﮐﻮﺋﯽ ﺑﺎﺕ ﭼﻠﮯ ﺟﺲ ﮔﮭﮍﯼ ﺭﺍﺕ ﭼﻠﮯ ﺟﺲ ﮔﮭﮍﯼ ﻣﺎﺗﻤﯽ ، ﺳُﻨﺴﺎﻥ، ﺳﯿﮧ ﺭﺍﺕ ﭼﻠﮯ ﭘﺎﺱ ﺭﮨﻮ ﻣﯿﺮﮮ ﻗﺎﺗﻞ، ﻣﺮﮮ ﺩﻟِﺪﺍﺭ ﻣﺮﮮ ﭘﺎﺱ ﺭﮨﻮ . ﻓﯿﺾ
×