Jump to content
Search In
  • More options...
Find results that contain...
Find results in...

Search the Community

Showing results for tags 'ajnabi'.



More search options

  • Search By Tags

    Type tags separated by commas.
  • Search By Author

Content Type


Forums

  • Help Support
    • Announcement And Help
    • Funday Chatroom
  • Poetry
    • Shair o Shairy
    • Famous Poet
  • Islam - اسلام
    • QURAN O TARJUMA قرآن و ترجمہ
    • AHADEES MUBARIK آحدیث مبارک
    • Ramazan ul Mubarik - رمضان المبارک
    • Deen O Duniya - دین و دنیا
  • Other Forums
    • Quizzes
    • Movies and Stars
    • Chit chat And Greetings
    • Urdu Adab
    • Entertainment
    • Common Rooms
  • Science, Arts & Culture
    • Education, Science & Technology
  • IPS Community Suite
    • IPS Community Suite 4.1
    • IPS Download
    • IPS Community Help/Support And Tutorials

Blogs

There are no results to display.

There are no results to display.

Categories

  • IPS Community Suite 4.4
    • Applications 4.4
    • Plugin 4.4
    • Themes/Ranks
    • IPS Languages 4.4
  • IPS Community Suite 4.3
    • Applications 4.3
    • Plugins 4.3
    • Themes 4.3
    • Language Packs 4.3
    • IPS Extras 4.3
  • IPS Community Suite 4
    • Applications
    • Plugins
    • Themes
    • Language Packs
    • IPS Extras
  • Books
    • Urdu Novels
    • Islamic
    • General Books
  • XenForo
    • Add-ons
    • Styles
    • Language Packs
    • Miscellaneous XML Files
  • Web Scripts
  • PC Softwares
  • Extras

Categories

  • Islamic
  • WhatsApp Status
  • Funny Videos
  • Movies
  • Songs
  • Seasons
  • Online Channels

Find results in...

Find results that contain...


Date Created

  • Start

    End


Last Updated

  • Start

    End


Filter by number of...

Joined

  • Start

    End


Group


Facebook ID


FB Page/Group URL


Bigo Live


Website URL


Instagram


Skype


Interests


Location


ZODIAC

Found 9 results

  1. Wo Ajnabi sy chahre wo khuwab khaime rawan rawan sy Wo Ajnabi sy chahre wo khuwab khaime rawan rawan sy وہ اجنبی سے چہرے وہ خواب خیمے رواں رواں سے بسے ہوۓ ہیں ابھی نظر میں سبھی مناظر دھواں دھواں سے یہ عکس داغ شکست پیماں وہ رنگ زخم خلوص یاراں میں غمگساروں میں سوچتا ہوں کہ بات چھیڑوں کہاں کہاں سے؟ یہ سنگریزے عداوتوں کے وہ آبگینے سخاوتوں کے دل مسافر قبول کر لے، ملا ہے جو کچھ جہاں جہاں سے بچھڑنے والے بچھڑ چلا تھا تو نسبتیں بھی گنوا کے جاتا ترے لیے شہر بھر میں اب بھی میں زخم کھاؤں زباں زباں سے مری محبت کے واہموں سے پرے تھا تیرا وجود ورنہ جہاں جہاں تیرا عکس ٹھہرا میں ہو کے آیا وہاں وہاں سے تو ہمنفس ہے نہ ہمسفر ہے کسے خبر ہے کہ تو کدھر ہے؟ میں دستکیں دے کے پوچھ بیٹھا مکیں مکیں سے مکاں مکاں سے ابھی محبت کا اسم اعظم لبوں پہ رہنے دے جان محسن! ابھی ہے چاہت نئی نئی سی، ابھی ہیں جذبے جواں جواں سے محسن نقوی
  2. ﺳﻨﻮ ﺍﮮ ﺍﺟﻨﺒﯽ ﺧﻮﺍﮨﺶ... ﺍﮔﺮ ﺍﺏ ﺑﻬﯽ ﺍِﺭﺍﺩﮦ ﮨﮯ.... ﺍِﺳﯽ ﺭﺳﺘﮯ ﭘﮧ ﭼﻠﻨﮯ ﮐﺎ... ﺍِﺳﯽ ﺁﺗﺶ ﻣﯿﮟ ﺟﻠﻨﮯ ﮐﺎ.... ﺗﻮ ﭼُﭙﮑﮯ ﺳﮯ ﭼﻠﮯ ﺁﺅ... ﻣﯿﺮﯼ ﺩﻧﯿﺎ ﺣﺎﺿﺮ ﮨﮯ.... ﺗﻤﮩﺎﺭﮮ ﮨﯽ ﻟﯿﮯ ﺟﺎﻧﺎﮞ..... ﭼﻠﻮ ﯾﮧ ﻋﮩﺪ ﮐﺮﺗﮯ ﮨﯿﮟ... ﻣﺼﯿﺒﺖ ﮨﻮ ﮐﮧ ﺭﺍﺣﺖ ﮨﻮ.... ﺳﺒﻬﯽ ﮐﭽﻬﮧ ﺳﺎﺗﮫ ﺟﻬﯿﻠﯿﮟ ﮔﮯ... ﺷﺐِ ﻇﻠﻤﺖ ﻣﻘﺪﺭ ﮨﻮ... ﮐﮧ ﺗﭙﺘﯽ ﺩﻫﻮﭖ ﺳﺮ ﭘﺮ ﮨﻮ.... ﻧﮧ ﮨﯽ ﮨﻢ ﺳﺎﺗﮫ ﭼﻬﻮﮌﯾﮟ ﮔﮯ..... ﻧﮧ ﮨﯽ ﮨﻢ ﮨﺎﺗﮫ ﭼﻬﻮﮌﯾﮟ ﮔﮯ
  3. Hareem Naz

    Ajnabi

    نہ سماعتوں میں تپش گُھلے نہ نظر کو وقفِ عذاب کر جو سنائی دے اُسے چپ سِکھا جو دکھائی دے اُسے خواب کر ابھی منتشر نہ ہو اجنبی، نہ وصال رُت کے کرم جَتا! جو تری تلاش میں گُم ہوئے کبھی اُن دنوں کا حساب کر مرے صبر پر کوئی اجر کیا مری دو پہر پہ یہ ابر کیوں؟ مجھے اوڑھنے دے اذیتیں مری عادتیں نہ خراب کر کہیں آبلوں کے بھنور بجیں کہیں دھوپ روپ بدن سجیں کبھی دل کو تِھل کا مزاج دے کبھی چشمِ تِر کو چناب کر یہ ہُجومِ شہرِ ستمگراں نہ سُنے گا تیری صدا کبھی، مری حسرتوں کو سُخن سُنا مری خواہشوں سے خطاب کر یہ جُلوسِ فصلِ بہار ہے تہی دست، یار، سجا اِسے کوئی اشک پھر سے شرر بنا کوئی زخم پھر سے گلاب
  4. Chalo Ik Basar Phir Sy Ajnabi Bann Jaen Hm Donoo Nah Mein Tm Say Koi Umeed Rakhoon Dilnawazi Ki Na Tm Meri Taraf Dekho Galaat ANdaaz Nazroon Sy Na Meray Dil Ki Dharkan Larkharaey Meri Baton Sy Na Zaher Ho Tmhari Kashmakash Ka Raaz Nazron Sy Tmhain Bhe Koi Uljhan Rookti Hai Paish Qadmi Sy Mujhay Bhe Loog Kehtay Hain K Ye Jalwaay Paraaey Hein Meray Hamraah Bhe Ruswaiyan Hain Meray Maazzi Ki Tmharay Saath Bhe Gozri Hoe Raton K Saaaey Hain Ta”Aruf Roug Ho Jaey Tu Usko Bhoolna Behtar Ta”Aluq Roug Ban Jaey Tu Usko Toorna Acha Wo Afsana Jisay Anjaam Taak Lanaa Nah Hoo Mumkin Uasay Ik Khoobsorat Mour Day K Bhooolnaa A6ha Chalo Ik Baar Phir Se Ajnabi Bun Jaen Hm Dono.........
  5. Chalo Ik Baar Phir Sy Ajnabi Bann Jaen Hm Donoo Nah Mein Tm Say Koi Umeed Rakhoon Dilnawazi Ki Na Tm Meri Taraf Dekho Galaat ANdaaz Nazroon Sy Na Meray Dil Ki Dharkan Larkharaey Meri Baton Sy Na Zaher Ho Tmhari Kashmakash Ka Raaz Nazron Sy Tmhain Bhe Koi Uljhan Rookti Hai Paish Qadmi Sy Mujhay Bhe Loog Kehtay Hain K Ye Jalwaay Paraaey Hein Meray Hamraah Bhe Ruswaiyan Hain Meray Maazzi Ki Tmharay Saath Bhe Gozri Hoe Raton K Saaaey Hain Ta”Aruf Roug Ho Jaey Tu Usko Bhoolna Behtar Ta”Aluq Roug Ban Jaey Tu Usko Toorna Acha Wo Afsana Jisay Anjaam Taak Lanaa Nah Hoo Mumkin Uasay Ik Khoobsorat Mour Day K Bhooolnaa A6ha Chalo Ik Baar Phir Se Ajnabi Bun Jaen Hm Dono.........
  6. چلو اک بار پھر سے اجنبی بن جائیں ہم دونوں نہ میں تم سے کوئی امید رکھوں دل نوازی کی نہ تم میری طرف دیکھو غلط انداز نظروں سے نہ میرے دل کی دھڑکن لڑکھڑائے میری باتوں سے نہ ظاہر ہو تمہاری کشمکش کا راز نظروں سے تمہیں بھی کوئی الجھن روکتی ہے پیش قدمی سے مجھے بھی لوگ کہتے ہیں کہ یہ جلوے پرائے ہیں مرے ہمراہ بھی رسوائیاں ہیں میرے ماضی کی تمہارے ساتھ بھی گزری ہوئی راتوں کے سائے ہیں تعارف روگ بن جائے تو ا س کا بھولنا بہتر تعلق بوجھ بن جائے تو اس کا توڑنا اچھا وہ افسانہ جسے انجام تک لانا ناممکن ہو اسے ایک خوبصورت موڑ دیکر چھوڑنا اچھا چلو اک بار پھر سے اجنبی بن جائیں ہم دونوں ساحر لدھیانوی
  7. یہ جو قربتوں کا خمار ہے مرے اجنبی، مرے آشنا تو مصر کے آئینہ خانے میں ترے خال و خد کے سوا مجھے کہیں اور کچھ نہ دکھائی دے یہ عذابِ طوق و رسن میرا کسی قصرِ خواب و خیال تک مرے ذہن کو نہ رسائی دے مجھے راستہ نہ سجھائی دے تو یہ چھت جو اپنے سروں پہ ہے یہ جو بام و در کے حصار ہیں یہ جو رت جگوں کی بہار ہے یہ جو قربتوں کا خمار ہے تو اِسی پہ کیا شبِ عمر کی، سبھی راحتوں کا مدار ہے ؟ مرے اجنبی، مرے آشنا کہ دھواں دھواں سی جو ہے فضا یہ تھمی تھمی سی جو ہے ہوا یہ جو شور ہے دلِ زار کا کبھی اِس پہ غور کیا ہے کیا ؟ مرے اجنبی، مرے آشنا کبھی کاش تجھ سے میں کہہ سکوں کہ یہ ساعتیں ہیں کٹھن بہت مرے زخم جاں کے طبیب آ مرے تن بدن سے بھی ربط رکھ مری روح کے بھی قریب آ مرے اجنبی، مرے آشنا
  8. ﻭﮦ ﺍﺟﻨﺒﯽ ﺳﮯ ﭼﮩﺮﮮ ﻭﮦ ﺧﻮﺍﺏ ﺧﯿﻤﮯ ﺭﻭﺍﮞ ﺭﻭﺍﮞ ﺳﮯ ﺑﺴﮯ ﮨﻮﮰ ﮨﯿﮟ ﺍﺑﮭﯽ ﻧﻈﺮ ﻣﯿﮟ ﺳﺒﮭﯽ ﻣﻨﺎﻇﺮ ﺩﮬﻮﺍﮞ ﺩﮬﻮﺍﮞ ﺳﮯ ﯾﮧ ﻋﮑﺲ ﺩﺍﻍ ﺷﮑﺴﺖ ﭘﯿﻤﺎﮞ ﻭﮦ ﺭﻧﮓ ﺯﺧﻢ ﺧﻠﻮﺹ ﯾﺎﺭﺍﮞ ﻣﯿﮟ ﻏﻤﮕﺴﺎﺭﻭﮞ ﻣﯿﮟ ﺳﻮﭼﺘﺎ ﮨﻮﮞ ﮐﮧ ﺑﺎﺕ ﭼﮭﯿﮍﻭﮞ ﮐﮩﺎﮞ ﮐﮩﺎﮞ ﺳﮯ؟ ﯾﮧ ﺳﻨﮕﺮﯾﺰﮮ ﻋﺪﺍﻭﺗﻮﮞ ﮐﮯ ﻭﮦ ﺁﺑﮕﯿﻨﮯ ﺳﺨﺎﻭﺗﻮﮞ ﮐﮯ ﺩﻝ ﻣﺴﺎﻓﺮ ﻗﺒﻮﻝ ﮐﺮ ﻟﮯ، ﻣﻼ ﮨﮯ ﺟﻮ ﮐﭽﮫ ﺟﮩﺎﮞ ﺟﮩﺎﮞ ﺳﮯ ﺑﭽﮭﮍﻧﮯ ﻭﺍﻟﮯ ﺑﭽﮭﮍ ﭼﻼ ﺗﮭﺎ ﺗﻮ ﻧﺴﺒﺘﯿﮟ ﺑﮭﯽ ﮔﻨﻮﺍ ﮐﮯ ﺟﺎﺗﺎ ﺗﺮﮮ ﻟﯿﮯ ﺷﮩﺮ ﺑﮭﺮ ﻣﯿﮟ ﺍﺏ ﺑﮭﯽ ﻣﯿﮟ ﺯﺧﻢ ﮐﮭﺎﺅﮞ ﺯﺑﺎﮞ ﺯﺑﺎﮞ ﺳﮯ ﻣﺮﯼ ﻣﺤﺒﺖ ﮐﮯ ﻭﺍﮨﻤﻮﮞ ﺳﮯ ﭘﺮﮮ ﺗﮭﺎ ﺗﯿﺮﺍ ﻭﺟﻮﺩ ﻭﺭﻧﮧ ﺟﮩﺎﮞ ﺟﮩﺎﮞ ﺗﯿﺮﺍ ﻋﮑﺲ ﭨﮭﮩﺮﺍ ﻣﯿﮟ ﮨﻮ ﮐﮯ ﺁﯾﺎ ﻭﮨﺎﮞ ﻭﮨﺎﮞ ﺳﮯ ﺗﻮ ﮨﻤﻨﻔﺲ ﮨﮯ ﻧﮧ ﮨﻤﺴﻔﺮ ﮨﮯ ﮐﺴﮯ ﺧﺒﺮ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺗﻮ ﮐﺪﮬﺮ ﮨﮯ؟ ﻣﯿﮟ ﺩﺳﺘﮑﯿﮟ ﺩﮮ ﮐﮯ ﭘﻮﭼﮫ ﺑﯿﭩﮭﺎ ﻣﮑﯿﮟ ﻣﮑﯿﮟ ﺳﮯ ﻣﮑﺎﮞ ﻣﮑﺎﮞ ﺳﮯ ﺍﺑﮭﯽ ﻣﺤﺒﺖ ﮐﺎ ﺍﺳﻢ ﺍﻋﻈﻢ ﻟﺒﻮﮞ ﭘﮧ ﺭﮨﻨﮯ ﺩﮮ ﺟﺎﻥ ﻣﺤﺴﻦ ! ﺍﺑﮭﯽ ﮨﮯ ﭼﺎﮨﺖ ﻧﺌﯽ ﻧﺌﯽ ﺳﯽ، ﺍﺑﮭﯽ ﮨﯿﮟ ﺟﺬﺑﮯ ﺟﻮﺍﮞ ﺟﻮﺍﮞ ﺳﮯ
×
×
  • Create New...