Jump to content

Search the Community

Showing results for tags 'ankhon'.



More search options

  • Search By Tags

    Type tags separated by commas.
  • Search By Author

Content Type


Forums

  • Help Support
    • Announcement And Help
    • Funday Chatroom
  • Poetry
    • Shair o Shairy
    • Famous Poet
  • Islam - اسلام
    • QURAN O TARJUMA قرآن و ترجمہ
    • AHADEES MUBARIK آحدیث مبارک
    • Ramazan ul Mubarik - رمضان المبارک
    • Deen O Duniya - دین و دنیا
  • Other Forums
    • Quizzes
    • Movies and Stars
    • Chit chat And Greetings
    • Urdu Adab
    • Entertainment
    • Common Rooms
  • Science, Arts & Culture
    • Education, Science & Technology
  • IPS Community Suite
    • IPS Community Suite 4.1
    • IPS Download
    • IPS Community Help/Support And Tutorials

Blogs

There are no results to display.

There are no results to display.

Categories

  • IPS Community Suite 4.4
    • Applications 4.4
    • Plugin 4.4
    • Themes/Ranks
    • IPS Languages 4.4
  • IPS Community Suite 4.3
    • Applications 4.3
    • Plugins 4.3
    • Themes 4.3
    • Language Packs 4.3
    • IPS Extras 4.3
  • IPS Community Suite 4
    • Applications
    • Plugins
    • Themes
    • Language Packs
    • IPS Extras
  • Books
    • Urdu Novels
    • Islamic
    • General Books
  • XenForo
    • Add-ons
    • Styles
    • Language Packs
    • Miscellaneous XML Files
  • Web Scripts
  • PC Softwares
  • Extras

Find results in...

Find results that contain...


Date Created

  • Start

    End


Last Updated

  • Start

    End


Filter by number of...

Joined

  • Start

    End


Group


Facebook ID


FB Page/Group URL


Bigo Live


Website URL


Instagram


Skype


Interests


Location


ZODIAC

Found 3 results

  1. اے خدا جو بھی مجھے پندِ شکیبائی دے اس کی آنکھوں‌کو مرے زخم کی گہرائی دے تیرے لوگوں سے گلہ ہے مرے آئینوں کو ان کو پتھر نہیں‌ دیتا ہے تو بینائی دے جس کی ایما پہ کیا ترکِ تعلق سب سے اب وہی شخص مجھے طعنۂ تنہائی دے یہ دہن زخم کی صورت ہے مرے چہرے پر یا مرے زخم کو بھر یا مجھے گویائی دے اتنا بے صرفہ نہ جائے مرے گھر کا جلنا چشم گریاں نہ سہی چشمِ تماشائی دے جن کو پیراہنِ توقیر و شرف بخشا ہے وہ برہنہ ہیں‌ انہیں‌ خلعتِ رسوائی دے کیا خبر تجھ کو کہ کس وضع کا بسمل ہے فراز وہ تو قاتل کو بھی الزامِ مسیحائی دے
  2. Khwaab in aankhon se ab koi chura kar le jaaye, qabr ke sookhe hue phool utha kar le jaaye. Muntazir phool mein khusboo ki tarah hun kab se, koi jhauken ki tarah aaye udaa kar le jaaye. Ye bhi paani hai magar aankhon ka aisa paani, jo hatheli pe rachi mehandi udaa kar le jaaye . Main mohabbat se mehakta hua khat hun mujh ko, zindagi apni kitaabon mein daba kar le jaaye. Khaak insaaf hai na-beena buton ke aage, raat thaali mein chiraaghon ko saja kar le jaaye. !!!
  3. آنکھوں سے میرے اس لیے لالی نہیں جاتی یادوں سے کوئی رات جو خالی نہیں جاتی آئے کوئی آ کر یہ میرے درد سنبھالے ہم سے تو یہ جاگیر سنبھالی نہیں جاتی اب عمر نہ موسم نہ وہ رستے کہ وہ پلٹے اس دل کی مگر خام خیالی نہیں جاتی مانگے تو اگر جان بھی ہنس کر تجھے دے دیں تیری تو کوئی بات بھی ٹالی نہیں جاتی ہمراہ تیرے پھول کھلاتی تھی جو دل میں اب شام وہی درد سے خالی نہیں جاتی معلوم ہمیں بھی ہیں بہت سے تیرے قصے ہر بات تیری ہم سے اچھالی نہیں جاتی ہم جان سے جائیں گے تو کچھ بات بنے گی تم سے تو کوئی راہ نکالی نہیں جاتی
×