Jump to content

Search the Community

Showing results for tags 'aur'.



More search options

  • Search By Tags

    Type tags separated by commas.
  • Search By Author

Content Type


Forums

  • Help Support
    • Announcement And Help
    • Funday Chatroom
  • Poetry
    • Shair-o-Shaa'eri
    • Famous Poet
  • Islam - اسلام
    • QURAN O TARJUMA قرآن و ترجمہ
    • AHADEES MUBARIK آحدیث مبارک
    • Ramazan ul Mubarik - رمضان المبارک
    • Deen O Duniya - دین و دنیا
  • Other Forums
    • Quizzes
    • Chitchat and Greetings
    • Urdu Adab
    • Entertainment
    • Common Rooms
  • Science, Arts & Culture
    • Education, Science & Technology
  • IPS Community Suite
    • IPS Community Suite 4.1
    • IPS Download
    • IPS Community Help/Support And Tutorials

Blogs

There are no results to display.

There are no results to display.

Categories

  • IPS Community Suite 4.3
    • Applications 4.3
    • Plugins 4.3
    • Themes 4.3
    • Language Packs 4.3
    • IPS Extras 4.3
  • IPS Community Suite 4
    • Applications
    • Plugins
    • Themes
    • Language Packs
    • IPS Extras
  • Books
    • Urdu Novels
    • Islamic
    • General Books
  • XenForo
    • Add-ons
    • Styles
    • Language Packs
    • Miscellaneous XML Files
  • Web Scripts
  • PC Softwares

Find results in...

Find results that contain...


Date Created

  • Start

    End


Last Updated

  • Start

    End


Filter by number of...

Joined

  • Start

    End


Group


Facebook ID


FB Page/Group URL


Bigo Live


Website URL


Instagram


Skype


Location


Interests

Found 8 results

  1. یہ منہ اور مسور کی دال مسور کی دال بھی سوچ میں ہو گئی کہ کس منحوس کے ساتھ ملا دیا مجھے ۔

    © https://fundayforum.com/

  2. اے کملی کی جھرمٹ والے (حبیب!)، آپ رات کو (نماز میں) قیام فرمایا کریں مگر تھوڑی دیر (کے لئے)، آدھی رات یا اِس سے تھوڑا کم کر دیں، یا اس پر کچھ زیادہ کر دیں اور قرآن خوب ٹھہر ٹھہر کر پڑھا کریں، ہم عنقریب آپ پر ایک بھاری فرمان نازل کریں گے، بے شک رات کا اُٹھنا (نفس کو) سخت پامال کرتا ہے اور (دِل و دِماغ کی یک سُوئی کے ساتھ) زبان سے سیدھی بات نکالتا ہے، بے شک آپ کے لئے دن میں بہت سی مصروفیات ہوتی ہیں، اور آپ اپنے رب کے نام کا ذِکر کرتے رہیں اور (اپنے قلب و باطن میں) ہر ایک سے ٹوٹ کر اُسی کے ہو رہیں،
  3. Zarnish Ali

    aur kuch badla nai

    "اور کچھ نہیں بدلا" آج بعد مدت کے میں نے اُس کو دیکھا ھے وہ ذرا نہیں بدلی. اب بھی اپنی آنکھوں میں سو سوال رکھتی ھے چھوٹی چھوٹی باتوں پہ اب بھی کھل کے ھنستی ھے اب بھی اُس کے لہجے میں وھی کھنکھناہٹ ھے وہ ذرا نہیں بدلی اب بھی اُس کی پلکوں کے سائے گیلے رھتے ھیں اب بھی اُس کی سوچوں میں میرا نام رھتا ھے اب بھی میری خاطر وہ اُس طرح ہی پاگل ھے وہ ذرا نہیں بدلی. آج بعد مدت کے میں نے اُس کو دیکھا ھے تو مجھے بھی لگتا ھے میں بھی اُس کی چاھت میں اُس طرح ھی پاگل ھوں بعد اتنی مدت کے اور کچھ نہیں بدلا جُز ھمارے راستوں کے اور کچھ نہیں بدلا "عاطف سعید"
  4. !!! ....مجھے کتنی محبت ہے مجھے کتنی عقیدت ہے مجھے کتنی ضرورت ہے اسے کیسے میں لکھوں گی میں میں بےبس ہوں کہاں سے لفظ وہ لاؤں جو دل کا حال کہہ پائیں میں ایسے لفظ ڈھونڈوں گی جنہیں لکھوں تو کاغذ پر دئیے سے جگمگا اٹھیں جنہیں سوچوں تو ذہن و دل کا ہر گوشہ مہک جائے جنہیں ہونٹوں پہ لاؤں تو " دُعــا " کے پھول کھل جائیں کہیں سے لفظ مل جائیں دھنک اوڑھے ہوئے کچھہ لفظ مجھہ کو ڈھونڈنے ہوں گے کہ جن سے نظم لکھنی ہے اسے سب کچھہ بتانا ہے مجھے کتنی محبت ہے مجھے کتنی عقیدت ہے مجھے کتنی ضرورت ہے
  5. ایک بار کھیلےتو، وہ مِری طرح اور پھر جِیت لے وہ ہر بازی مجھ کو مات ہوجائے پروین شاکر عُمر کا بھروسہ کیا، پَل کا ساتھ ہوجائے ایک بار اکیلے میں، اُس سے بات ہوجائے دِل کی گُنگ سرشاری اُس کو جِیت لے، لیکن عرضِ حال کرنے میں احتیاط ہوجائے ایسا کیوں کہ جانے سے صرف ایک اِنساں کے ! ساری زندگانی ہی، بے ثبات ہوجائے یاد کرتا جائے دِل، اور کِھلتا جائے دِل اوس کی طرح کوئی پات پات ہوجائے سب چراغ گُل کرکے اُس کا ہاتھ تھاما تھا کیا قصور اُس کا، جو بَن میں رات ہوجائے ایک بار کھیلےتو، وہ مِری طرح اور پھر جِیت لے وہ ہر بازی مجھ کو مات ہوجائے رات ہو پڑاو کی پھر بھی جاگیے ورنہ ! آپ سوتے رہ جائیں، اور ہات ہوجائے
  6. ........بادشاہ اور وزیر ﺍﯾﮏ ﺑﺎﺩﺷﺎﮦ ﺗﮭﺎ ﺟﺲ ﮐﺎ ﺗﮭﺎ ﺍﯾﮏ ﻭﺯﯾﺮ۔ ﻭﺯﯾﺮ ﮨﺮ ﮐﺎﻡ ﻣﯿﮟ ﺍﻟﻠﮧ ﺗﻌﺎﻟﯽ ﭘﺮ ﺑﮭﺮﻭﺳﮧ ﺍﻭﺭ ﺗﻮﮐﻞ ﮐﺮﺗﺎ ﺗﮭﺎ۔ ﭘﮭﺮ ﺍﯾﮏ ﺩﻥ ﺍﯾﺴﺎ ﮨﻮﺍ ﮐﮧ ﺑﺎﺩﺷﺎﮦ ﮐﯽ ﺍﯾﮏ ﺍﻧﮕﻠﯽ ﮐﭩﯽ ﺍﻭﺭ ﺍﺱ ﻣﯿﮟ ﺳﮯ ﺑﮩﺖ ﺳﺎﺭﺍ ﺧﻮﻥ ﺑﮩﺎ۔ﺟﺐ ﻭﺯﯾﺮ ﻧﮯ ﯾﮧ ﻣﻨﻈﺮ ﺩﯾﮑﮭﺎ ﺗﻮ ﮐﮩﺎ : ﺍﭼﮭﺎ ﮨﯽ ﮨﻮﮔﺎ ﺍﻧﺸﺎﺀ ﺍﻟﻠﮧ۔ ﺧﺪﺍ ﭘﺮ ﺑﮭﺮﻭﺳﮧ ﮐﺮﯾﮟ۔ ﺟﺐ ﺑﺎﺩﺷﺎﮦ ﻧﮯ ﯾﮧ ﺳﻨﺎ ﺗﻮ ﺑﺎﺩﺷﺎﮦ ﮐﻮ ﻏﺼﮧ ﺍٓﯾﺎ ﺍﻭﺭ ﺑﻮﻻ : ﮐﯿﺴﮯ ﺍﭼﮭﺎ ﮨﻮﮔﺎ؟ ﻣﯿﺮﯼ ﺍﻧﮕﻠﯽ ﺳﮯﺧﻮﻥ ﺑﮩﮧ ﺭﮨﺎ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﺗﻢ ﮐﮩﮧ ﺭﮨﮯ ﮨﻮ ﺍﭼﮭﺎ ﮨﻮﮔﺎ۔ ! ﺍﺱﮐﮯ ﺑﻌﺪ ﺑﺎﺩﺷﺎﮦ ﻧﮯﺣﮑﻢ ﺩﯾﺎ ﮐﮧ ﻭﺯﯾﺮ ﮐﻮ ﺟﯿﻞ ﺑﮭﯿﺞ ﺩﯾﺎﺟﺎﺋﮯ۔ ﺍﺱ ﭘﺮ ﺑﮭﯽ ﻭﺯﯾﺮ ﻧﮯ ﮐﮩﺎ : ﺍﭼﮭﺎ ﮨﯽ ﮨﻮﮔﺎ ﺍﻧﺸﺎﺀﺍﻟﻠﮧ۔ ﺍﻭﺭ ﭘﮭﺮ ﺟﯿﻞ ﭼﻼ ﮔﯿﺎ۔ ﺑﺎﺩﺷﺎﮦ ﮐﯽ ﻋﺎﺩﺕ ﺗﮭﯽ ﮐﮧ ﮨﺮ ﺟﻤﻌﮧ ﮐﻮ ﺷﮑﺎﺭ ﮐﮭﯿﻠﻨﮯﺟﺎﯾﺎ ﮐﺮﺗﺎ ﺗﮭﺎ۔ ﺍﺱ ﺟﻤﻌﮧ ﮐﻮ ﺑﮭﯽ ﺑﺎﺩﺷﺎﮦ ﺑﮍﮮ ﺟﻨﮕﻞﻣﯿﮟ ﺷﮑﺎﺭ ﮐﮭﯿﻠﻨﮯ ﮔﯿﺎ۔ ﻟﯿﮑﻦ ﮐﯿﺎ ﺩﯾﮑﮭﺘﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺍﺱﺩﻓﻌﮧ ﺟﻨﮕﻞ ﻣﯿﮟ ﺑﮩﺖ ﺳﺎﺭﮮ ﻟﻮﮒ ﮨﯿﮟ ﺟﻮ ﺑﺖ ﮐﯽ ﭘﻮﺟﺎﮐﺮ ﺭﮨﮯ ﮨﯿﮟ۔ ﺍٓﺝ ﺍﻥ ﻟﻮﮔﻮﮞ ﮐﯽ ﻋﯿﺪ ﮐﺎ ﺩﻥ ﺗﮭﺎ۔ ﻭﮦ ﻟﻮﮒﺍﺱ ﺗﻼﺵ ﻣﯿﮟ ﺗﮭﮯ ﮐﮧ ﮐﺴﯽ ﺍﺟﻨﺒﯽ ﮐﻮ ﺍﭘﻨﮯﺑﺖ ﮐﮯﻟﯿﮯ ﻗﺮﺑﺎﻧﯽ ﮐﮯ ﻃﻮﺭ ﭘﺮ ﭘﯿﺶ ﮐﺮﯾﮟ۔ ﺍﭼﺎﻧﮏ ﺟﺐ ﺑﺎﺩﺷﺎﮦﮐﻮ ﺩﯾﮑﮭﺎ ﺗﻮ ﺍﺳﮯ ﭘﮑﮍ ﮐﮯ ﻟﮯ ﺍٓﺋﮯ ﺗﺎﮐﮧ ﺫﺑﺢ ﮐﺮ ﮐﮯﺑﺖ ﮐﮯ ﻟﯿﮯ ﻗﺮﺑﺎﻧﯽ ﭘﯿﺶ ﮐﯽ ﺟﺎﺋﮯ۔ ﺍﭼﺎﻧﮏ ﮐﺴﯽ ﻧﮯ ﺩﯾﮑﮭﺎ ﮐﮧ ﺑﺎﺩﺷﺎﮦ ﮐﯽ ﺍﻧﮕﻠﯽ ﮐﭩﯽ ﮨﻮﺋﯽ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﺟﺲﮐﯽ ﺍﻧﮕﻠﯽ ﮐﭩﯽ ﮨﻮ ﻭﮦ ﻣﻌﯿﻮﺏ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯﺍﻭﺭ ﺍﺱ ﮐﯽﻗﺮﺑﺎﻧﯽ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﻮﺗﯽ۔ ﻟﮩﺬﺍ ﺑﺎﺩﺷﺎﮦ ﮐﻮ ﭼﮭﻮﮌ ﺩﯾﺎ ﮔﯿﺎ۔ﺍﺱ ﻭﻗﺖ ﺑﺎﺩﺷﺎﮦ ﮐﻮ ﺍﭘﻨﮯﻭﺯﯾﺮ ﮐﺎ ﺟﻤﻠﮧ ﯾﺎﺩ ﺍٓﮔﯿﺎ : ﺳﺐﮐﭽﮫ ﺍﭼﮭﺎ ﮨﻮﮔﺎ ﺍﻧﺸﺎﺀ ﺍﻟﻠﮧ۔ ﺷﮑﺎﺭ ﺳﮯ ﻭﺍﭘﺲ ﺍٓﮐﺮ ﺑﺎﺩﺷﺎﮦ ﻧﮯ ﻭﺯﯾﺮ ﮐﻮ ﺟﯿﻞ ﺳﮯﺍٓﺯﺍﺩ ﮐﯿﺎ ﺍﻭﺭ ﺍﭘﻨﮯ ﭘﺎﺱ ﺑﻼﯾﺎ۔ﺍﻭﺭ ﺍﭘﻨﯽ ﺳﺎﺭﯼ ﮐﮩﺎﻧﯽ ﺳﻨﺎﺋﯽ ﺍﻭﺭ ﺍﻋﺘﺮﺍﻑ ﮐﯿﺎ ﮐﮧ ﻭﺍﻗﻌﺎ ﺍﻧﮕﻠﯽ ﮐﺎ ﮐﭩﻨﺎ ﺍﺱ ﮐﮯﻟﯿﮯ ﺍﭼﮭﺎ ﺗﮭﺎ ﻭﺭﻧﮧ ﺍﺱ ﮐﯽ ﻗﺮﺑﺎﻧﯽ ﮐﯽ ﺟﺎﺗﯽ۔ ﻟﯿﮑﻦ ﺑﺎﺩﺷﺎﮦ ﻧﮯ ﻭﺯﯾﺮﺳﮯ ﺍﯾﮏ ﺳﻮﺍﻝ ﭘﻮﭼﮭﺎ : ﺟﺐ ﺗﻢ ﺟﯿﻞ ﺟﺎﺭﮨﮯ ﺗﮭﮯ ﺗﻮ ﺑﮭﯽ ﮐﮩﮧ ﺭﮨﮯ ﺗﮭﮯ ﮐﮧ ﺍﭼﮭﺎ ﮨﻮﮔﺎ ﺍﻧﺸﺎﺀﺍﻟﻠﮧ۔ ﺟﯿﻞ ﻣﯿﮟ ﺗﻤﮩﺎﺭﮮ ﺳﺎﺗﮫ ﮐﯿﺎ ﺍﭼﮭﺎ ﮨﻮﺍ؟ ﻭﺯﯾﺮ ﻧﮯ ﺟﻮﺍﺏ ﺩﯾﺎ : ﻣﯿﮟ ﺍٓﭖ ﮐﺎ ﻭﺯﯾﺮ ﺗﮭﺎ ﺍﻭﺭ ﮨﻤﯿﺸﮧ ﺍٓﭖﮐﮯ ﺳﺎﺗﮫ ﮨﻮﺗﺎ ﺗﮭﺎ۔ ﺍﮔﺮ ﻣﯿﮟ ﺟﯿﻞ ﻧﮧ ﮔﯿﺎ ﮨﻮﺗﺎ ﺗﻮ ﺷﮑﺎﺭﮐﮯﺩﻥ ﺑﮭﯽ ﺍٓﭖ ﮐﮯ ﺳﺎﺗﮫ ﮨﯽ ﮨﻮﺗﺎ۔ ﺍﻭﺭ ﭼﻮﻧﮑﮧ ﻣﯿﺮﯼﺍﻧﮕﻠﯽ ﮐﭩﯽ ﮨﻮﺋﯽ ﻧﮩﯿﮟ ﺗﮭﯽ ﻭﮦ ﻟﻮﮒ ﺍٓﭖ ﮐﯽ ﺟﮕﮧ ﻣﺠﮭﮯﺍﭘﻨﮯ ﺑﺖ ﮐﮯ ﻟﯿﮯ ﻗﺮﺑﺎﻧﯽ ﭼﮍﮬﺎﺗﮯ۔ ﭘﺲ ﺟﯿﻞ ﺟﺎﻧﮯ ﮐﯽﻭﺟﮧ ﺳﮯ ﻣﯿﮟ ﺑﭻ ﮔﯿﺎ۔ : ﺍﻟﻠﮧ ﺗﻌﺎﻟﯽ ﮐﮯ ﮨﺮ ﮐﺎﻡ ﻣﯿﮟ ﻣﺼﻠﺤﺖﮨﻮﺗﯽ ﮨﮯ۔ ﮨﻤﯿﺸﮧ ﺍﻟﻠﮧ ﺗﻌﺎﻟﯽ ﭘﺮ ﺑﮭﺮﻭﺳﮧ ﮐﺮﻧﺎ ﭼﺎﮨﯿﮯ۔
  7. Zarnish Ali

    poetry aur kuch nai badla...

    ﺍﻭﺭ ﮐﭽﮫ ﻧﮩﯿﮟ ﺑﺪﻻ " ﺁﺝ ﺑﻌﺪ ﻣﺪﺕ ﮐﮯ ﻣﯿﮟ ﻧﮯ ﺍُﺱ ﮐﻮ ﺩﯾﮑﮭﺎ ﮬﮯ ﻭﮦ ﺫﺭﺍ ﻧﮩﯿﮟ ﺑﺪﻟﯽ . ﺍﺏ ﺑﮭﯽ ﺍﭘﻨﯽ ﺁﻧﮑﮭﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﺳﻮ ﺳﻮﺍﻝ ﺭﮐﮭﺘﯽ ﮬﮯ ﭼﮭﻮﭨﯽ ﭼﮭﻮﭨﯽ ﺑﺎﺗﻮﮞ ﭘﮧ ﺍﺏ ﺑﮭﯽ ﮐﮭﻞ ﮐﮯ ﮬﻨﺴﺘﯽ ﮬﮯ ﺍﺏ ﺑﮭﯽ ﺍُﺱ ﮐﮯ ﻟﮩﺠﮯ ﻣﯿﮟ ﻭﮬﯽ ﮐﮭﻨﮑﮭﻨﺎﮨﭧ ﮬﮯ ﻭﮦ ﺫﺭﺍ ﻧﮩﯿﮟ ﺑﺪﻟﯽ ﺍﺏ ﺑﮭﯽ ﺍُﺱ ﮐﯽ ﭘﻠﮑﻮﮞ ﮐﮯ ﺳﺎﺋﮯ ﮔﯿﻠﮯ ﺭﮬﺘﮯ ﮬﯿﮟ ﺍﺏ ﺑﮭﯽ ﺍُﺱ ﮐﯽ ﺳﻮﭼﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﻣﯿﺮﺍ ﻧﺎﻡ ﺭﮬﺘﺎ ﮬﮯ ﺍﺏ ﺑﮭﯽ ﻣﯿﺮﯼ ﺧﺎﻃﺮ ﻭﮦ ﺍُﺱ ﻃﺮﺡ ﮨﯽ ﭘﺎﮔﻞ ﮬﮯ ﻭﮦ ﺫﺭﺍ ﻧﮩﯿﮟ ﺑﺪﻟﯽ . ﺁﺝ ﺑﻌﺪ ﻣﺪﺕ ﮐﮯ ﻣﯿﮟ ﻧﮯ ﺍُﺱ ﮐﻮ ﺩﯾﮑﮭﺎ ﮬﮯ ﺗﻮ ﻣﺠﮭﮯ ﺑﮭﯽ ﻟﮕﺘﺎ ﮬﮯ ﻣﯿﮟ ﺑﮭﯽ ﺍُﺱ ﮐﯽ ﭼﺎﮬﺖ ﻣﯿﮟ ﺍُﺱ ﻃﺮﺡ ﮬﯽ ﭘﺎﮔﻞ ﮬﻮﮞ ﺑﻌﺪ ﺍﺗﻨﯽ ﻣﺪﺕ ﮐﮯ ﺍﻭﺭ ﮐﭽﮫ ﻧﮩﯿﮟ ﺑﺪﻻ ﺟُﺰ ﮬﻤﺎﺭﮮ ﺭﺍﺳﺘﻮﮞ ﮐﮯ ﺍﻭﺭ ﮐﭽﮫ ﻧﮩﯿﮟ ﺑﺪﻻ " ﻋﺎﻃﻒ ﺳﻌﯿﺪ "
  8. View File Qazi Ki Kothri Aur Kunwari Beti قاضی کی کوٹھری اور کنواری بیٹی Qazi Ki Kothri Aur Kunwari Beti by Ahmed Yar Khan Download,Read and Download Free Urdu Novels Online,Urdu Novels, Free Urdu Novels, Download Free Urdu PDF Books, Islamic Books,Only Fundayforum.com Urdu Books, Novels, Romance, Urdu Poetry, Kids Stories,Read Online Urdu Books,Novels,Magazines,Digests,Safarnama,Islamic Books,Education Books,imran series,mazhar kaleem,Romantic urdu novels free download,Free download,Read online most Favorite Urdu novels Submitter waqas dar Submitted 03/24/2016 Category Urdu Novels Writer/Author Ahmed Yar Khan
×