Jump to content

Welcome to Fundayforum.com

Take a moment to join us, we are waiting for you.

News Ticker

Search the Community

Showing results for tags 'nahi'.



More search options

  • Search By Tags

    Type tags separated by commas.
  • Search By Author

Content Type


Forums

  • Help Support
    • Announcement And Help
    • Funday Chatroom
  • Poetry
    • Shair-o-Shaa'eri
    • Famous Poet
  • Islam - اسلام
    • QURAN O TARJUMA قرآن و ترجمہ
    • AHADEES MUBARIK آحدیث مبارک
    • Ramazan ul Mubarik - رمضان المبارک
    • Deen O Duniya - دین و دنیا
  • Other Forums
    • Quizzes
    • Chitchat and Greetings
    • Urdu Adab
    • Entertainment
    • Common Rooms
  • Music, Movies, and Dramas
    • Movies Song And Tv.Series
  • Science, Arts & Culture
    • Education, Science & Technology
  • IPS Community Suite
    • IPS Community Suite 4.1
    • IPS Download
    • IPS Community Help/Support And Tutorials

Blogs

There are no results to display.

There are no results to display.

Categories

  • Books
    • Urdu Novels
    • Islamic
    • General Books
  • IPS Community Suite 4
    • Applications
    • Plugins
    • Themes
    • Language Packs
    • IPS Extras
  • IPS Community Suite 3.4
    • Applications
    • Hooks/BBCodes
    • Themes/Skins
    • Language Packs
    • Miscellaneous XML Files
  • XenForo
    • Add-ons
    • Styles
    • Language Packs
    • Miscellaneous XML Files
  • Web Scripts
  • PC Softwares

Categories

  • Islam
  • General Knowledge
  • Sports

Found 7 results

  1. اپنے تن دی خبر نہیں سجن دی خبر لوےکون؟ نہ میں خاکی نہ میں آتِش نہ پانی نہ پاوُن اپنے تن دی خبر نہیں سجن دی خبر لوےکون؟ نہ میں خاکی نہ میں آتِش نہ پانی نہ پاوُن وے بُهلیاں سائیاں وے گُهٹ گُهٹ روئیاں ِ وے بُهلیاں سائیاں وے گُهٹ گُهٹ روئیاں جِنوں آٹے وِچ لون ، جِنوں آٹے وِچ لون اپنے تن دی خبر نہیں سجن دی خبر لوےکون؟ اساں نازک دل دے لوک آں ساڈا دل نہ یار دُکهایاکر نہ چهوٹے وعدے کیتا کر نہ چهوٹی کسماں کهایا کر تینوں کینی واری آکهیاں اے سانو اَل وَل نہ آزمایہ کر تیرے پیار دے وچ میں مر جاسا مینوں اینا یاد نہ آیا کر سجنہ وے آ جا وے مُڑچهیتی نئ اُڈیکاں تیریاں دُبدہ پهرے گا فیرلبنیاں تینوں مٹی دییاں ڈیهریاں سجنہ وے آ جا وے مُڑچهیتی نئ اُڈیکاں تیریاں دُبدہ پهرے گا فیرلبنیاں تینوں مٹی دییاں ڈیهریاں اپنے تن دی خبر نہیں سجن دی خبر لوےکون؟ نہ میں خاکی نہ میں آتِش نہ پانی نہ پاوُن اپنے تن دی خبر نہیں سجن دی خبر لوےکون؟ نہ میں خاکی نہ میں آتِش نہ پانی نہ پاوُن وے بُهلیاں سائیاں وے گُهٹ گُهٹ روئیاں وے بُهلیاں سائیاں وے گُهٹ گُهٹ روئیاں جِنوں آٹے وِچ لون ، جِنوں آٹے وِچ لون اپنے تن دی خبر نہیں سجن دی خبر لوےکون؟
  2. Sheree'n Bhi Nahi Laila Bhi Nahi Sheree'n Bhi Nahi Laila Bhi Nahi شیریں بھی نہیں لیلیٰ بھی نہیں میں ہیر نہیں عذرا بھی نہیں وہ قصّہ ہیں افسانہ ہیں وہ گیت ہیں پریم ترانہ ہیں میں زندہ ایک حقیقت ہوں میں جذبہ عشق کی شدت ہوں میں تم کو دیکھ کے جیتی ہوں میں ہر پل تم پہ مرتی ہوں میں ایسی محبت کرتی ہوں تم کیسی محبت کرتے ہو؟ جب ہاتھ دُعا کو اُٹھتے ہیں الفاظ کہیں کھو جاتے ہیں بس دھیان تمھارا رہتا ہے اور آنسو بہتے رہتے ہیں ہر خواب تمھارا پورا ہو اس رب کی منّت کرتی ہوں میں ایسی محبت کرتی ہوں تم کیسی محبت کرتے ہو؟ مجھے ٹھنڈک راس نہیں آتی مجھے بارش سے خوف آتا ہے پر جس دن سے معلوم ہوا یہ موسم تم کو بھاتا ہے اب جب بھی ساون آتا ہے بارش میں بھیگتی رہتی ہوں قطروں میں تمہی کو ڈھونڈتی ہوں بوندوں سے تمھارا پوچھتی ہوں میں ایسی محبت کرتی ہوں تم کیسی محبت کرتے ہو؟ وہ فیض ہو میر ہو غالب ہو وہ اصغر جگر ہو جالب ہو وہ سیف عدیم ہو فرحت ہو وہ ساجد ہو وہ امجد ہو سب میری فہم سے بالا ہے کیسا یہ کھیل نرالا ہے ان سب کو گھنٹوں پڑھتی ہوں میں ایسی محبت کرتی ہوں تم کیسی محبت کرتے ہو؟ سب کہتے ہیں اس دنیا کا ہر رنگ تمہی سے روشن ہے مرے عشق کے دعویدار ہیں سب سب مجھ کو دیوی کہتے ہیں پر مجھ کو ایسا لگتا ہے ہر رنگ تمہی پر جچتا ہے تم نا ہو تو بیرنگ ہوں میں بے رونق ہے تصویر مِری مِرے جذبوں کی سچائی ہو تم تم سے ہے جڑی تقدیر مِری جو خاک تمھیں چُھو جاتی ہے اس مٹی پر میں مرتی ہوں میں ایسی محبت کرتی ہوں تم کیسی محبت کرتے ہو؟ تم جب بھی گھر پر آتے ہو اور سب سے باتیں کرتے ہو میں اوٹ سے پردے کی جاناں بس تم کو دیکھتی رہتی ہوں اک تم کو دیکھنے کی خاطر میں کتنی پاگل ہوتی ہوں میں ایسی محبت کرتی ہوں تم کیسی محبت کرتے ہو جب دروازے پر دستک ہو یا گھنٹی فون کی بجتی ہو میں چھوڑ کے سب کچھ بھاگتی ہوں پر تم کو جب نہیں پاتی ہوں جی بھر کے رونے لگتی ہوں میں ایسی محبت کرتی ہوں تم کیسی محبت کرتے ہو محفل میں کہیں جب جانا ہو کپڑوں کا چناو¿ کرنا ہو رنگوں کی دھنک سی بکھری ہو اُس رنگ پہ دل آجاتا ہے جو رنگ کہ تم کو بھاتا ہے میں ایسی محبت کرتی ہوں تم کیسی محبت کرتے ہو روزانہ اپنے کالج میں کسی اور کا لیکچر سنتے ہوئے یا بریک کے خالی گھنٹے میں سکھیوں سے باتیں کرتے ہوئے مِرے دھیان میں تم آجاتے ہو میں، میں نہیں رہتی پھر جاناں میں تم میں گم ہو جاتی ہوں بس خوابوں میں کھو جاتی ہوں ان آنکھوں میں کھو جاتی ہوں میں ایسی محبت کرتی ہوں تم کیسی محبت کرتے ہو جس چہرے پر بھی نظر پڑے وہ چہرہ تم سا لگتا ہے وہ شام ہو یا کے دھوپ سمے سب کتنا بھلا سا لگتا ہے جانے یہ کیسا نشّہ ہے گرمی کا تپتا موسم بھی جاڑے کا مہینہ لگتا ہے میں ایسی محبت کرتی ہوں تم کیسی محبت کرتے ہو تم جب بھی سامنے آتے ہو میں تم سے سننا چاہتی ہوں اے کاش کبھی تم یہ کہہ دو تم مجھ سے محبت کرتے ہو تم مجھ کو بے حد چاہتے ہو لیکن تم جانے کیوں چپ ہو یہ سوچ کے دل گھبراتا ہے ایسا تو نہیں ہے نا جاناں سب میری نظر کا دھوکہ ہو تم نے مجھ کو چاہا ہی نہ ہو کوئی اور ہی دل میں رہتا ہو میں تم سے پوچھنا چاہتی ہوں میں تم سے کہنا چاہتی ہوں لیکن کچھ پوچھ نہیں سکتی مانا کہ محبت ہے پھر بھی لب اپنے کھول نہیں سکتی خوابوں میں بہت کچھ بولتی ہوں پر سامنے چُپ ہی رہتی ہوں میں لڑکی ہوں کیسے کہہ دوں میں کیسی محبت کرتی ہوں میں تم سے یہ کیسے پوچھوں تم کیسی محبت کرتے ہو میں ایسی محبت کرتی ہوں تم کیسی محبت کرتے ہو؟؟
    Laila Majnu Sohni Mahiwal Great Punjabi Love Stories Heer Ranjha
  3. poetry Yeh Tum Acha nahi karte

    Akele chor jaty ho,Ye Tm acha nahi karty Hamara dil jalaty ho Ye Tum acha nahi kArty kaha b tha Muhabat hy Muhabat hi isy rakho Tamasha jo banaty ho Ye tum acha nahi kArty Uthaty ho Sar-e-Mehfil falak tak Tum Humay lekin Utha kar jo giraty ho ye Tum acha nahi kArty koi jo poch le Tumse k rishta kya hy ab Un se To Nazron ko jhukaty ho ye Tum acha nahi kArty Bikhar jayen andheron main sahara Tum hi dety ho Magar phir chor jaty ho ye Tum acha nahi karty.
  4. یہ ممکن تو نہیں جو دل نے چاہا تھا وہ مل جاے کوئی امید ٹوٹے تو کیا کریں جو دیکھےخواب آنکھوں نے خقیقت وہ نہ بن پائیں ، جو قسمت ساتھ نہ دہ تو کیا کریں یہ دل جو رو رہا تو کہیں سے صبر مل جاے ہوئے جو بد گماں ہم تو کیا کریں جو دل کے پاس رہتے ہیں وہ دل کیوں توڑ جاتے ہیں، وفا کے بدلے کیوں وہ بےوفائی چھوڑ جاتے ہیں کبھی جو ہمسفر تھے اب وہی انجان لگتے ہیں، محبتوں کے وہ رشتےبھی تو بے جان لگتے ہیں خوشی کے در پہ دستک دہ رہے ہیں غم مسلسل ہی،کہیں نہ چین نہ پائیں تو کیا کریں کسی سے ہمنوائی کا صلہ ہم کو نہ مل پائے، ہوئے جو بد گمان تو ہم کیا کریں کسی کا ساتھ پانا بھی کبھی آسان نہیں ہوتا ہے، کسی کے دور جانے سے یہ دل ویران نہیں ہوتا وجہ کچھ اور بھی مل جاتی ہے دنیا میں جینے کی،کسی کی آس پہ جینا بھی تو آسان نہیں ہوتا نصیبوں میں ہی نہ لکھا ہو تو کیسے وہ مل جاے،خدا بھی روٹھ جاے تو کیا کریں یہ دل جو رو رہا ہے تو کہیں سے صبر مل جاے،ہوئے جو بد گمان ہم تو کیا کریں یہ ممکن تو نہیں جو دل نے چاہا تھا وہ مل جاے،کوئی امید ٹوٹے تو کیا کریں
  5. Uss Ne Kaha Tum Mein Pehli Si Baat Nahi Main Ne Kaha Zindagi Main Tera Saath Nai Uss Ne Kaha Ab Bhi Kisi Ki Aankhon Main Doob Jatay Ho? Main Ne Kaha Ab Kisi Aankh Main Wo Baat Nai Uss Ne Kaha Kyon Itna Toot Kai Chaaha Muje? Main Ne Kaha Insaan Hoon Pathar Zaat Nai Uss Ne Kaha Kya Main Bewafa Hoon? Main Ne Kaha Mujhe Ab Wafa Ki Talash Nai Uss Ne Kaha Bhool Ja Muj Ko!!! Main Ne Kaha Tum Haqeeqat Ho Koi Khawab Nai.....
  6. poetry Larkiyan bewafa nahi hotin

    Ladkiyaan Bewafaa nahi hoti...! Wo to majborioon mein lipti hain...! Apne shiddat bhare khyalon mein, Apne ander chhupi ek aurat mein, Wo hamesha hi darti rehti hain...! Na to jeeti hain na to marti hain...! Larkiyaan bewafaa nahi hoti Per Hamesha... hi darti rehti hain... Apne reeti or rawajoon se Ane wale naye azaboon se, Zarurat mein khile ghulaboon se...! Pyaar kerti hain or chhupati hain, Larkiyaan Bewafaa nahi hoti....! Kyuon ki majborioon mein lipti hain...! aur har lamha darti rehti hain...! Apne pyaar se apne saye se, Apney rishton se dil ki dharkan se, Apni khowahish se apni kushiyon se...♥♥♥
  7. پہلا سا حال پہلی سی وحشت نہیں رہی شاید کہ تیرے ہجر کی عادت نہیں رہی شہروں میں ایک شہر مرے رَت جگوں کا شہر کوچے تو کیا دِلوں ہی میں وسعت نہیں رہی لوگوں میں میرے لوگ وہ دل داَریوں کے لوگ بچھڑے تو دُور دُور رقابت نہیں رہی شاموں میں ایک شام وہ آوارگی کی شام اب نیم وَا دریچوں کی حسرت نہیں رہی راتوں میں ایک رات مِرے گھر کی چاند رات آنگن کو چاندنی کی ضرورت نہیں رہی راہوں میں ایک راہ وہ گھر لَوٹنے کی راہ ٹہرے کسی جگہ وہ طبیعت نہیں رہی یادوں میں ایک یاد کوئی دل شکن سی یاد وہ یاد اب کہاں ہے کہ فرصت نہیں رہی ناموں میں ایک نام سوال آشنا کا نام اب دل پہ ایسی کوئی عبارت نہیں رہی خوابوں میں ایک خواب تری ہم رَہی کا خواب اب تجھ کو دیکھنے کی بھی صورت نہیں رہی رنگوں میں ایک رنگ تری سادگی کا رنگ ایسی ہَوا چلی کہ وہ رنگت نہیں رہی باتوں میں ایک بات تیری چاہتوں کی بات اور اب یہ اِتّفاق کہ چاہت نہیں رہی یاروں میں ایک یار وہ عیّاریوں کا یار مِلنا نہیں رہا تو شکایت نہیں رہی فصلوں میں ایک فصل وہ جان دادگی کی فصل بادل کو یاں زمین سے رغبت نہیں رہی زخموں میں ایک زخم متاعِ ہنر کا زخم اب کوئی آرزوئے جراحت نہیں رہی سنّاٹا بولتا ہے صدا مت لگا نصیر آواز رہ گئی ہے سماعت نہیں رہی
×