Jump to content
Search In
  • More options...
Find results that contain...
Find results in...

Welcome to Fundayforum.com

Take a moment to join us, we are waiting for you.

Search the Community

Showing results for tags 'picture'.



More search options

  • Search By Tags

    Type tags separated by commas.
  • Search By Author

Content Type


Forums

  • Help Support
    • Announcement And Help
    • Funday Chatroom
  • Poetry
    • Shair-o-Shaa'eri
    • Famous Poet
  • Islam - اسلام
    • QURAN O TARJUMA قرآن و ترجمہ
    • AHADEES MUBARIK آحدیث مبارک
    • Ramazan ul Mubarik - رمضان المبارک
    • Deen O Duniya - دین و دنیا
  • Other Forums
    • Quizzes
    • Chitchat and Greetings
    • Urdu Adab
    • Entertainment
    • Common Rooms
  • Science, Arts & Culture
    • Education, Science & Technology
  • IPS Community Suite
    • IPS Community Suite 4.1
    • IPS Download
    • IPS Community Help/Support And Tutorials

Blogs

There are no results to display.

There are no results to display.

Categories

  • IPS Community Suite 4.3
    • Applications 4.3
    • Plugins 4.3
    • Themes 4.3
    • Language Packs 4.3
    • IPS Extras 4.3
  • IPS Community Suite 4
    • Applications
    • Plugins
    • Themes
    • Language Packs
    • IPS Extras
  • Books
    • Urdu Novels
    • Islamic
    • General Books
  • XenForo
    • Add-ons
    • Styles
    • Language Packs
    • Miscellaneous XML Files
  • Web Scripts
  • PC Softwares

Find results in...

Find results that contain...


Date Created

  • Start

    End


Last Updated

  • Start

    End


Filter by number of...

Joined

  • Start

    End


Group


Facebook ID


FB Page/Group URL


Bigo Live


Website URL


Instagram


Skype


Location


Interests

Found 22 results

  1. VHP members have gone totally rogue in the Indian state of Uttar Pradesh after they damaged and vandalised the west gate of the Taj Mahal, alleging that it blocks the way to a 400-year old Shiva temple. Earlier this year, a team of VHP members had also tried to perform a 'Shiv aarti ceremony' inside the premises of the Taj Mahal in Agra. The police present on the spot tried to calm down the instigators and asking them to use the optional path to the Siddheshwar Mahadev Temple on the Basia Ghat but to no avail. ASI later lodged an FIR against five members of the VHP and 25 others who accompanied them. © Twitter “On Sunday around 25-30 activists from the VHP came near the western gate of the Taj Mahal and started vandalizing the newly installed turnstile gate for ticket collection for Taj Mahal and Saheli ka Burj. The protesters had hammers and iron rods with them. They removed the gate and threw it some around 50 metres from there. Soon the Taj safety police team reached there and stopped them from vandalising more property,” Taj Safety circle officer (CO) Prabhat Kumar said. VHP's Ravi Dubey tried to justify the actions of his organisation by blaming the administration of destroying the Hindu culture in and around the UNESCO world heritage site. “Till around 15 years ago, there used to be satsang at the Saheli ka Burj on the western gate but it was stopped. Dussehra fair was also stopped near Taj Mahal. Earlier people used to celebrate Amla Nawami here inside the Taj Mahal premises near an Amla tree. That tree was also cut down by the ASI. There were so many other things people used to do here, but it all ended around 14-15 years ago during the Samajwadi Party and Bahujan Samaj Party rule. We cannot let this happen,” Dubey told the Indian Express. © Twitter While it's shocking that the rogue elements of VHP could get unabated access to cause damage to the monument, the administration's role must also be probed so that such incidents do not occur again in future.
  2. Zarnish Ali

    poetry 2Line poetry

    سب لوگ جدھر وہ ہیں ادھر دیکھ رہے ہیں ہم دیکھنے والوں کی نظر دیکھ رہے ہیں داغ دہلوی
  3. Zarnish Ali

    koi sawal jo pochy

    کوئی سوال جو پُوچھے ،تو کیا کہوں اُس سے بچھڑنے والے!سبب تو بتا جدائی کا پروین شاکر شدید دُکھ تھا اگرچہ تری جُدائی کا سِوا ہے رنج ہمیں تیری بے وفائی کا تجھے بھی ذوق نئے تجربات کا ہو گا ہمیں بھی شوق تھا کُچھ بخت آزمائی کا جو میرے سر سے دوپٹہ نہ ہٹنے دیتا تھا اُسے بھی رنج نہیں میری بے ردائی کا سفر میں رات جو آئی تو ساتھ چھوڑ گئے جنھوں نے ہاتھ بڑھایا تھا رہنمائی کا ردا چھٹی مرے سر سے،مگر میں کیا کہتی کٹا ہُوا تو نہ تھا ہاتھ میرے بھائی کا ملے تو ایسے، رگِ جاں کو جیسے چھُو آئے جُدا ہُوئے تو وہی کرب نارسائی کا کوئی سوال جو پُوچھے ،تو کیا کہوں اُس سے بچھڑنے والے!سبب تو بتا جدائی کا میں سچ کو سچ ہی کہوں گی ،مجھے خبر ہی نہ تھی تجھے بھی علم نہ تھا میری اس بُرائی کا نہ دے سکا مجھے تعبیر،خواب تو بخشے میں احترام کروں گی تری بڑائی کا
  4. Dedicated A Picture Or Smiley To Person Above You. Koi bhi picture funny ya kuch bhi ya smiley apne se oper wale ko dedicate kerain. but please koi bhi aisi picture na post kerain jo k gair mayari hu. its a game so please dont take it personal. chalo gee hu jaoo shoro pahli pic sab k liye
  5. تیری بانہیں ،ترا پہلو ہے ابھی میرے لیے سب سے بڑھ کر، مری جاں !تو ہے ابھی میرے لیے زیست کرنے کو مرے پاس بہت کُچھ ہے ابھی آج کی شب تو کسی طور گُزر جائے گی! آج کی شب تو کسی طور گُزر جائے گی" رات گہری ہے مگر چاند چمکتا ہے ابھی میرے ماتھے پہ ترا پیار دمکتا ہے ابھی میری سانسوں میں ترا لمس مہکتا ہے ابھی میرے سینے میں ترا نام دھڑکتا ہے ابھی زیست کرنے کو مرے پاس بہت کُچھ ہے ابھی تیری آواز کا جادو ہے ابھی میرے لیے تیرے ملبوس کی خوشبو ہے ابھی میرے لیے آج کے بعد مگر رنگ وفا کیا ہو گا عشق حیراں ہے سرِ شہرِ سبا کی ہو گا میرے قاتل! ترا اندازِ جفا کیا ہو گا! آج کی شب تو بہت کچھ ہے ، مگر کل کے لیے ایک اندیشہ بے نام ہے اور کچھ بھی نہیں دیکھنا یہ ہے کہ کل تجھ سے ملاقات کے بعد رنگِ اُمید کھِلے گا کہ بکھر جائے گا! وقت پرواز کرے گا کہ ٹھہر جائے گا! جیت ہو جائے گی یا کھیل بگڑ جائے گا خواب کا شہر رہے گا کہ اُجڑ جائے گا! "پروین شاکر"
  6. چاندنی شب ہے ستاروں کی ردائیں سی لو عید آئی ہے بہاروں کی ردائیں سی لو چشم ساقی سے کہو تشنہ اُمیدوں کے لیے تُم بھی کچھ بادہ گُساروں کی ردائیں سی لو ہر برس سوزن تقدیر چلا کرتی ہے اب تو کُچھ سینہ فگاروں کی ردائیں سی لو لوگ کہتے ہیں تقدس کے سُبو ٹوٹیں گے جُھومتی رہگزاروں کی ردائیں سی لو قلرم خُلد سے ساغر کی صدا آتی ہے اپنے بے تاب کناروں کی ردائیں سی لو (ساغر صدیقی)
  7. کوئی نالہ یہاں رَسا نہ ہُوا اشک بھی حرفِ مُدّعا نہ ہُوا تلخی درد ہی مقدّر تھی جامِ عشرت ہمیں عطا نہ ہُوا ماہتابی نگاہ والوں سے دل کے داغوں کا سامنا نہ ہُوا آپ رسمِ جفا کے قائل ہیں میں اسیرِ غمِ وفا نہ ہوا وہ شہنشہ نہیں، بھکاری ہے جو فقیروں کا آسرا نہ ہُوا رہزن عقل و ہوش دیوانہ عشق میں کوئی رہنما نہ ہُوا ڈوبنے کا خیال تھا ساغرؔ ہائے ساحل پہ ناخُدا نہ ہُوا (ساغر صدیقی)
  8. فضائے نیم شبی کہہ رہی ہے سب اچھا ہماری بادہ کشی کہہ رہی ہے سب اچھا نہ اعتبارِ محبت، نہ اختیارِ وفا جُنوں کی تیز روی کہہ رہی ہے سب اچھا دیارِ ماہ میں تعمیر مَے کدے ہوں گے کہ دامنوں کی تہی کہہ رہی ہے سب اچھا قفس میں یُوں بھی تسلّی بہار نے دی ہے چٹک کے جیسے کلی کہہ رہی ہے سب اچھا وہ آشنائے حقیقت نہیں تو کیا غم ہے حدیثِ نامہ بَری کہہ رہی ہے سب اچھا تڑپ تڑپ کے شبِ ہجر کاٹنے والو نئی سحر کی گھڑی کہہ رہی ہے سب اچھا حیات و موت کی تفریق کی کریں ساغرؔ ہماری شانِ خودی کہہ رہی سب اچھا (ساغر صدیقی)
  9. بادباں کھُلنے سے پہلے کا اشارا دیکھنا میں سمندر دیکھتی ہوں تم کنارا دیکھنا یوں بچھڑنا بھی بہت آساں نہ تھا اُس سے مگر جاتے جاتے اُس کا وہ مڑ کر دوبارہ دیکھنا کس شباہت کو لیے آیا ہے دروازے پہ چاند اے شبِ ہجراں! ذرا اپنا ستارہ دیکھنا کیا قیامت ہے کہ جن کے نام پر پسپا ہوئے اُن ہی لوگوں کو مقابل میں صف آرا دیکھنا جب بنامِ دل گواہی ہم سے مانگی جائے گی خون میں ڈوبا ہوا پرچم ہمارا دیکھنا جیتنے میں بھی جہاں جی کا زیاں پہلے سے ہے ایسی بازی ہارنے میں کیا خسارہ دیکھنا آئینے کی آنکھ ہی کچھ کم نہ تھی میرے لئے جانے اب کیا کیا دکھائے گا تمہارا دیکھنا ایک مشتِ خاک اور وہ بھی ہوا کی زد میں ہے زندگی کی بے بسی کا استعارہ دیکھنا (پروین شاکر)
  10. ترے خیال سے لَو دے اٹھی ہے تنہائی شبِ فراق ہے یا تیری جلوہ آرائی تو کس خیال میں ہے منزلوں کے شیدائی اُنھیں بھی دیکھ جِنھیں راستے میں نیند آئی پُکار اے جرسِ کاروانِ صبحِ طرب بھٹک رہے ہیں اندھیروں میں تیرے سودائی ٹھہر گئے ہیں سرِ راہ خاک اُڑانے کو مسافروں کو نہ چھیڑ اے ہوائے صحرائی رہِ حیات میں کچھ مرحلے تو دیکھ لئے یہ اور بات تری آرزو نہ راس آئی یہ سانحہ بھی محبّت میں بارہا گزرا کہ اس نے حال بھی پوچھا تو آنکھ بھر آئی دلِ فسردہ میں پھر دھڑکنوں کا شور اُٹھا یہ بیٹھے بیٹھے مجھے کن دنوں کی یاد آئی میں سوتے سوتے کئی بار چونک چونک پڑا تمام رات ترے پہلوؤں سے آنچ آئی جہاں بھی تھا کوئی فتنہ تڑپ کے جاگ اُٹھا تمام ہوش تھی مستی میں تیری انگڑائی کھُلی جو آنکھ تو کچھ اور ہی سماں دیکھا وہ لوگ تھے، نہ وہ جلسے، نہ شہرِ رعنائی وہ تابِ درد وہ سودائے انتظار کہاں اُنہی کے ساتھ گئی طاقتِ شکیبائی پھر اس کی یاد میں دل بے قرار ہے ناصر بچھڑ کے جس سے ہوئی شہر شہر رسوائی *************** ناصر کاظمی
  11. چاندنی شب ہے ستاروں کی ردائیں سی لو عید آئی ہے بہاروں کی ردائیں سی لو چشم ساقی سے کہو تشنہ اُمیدوں کے لیے تُم بھی کچھ بادہ گُساروں کی ردائیں سی لو ہر برس سوزن تقدیر چلا کرتی ہے اب تو کُچھ سینہ فگاروں کی ردائیں سی لو لوگ کہتے ہیں تقدس کے سُبو ٹوٹیں گے جُھومتی رہگزاروں کی ردائیں سی لو قلرم خُلد سے ساغر کی صدا آتی ہے اپنے بے تاب کناروں کی ردائیں سی لو (ساغر صدیقی)
  12. ﻣﻮﮨﮯ ﭼﺎﻧﺪﯼ ﮐﯽ ﭘﺎﺋﻞ ﻣﻨﮕﺎ ﺩﻭ ﺳﺠﻦ ﺧﺎﻟﯽ ﭘﯿﺮﻭﮞ ﺳﮯ ﭘﻨﮕﮭﭧ ﮐﻮ ﻣﯿﮟ ﮐﯿﺎ ﭼﻠﻮﮞ ﺍﭘﻨﯽ ﺳﮑﮭﯿﻮﮞ ﮐﻮ ﺩﯾﮑﮭﻮﮞ ﺗﻮ ﻣﻦ ﻣﯿﮟ ﺟﻠﻮﮞ ﻭﮦ ﺗﻮ ﻧﺎﭼﯿﮟ ﻣﯿﮟ ﺷﺮﻣﺎ ﮐﮯ ﻣُﻨﮧ ﭘﮭﯿﺮ ﻟﻮﮞ ﻣﻮﮨﮯ ﭘﻨﮕﮭﭧ ﮐﯽ ﺭﺍﻧﯽ ﺑﻨﺎ ﺩﻭ ﺳﺠﻦ ﻣﻮﮨﮯ ﭼﺎﻧﺪﯼ ﮐﯽ ﭘﺎﺋﻞ ﻣﻨﮕﺎ ﺩﻭ ﺳﺠﻦ ﮐﻞ ﮐﻮ ﻣﯿﻠﮧ ﻟﮕﮯ ﮔﺎ ﺳﺠﻦ ﮔﺎﺅﮞ ﻣﯿﮟ ﮨﻮﮔﯽ ﺟﮭﻨﮑﺎﺭ ﮨﺮ ﺁﻡ ﮐﯽ ﭼﮭﺎﺅﮞ ﻣﯿﮟ ﭘﮭﺮ ﺗﻮ ﮐﺎﻧﭩﮯ ﭼﺒﮭﯿﮟ ﮔﮯ ﻣﺮﮮ ﭘﺎﺅﮞ ﻣﯿﮟ ﻣﯿﺮﮮ ﻗﺪﻣﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﭼﺎﻧﺪﯼ ﺑﭽﮭﺎ ﺩﻭ ﺳﺠﻦ ﻣﻮﮨﮯ ﭼﺎﻧﺪﯼ ﮐﯽ ﭘﺎﺋﻞ ﻣﻨﮕﺎ ﺩﻭ ﺳﺠﻦ ﺍﺏ ﺗﻮ ﭘﺎﺋﻞ ﺑِﻨﺎﮞ ﮐﻞ ﻧﮧ ﭘﺎﺅﮞ ﮔﯽ ﻣﯿﮟ ﺗﻮ ﺳﮯ ﭼﺎﻧﺪﯼ ﮐﯽ ﭘﺎﺋﻞ ﻣﻨﮕﺎﺅﮞ ﮔﯽ ﻣﯿﮟ ﺍﭘﻨﯽ ﺳﮑﮭﯿﻮﮞ ﺳﮯ ﺁﻧﮑﮭﯿﮟ ﻣﻼﺅﮞ ﮔﯽ ﻣﯿﮟ ﭘﯿﺎﺭ ﮐﮯ ﭘﻨﮑﮫ ﻣﺠﮫ ﮐﻮ ﻟﮕﺎ ﺩﻭ ﺳﺠﻦ ﻣﻮﮨﮯ ﭼﺎﻧﺪﯼ ﮐﯽ ﭘﺎﺋﻞ ﻣﻨﮕﺎ ﺩﻭ ﺳﺠﻦ ___________________________قتیل شفائی !!!
  13. Zarnish Ali

    main us kay hath na aoo

    میں اس کے ہاتھ نہ آؤں اور وہ میرا ہو کے رہے میں گر پڑوں تومیری پستیوں کا ساتھی ہو افتخارعارف دیار نور میں تیرہ شبوں کا ساتھی ہو کوئی تو ہو جو میری وحشتوں کا ساتھی ہو میں اس سے جھوٹ بھی بولوں تو مجھ سے سچ بولے میرے مزاج کے سب موسموں کا ساتھی ہو میں اس کے ہاتھ نہ آؤں اور وہ میرا ہو کے رہے میں گر پڑوں تومیری پستیوں کا ساتھی ہو وہ میرے نام کی نسبت سے معتبر ٹھہرے گلی گلی میری رسوائیوں کا ساتھی ہو کرے کلام مجھ سے تو میرے لہجے میں میں چپ رہوں تو میرے تیوروں کا ساتھی ہو میں اپنے آپ کو دیکھوں اور وہ مجھ کو دیکھے جائے وہ میرے نفس کی گمراہیوں کا ساتھی ہو وہ خواب دیکھے تو دیکھے میرے حوالے سے میرے خیال کے سب منظروں کا ساتھی ہو
  14. ایک بار کھیلےتو، وہ مِری طرح اور پھر جِیت لے وہ ہر بازی مجھ کو مات ہوجائے پروین شاکر عُمر کا بھروسہ کیا، پَل کا ساتھ ہوجائے ایک بار اکیلے میں، اُس سے بات ہوجائے دِل کی گُنگ سرشاری اُس کو جِیت لے، لیکن عرضِ حال کرنے میں احتیاط ہوجائے ایسا کیوں کہ جانے سے صرف ایک اِنساں کے ! ساری زندگانی ہی، بے ثبات ہوجائے یاد کرتا جائے دِل، اور کِھلتا جائے دِل اوس کی طرح کوئی پات پات ہوجائے سب چراغ گُل کرکے اُس کا ہاتھ تھاما تھا کیا قصور اُس کا، جو بَن میں رات ہوجائے ایک بار کھیلےتو، وہ مِری طرح اور پھر جِیت لے وہ ہر بازی مجھ کو مات ہوجائے رات ہو پڑاو کی پھر بھی جاگیے ورنہ ! آپ سوتے رہ جائیں، اور ہات ہوجائے
  15. Zarnish Ali

    Khwaba hi khwab tha

    Khwaba hi khwab tha خواب ہی خواب تھا، تصویریں ہی تصویریں تھیں یہ ترا لطف، ترے مہر و محبت، لیکن تیرے جانے سے یہ جینے کے بہانے بھی چلے تجھ کو ہونا تھا کسی روز تو رخصت لیکن اپنا جینا بھی کوئی دن ہے، ہمیشہ کا نہیں تو نے کچھ روز تو دی زیست کی لذّت لیکن پھر وہی دشت ہے، دیوانگئ دل بھی وہی پھر وہی شام، وہی پچھلے پہر کا رونا اب تری دید، نہ وہ دور کی باتیں ہوں گی......................... ابن انشا
  16. Zarnish Ali

    suna hai zameen par wohi loog

    ﺳﻨﺎ ﮨﮯ ﺯﻣﯿﮟ ﭘﺮ ﻭﮨﯽ ﻟﻮﮒ ﻣﻠﺘﮯ ﮨﯿﮟ ﺟﻦ ﮐﻮ ﮐﺒﮭﯽ ﺁﺳﻤﺎﻧﻮﮞ ﮐﮯ ﺍُﺱ ﭘﺎﺭ ﺭﻭﺣﻮﮞ ﮐﮯ ﻣﯿﻠﮯ ﻣﯿﮟ ﺍﮎ ﺩﻭﺳﺮﮮ ﮐﯽ ﻣﺤﺒﺖ ﻣﻠﯽ ﮨﻮ ﻣﮕﺮ ﺗﻢ ۔۔۔۔ ﮐﮧ ﻣﯿﺮﮮ ﻟﯿﮯ ﻧﻔﺮﺗﻮﮞ ﮐﮯ ﺍﻧﺪﮬﯿﺮﮮ ﻣﯿﮟ ﮨﻨﺴﺘﯽ ﮨﻮﺋﯽ ﺭﻭﺷﻨﯽ ﮨﻮ ﻟﮩﻮ ﻣﯿﮟ ﺭﭼﯽ ! ﺭﮔﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﺑﺴﯽ ﮨﻮ ﮨﻤﯿﺸﮧ ﺳﮑﻮﺕ ِ ﺷﺐ ِ ﻏﻢ ﻣﯿﮟ ﺁﻭﺍﺯ ِ ﺟﺎﮞ ﺑﻦ ﮐﮯ ﭼﺎﺭﻭﮞ ﻃﺮﻑ ﮔﻮﻧﺠﺘﯽ ﮨﻮ ﺍﮔﺮ ﺁﺳﻤﺎﻧﻮﮞ ﮐﮯ ﺍُﺱ ﭘﺎﺭ ﺭﻭﺣﻮﮞ ﮐﮯ ﻣﯿﻠﮯ ﻣﯿﮟ ﺑﮭﯽ ﻣﻞ ﭼﮑﯽ ﮨﻮ ﺗﻮ ﭘﮭﺮ ﺍﺱ ﺯﻣﯿﮟ ﭘﺮ ﻣﺮﯼ ﭼﺎﮨﺘﻮﮞ ﮐﮯ ﮐﮭﻠﮯ ﻣﻮﺳﻤﻮﮞ ﺳﮯ ﮔﺮﯾﺰﺍﮞ ﻣﺮﯼ ﺩﮬﻮﭖ ﭼﮭﺎﺅﮞ ﺳﮯ ﮐﯿﻮﮞ ﺍﺟﻨﺒﯽ ﮨﻮ ﮐﺘﺎﺑﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﻟﮑﮭﯽ ﮨﻮﺋﯽ ﺍﻭﺭ ﮐﺎﻧﻮﮞ ﺳﻨﯽ ﺳﺎﺭﯼ ﺑﺎﺗﯿﮟ ﻏﻠﻂ ﮨﯿﮟ ﮐﮧ ﺗﻢ ﺩﻭﺳﺮﯼ ﮨﻮ ﻣﺤﺴﻦ ﻧﻘﻮﯼ
  17. میری زندگی میں بس اک کتاب ہے، اک چراغ ہے ایک خواب ہے اور تم ہو میں یہ چاہتا تھا یہ کتاب و خواب کے درمیان جو منزلیں ہیں تمھارے ساتھ بسر کروں یہی کل اثاثہ زندگی ہے اسی کو زادِ سفر کروں کسی اور سمت نظر کروں تو میری دعا میں اثر نہ ہو میرے دل کے جادہٴ خوش خبر پہ بجز تمھارے کبھی کسی کا گزر نہ ہو مگر اس طرح کے تمہیں بھی اسکی خبر نہ ہو اسی احتياط میں ساری عمر گزر گئی وہ جو آرزو تھی کتاب و خواب کے ساتھ تم بھی شریک ہو، وہی مر گئی اسی کشمکش نے کئی سوال اٹھاے ہیں وہ سوال جن کا جواب میری کتاب میں ہے نہ خواب میں مرے دل کے جادہٴ خوش خبر کے رفیق تم ہی بتاؤ پھر کے یہ كاروبارِ حیات کس کے حساب میں مری زندگی میں بس اک کتاب ہے اک چراغ ہے اک خواب ہے اور تم ہو (شاعر: افتخار عارف)
  18. Zarnish Ali

    2 lin poetry Anwar masood

    آؤ اس کے اصل گورے رنگ سے اب تصوّر میں ملاقاتیں کریں آؤ پھر ماضی کی یادیں چھیڑ دیں آؤ خالص دودھ کی باتیں کریں انور مسعود جو چوٹ بھی لگی ہے وہ پہلے سے بڑھ کے تھی ہر ضربِ کربناک پہ میں تِلمِلا اُٹھا پانی کا، سوئی گیس کا، بجلی کا، فون کا بِل اتنے مل گئے ہیں کہ میں بلبلا اُٹھا انور مسعود
  19. Zarnish Ali

    dakhta hai...

    ﺍٓﺳﻤﺎﮞ ﺟﮭﯿﻞ ﮐﮯ ﭘﯿﺎﻟﮯ ﺳﮯ ﻣﺠﮭﮯ ﺩﯾﮑﮭﺘﺎ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﮐﺒﮭﯽ ﭼﺎﻧﺪ ﮐﮯ ﮨﺎﻟﮯ ﺳﮯ ﻣﺠﮭﮯ ﺩﯾﮑﮭﺘﺎ ﮨﮯ ﮨﺮ ﮐﻮﺋﯽ ﺍﭘﻨﮯ ﻃﺮﯾﻘﮯ ﺳﮯ ﻣﺠﮭﮯ ﺳﻮﭼﺘﺎ ﮨﮯ ﮨﺮ ﮐﻮﺋﯽ ﺍﭘﻨﮯ ﺣﻮﺍﻟﮯ ﺳﮯ ﻣُﺠﮭﮯ ﺩﯾﮑﮭﺘﺎ ﮨﮯ ﺍﻋﺘﺒﺎﺭ ﺍﯾﺴﮯ ﺍُﭨﮭﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ، ﻣِﺮﺍ ﺳﺎﯾﮧ ﺑﮭﯽ ﺭﺍﺕ ﺩﻥ ﺩﺭﺩ ﮐﮯ ﺟﺎﻟﮯ ﺳﮯ ﻣُﺠﮭﮯ ﺩﯾﮑﮭﺘﺎ ﮨﮯ ﺩﺷﺖ ﺍِﮎ ﺍﻭﺭ ﻣِﺮﯼ ﺭﮦ ﻣِﯿﮟ ﺑﭽﮭﺎ ﺩﯾﺘﺎ ﮨﮯ ﻋﺸﻖ ﺟﺐ ﺭُﻭﺡ ﮐﮯ ﭼﮭﺎﻟﮯ ﺳﮯ ﻣُﺠﮭﮯ ﺩﯾﮑﮭﺘﺎ ﮨﮯ ﺩﺭﺩ ﮨﻮﮞ ، ﺧُﻮﺏ ﭼﻤﮑﺘﺎ ﮨُﻮﮞ ﺳﺘﺎﺭﮮ ﮐﯽ ﻃﺮﺡ ﺟﺐ ﮐﻮﺋﯽ ﺩﻝ ﮐﮯ ﺍُﺟﺎﻟﮯ ﻣِﯿﮟ ﻣُﺠﮭﮯ ﺩﯾﮑﮭﺘﺎ ﮨﮯ ﻓﺮﺣﺖ ﻋﺒﺎﺱ ﺷﺎﮦ
  20. Zarnish Ali

    poetry main dosti kay ajab...

    ﻣﯿﮟ ﺩﻭﺳﺘﯽ ﮐﮯ ﻋﺠﺐ ﻣﻮﺳﻤﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﺭﮨﺘﺎ ﮨﻮﮞ ﮐﺒﮭﯽ ﺩﻋﺎﺅﮞ، ﮐﺒﮭﯽ ﺳﺎﺯﺷﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﺭﮨﺘﺎ ﮨﻮﮞ ﺟﻮ ﺗﻢ ﺫﺭﺍ ﺳﺎ ﺑﮭﯽ ﺑﺪﻟﮯ، ﺗﻮ ﺟﺎﻥ ﻟﮯ ﻟﻮﮞ ﮔﺎﮦ ﻣﯿﮟ ﮐﭽﮫ ﺩﻧﻮﮞ ﺳﮯ ﻋﺠﺐ ﻭﺍﮨﻤﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﺭﮨﺘﺎ ﮨﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﺟﺲ ﻃﺮﺡ ﺳﮯ ﮐﺒﮭﯽ ﺩُﺷﻤﻨﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﺭﮨﺘﺎ ﺗﮭﺎ ﺍُﺳﯽ ﻃﺮﺡ ﺳﮯ ﺍﺑﮭﯽ ﺩﻭﺳﺘﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﺭﮨﺘﺎ ﮨﻮﮞ ﻗﺪﻡ ﻗﺪﻡ ﭘﮧ ﮨﯿﮟ ﺑﮑﮭﺮﮮ ﮨﻮﺋﮯ ﻧﻘﻮﺵ ﻣﺮﮮ ﻣﯿﮟ ﺗﯿﺮﮮ ﺷﮩﺮ ﮐﮯ ﺳﺐ ﺭﺍﺳﺘﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﺭﮨﺘﺎ ﮨﻮﮞ ﮐﯿﺎ ﮨﮯ ﻓﯿﺼﻠﮧ ﺟﺐ ﺳﮯ ﭼﺮﺍﻍ ﺑﻨﻨﮯ ﮐﺎ ﻣﯿﮟ ﺍﻋﺘﻤﺎﺩ ﺳﮯ ﺍﺏ ﺁﻧﺪﮬﯿﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﺭﮨﺘﺎ ﮨﻮﮞ ﺗﻤﮩﺎﺭﮮ ﺑﻌﺪ ﯾﮧ ﺩﻥ ﺗﻮ ﮔﺬﺭ ﮨﯽ ﺟﺎﺗﺎ ﮨﮯ ﻣﯿﮟ ﺷﺐ ﮐﻮ ﺩﯾﺮ ﺗﻠﮏ ﺁﻧﺴﻮﺅﮞ ﻣﯿﮟ ﺭﮨﺘﺎ ﮨﻮﮞ ﻋﺎﻃﻒؔ ﺳﻌﯿﺪ
  21. Zarnish Ali

    Beautiful Art

    Superb
  22. Kese hain app sab loogh . New competition Best Quote Sharing Fundayforum (FDF) mai Shoro Kiya ja raha hai. Yahan Sirf app ny apni pasandedeh Quotes Share kerne hain. Quote kuch b hu sakte hain islamic, life, love, about anything but no poetry. Or jis ko Sab se zayada milain gye Wo Winner huga. App post like ker sakte hain but winner wohi huga jis k sab se zayada hun gye. So Lets Begin and Share Quotes and others. No Image Quote Allowed - Only Text Quotes Allowed In Urdu or English. Vote kerne k tareeqa simple hy. Her post Answer k sath ap ko Up and Down Arrow nazar ayain gye Ager ap ko quote pasand aya tu UP arrow click kerain werna Down Arrow se app na pasandeedagi ka vote cast ker sakte. jese jese jis answer k vote sab se zayada hute jain gye wo post 2nd number per aa jaye gi. Tu hu jao Shoro How to vote see here.
×