Jump to content
Search In
  • More options...
Find results that contain...
Find results in...

Search the Community

Showing results for tags 'tum'.



More search options

  • Search By Tags

    Type tags separated by commas.
  • Search By Author

Content Type


Forums

  • Help Support
    • Announcement And Help
    • Funday Chatroom
  • Poetry
    • Shair o Shairy
    • Famous Poet
  • Islam - اسلام
    • QURAN O TARJUMA قرآن و ترجمہ
    • AHADEES MUBARIK آحدیث مبارک
    • Ramazan ul Mubarik - رمضان المبارک
    • Deen O Duniya - دین و دنیا
  • Other Forums
    • Quizzes
    • Movies and Stars
    • Chit chat And Greetings
    • Urdu Adab
    • Entertainment
    • Common Rooms
  • Science, Arts & Culture
    • Education, Science & Technology
  • IPS Community Suite
    • IPS Community Suite 4.1
    • IPS Download
    • IPS Community Help/Support And Tutorials

Blogs

There are no results to display.

There are no results to display.

Categories

  • IPS Community Suite 4.4
    • Applications 4.4
    • Plugin 4.4
    • Themes/Ranks
    • IPS Languages 4.4
  • IPS Community Suite 4.3
    • Applications 4.3
    • Plugins 4.3
    • Themes 4.3
    • Language Packs 4.3
    • IPS Extras 4.3
  • IPS Community Suite 4
    • Applications
    • Plugins
    • Themes
    • Language Packs
    • IPS Extras
  • Books
    • Urdu Novels
    • Islamic
    • General Books
  • XenForo
    • Add-ons
    • Styles
    • Language Packs
    • Miscellaneous XML Files
  • Web Scripts
  • PC Softwares
  • Extras

Categories

  • Islamic
  • WhatsApp Status
  • Funny Videos
  • Movies
  • Songs
  • Seasons
  • Online Channels

Find results in...

Find results that contain...


Date Created

  • Start

    End


Last Updated

  • Start

    End


Filter by number of...

Joined

  • Start

    End


Group


Facebook ID


FB Page/Group URL


Bigo Live


Website URL


Instagram


Skype


Interests


Location


ZODIAC

Found 37 results

  1. 'Mere Paas Tum Ho' has been penned by Khalil-ur-Rehman Qamar and directed by Nadeem Baig.
  2. Written by Khalil-ur-Rehman Qamar, the drama serial features Humayun Saeed, Adnan Siddiqui and Ayeza Khan in lead roles
  3. Zainab Abbas shoots alongside Adnan Siddiqui, shares excitement for 'Mere Paas Tum Ho'It looks everyone is awaiting the last episode of Mere Paas Tum Ho with bated breath, including famed sports presenter Zainab Abbas who took to social media to share her excitement for the drama serial’s finale to air soon. Uploading a picture alongside renowned actor Adnan Siddiqui who plays the character of Shehwar in the show, Zainab wrote: “Today’s shoot with Shehwar! All geared up for PSL and the grand finale of MPTH!” In the picture, Zainab can be seen clad in a white powersuit striking a pose alongside Adnan, both smiling to the camera widely. Meanwhile, Ayeza Khan was also seen with Adnan Siddiqui at a recent event looking beautiful as always.
  4. Notorious script-writer Khalil-ur-Rehman Qamar has cooked up a storm and fallen prey to immense backlash after it was revealed that he has tied the knot for the second time. The writer who was previously called out for his highly misogynistic remarks in an interview earlier has reportedly gotten married to actress Eshal Fayaz who plays a leading role in drama serial Kaaf Kangana. In a recent interview with famed journalist Sohail Warraich, it was confirmed by Khalil’s family that he has in fact tied the knot. During an appearance on Geo News talk show Aik Din Geo Kay Sath Sohail, Khalil’s first wife, while lavishing praises on her husband said that he is a very caring husband and father. When Sohail Warraich inquires about the fact that Khalil has now married for the second time, she said, “Yeh 24 hours hamaray sath hi hotay hain, beech main ghatna do ghanta jatay hain [He spends time with us all day, and goes (to her) for just an hour or two in between].” Khalil’s daughter then said sarcastically, “Beech main ghaib ho jatay hain [He disappears all of a sudden]," hinting that he goes to time to spend time with his second wife. While Khalil's family did not mention Eshal, they did however confirm that he has gotten married for the second time indeed. Khalil-ur-Rehman Qamar’s recent piece of work Mere Paas Tum Ho is currently on-air and has drawn considerable amount of flak for its portrayal of women in the society. Now, people are slamming the writer for his hypocrisy and for him being a womanizer, something which even his wife agreed to saying, “Aurton k har waqt call aati hai, aur kuch yeh bhi dil phaink hain. [Women call him all the time, and he too is a womanizer.]” Watch the full interview here
  5. 'Mere Paas Tum Ho' star Ayeza Khan had received offer from Bollywood: reportPakistani TV actor Ayeza Khan was offered to work in Bollywood and was also interested in grabbing the role, however, the opportunity was quashed after Pakistan and India relations worsened. The Mere Paas Tum Ho actor disclosed this in an interview with host Ahsan Khan last year. Ayeza, who is riding high with her controversial role in Mere Paas Tum Ho, said “I was contacted by director Imtiaz Ali for one of his films. I was interested in it too, however, due to deteriorated Pak-India relations it could not be possible.” In the same program, Ahsan Khan revealed that Bollywood director Sanjay Leela Bhansali also wanted to cast Ayeza Khan in one of his films. Bhansali had also been in talks about roping Ayeza Khan, Ahsan added. It is pertinent to mention here that the Mere Paas Tum Ho star has yet to work in any film from either of the neighboring countries. However, her fans are hopeful to see her on big screens soon.
  6. Ayeza Khan's 'Meray Paas Tum Ho' trends yet again as Twitter was left amused after Saturday's episodeHumayun Saeed, Ayeza Khan and Adnan Siddiqui's Meray Pass Tum Ho has recently begun trending yet again as Twitter was sent into fits of laughter and amusement after Saturday's episode hit main stream TV. Some fans were floored by dialogues while others turned to creating hilarious memes at the show's expense. One of the most top trending posts featured a rented car which, eagle-eyed observers noted to be rented from a car rental page online. A screenshot of the ad was posted side by side to the car's license plate in the drama. One user captioned his post with the following words, "Pakistanis are better researchers then NASA #MerePaasTumHo." Others took to the show's recent plot twists with a fine tooth comb, asking what the previous episode was even about while one user questioned the emotional availability of Shehvar's wife. Lamenting over the situation in the country and the public's extensive interest in dramas, another user pointed out a sad truth about Pakistani citizens, they were quoted saying, "If our people take Pakistan's progress as seriously as they take drama's, we would have made progress by now. Some Twitter users took a jab at the show in the most light-hearted of ways.
  7. [embed_video1 url=http://stream.jeem.tv/vod/c38e3192cbf4632ce3446dd6f7331b51.mp4/playlist.m3u8?wmsAuthSign=c2VydmVyX3RpbWU9MTEvNy8yMDE5IDEyOjA4OjE1IFBNJmhhc2hfdmFsdWU9a0Q0SDRmejJDemFCMGZsRzMvZzFadz09JnZhbGlkbWludXRlcz02MCZpZD0x...
  8. تم کہ سنتے رہے اوروں کی زبانی لوگو ہم سُناتے ہیں تمہیں اپنی کہانی لوگو کون تھا دشمنِ جاں وہ کوئی اپنا تھا کہ غیر ہاں وہی دُشمنِ جاں دلبرِ جانی لوگو زُلف زنجیر تھی ظالم کی تو شمشیر بدن رُوپ سا رُوپ جوانی سی جوانی لوگو سامنے اُسکے دِکھے نرگسِ شہلا بیمار رُو برو اُسکے بھرے سَرو بھی پانی لوگو اُسکے ملبوس سے شرمندہ قبائے لالہ اُس کی خوشبو سے جلے رات کی رانی لوگو ہم جو پاگل تھے تو بے وجہ نہیں تھے پاگل ایک دُنیا تھی مگر اُس کی دِوانی لوگو ایک تو عشق کیا عشق بھی پھر میر سا عشق اس پہ غالب کی سی آشفتہ بیانی لوگو ہم ہی سادہ تھے کِیا اُس پہ بھروسہ کیا کیا ہم ہی ناداں تھے کہ لوگوں کی نہ مانی لوگو ہم تو اُس کے لئے گھر بار بھی تج بیٹھے تھے اُس ستمگر نے مگر قدر نہ جانی لوگو کس طرح بھُول گیا قول و قسم وہ اپنے کتنی بے صرفہ گئی یاد دہانی لوگو اب غزل کوئی اُترتی ہے تو نوحے کی طرح شاعری ہو گئی اب مرثیہ خوانی لوگو شمع رویوں کی محبت میں یہی ہوتا ھے رہ گیا داغ فقط دل کی نشانی لوگو ( احمد فراز ) AHMAD FRAZ
  9. View File Is dil mai base hu tum Novel by Anum Khan PDF Complete Download Is Dil Me Base Ho Tum by Anum Khan is Romantic Urdu Novel published online for Reading and PDF Download at Fundayforum. Is Dil Me Base Ho Tum Urdu Novel is based on story of 4 close friends who met again after 8 years and catch up with each other about these 8 years. They learn all the good and bitter things about their lives. They also give support to each other to resolve issues and problems. Is Dil Me Base Ho Tum is also story of Mustabashra Jamal & Ali Ayan Khan and Mahrosh Saeed & Murad Mansoor. We hope Fundayforum Readers will like this beautiful Urdu Romantic Novel and give their feedback. Submitter waqas dar Submitted 12/17/2018 Category Urdu Novels Writer/Author Anam Khan  
  10. 53 downloads

    Is Dil Me Base Ho Tum by Anum Khan is Romantic Urdu Novel published online for Reading and PDF Download at Fundayforum. Is Dil Me Base Ho Tum Urdu Novel is based on story of 4 close friends who met again after 8 years and catch up with each other about these 8 years. They learn all the good and bitter things about their lives. They also give support to each other to resolve issues and problems. Is Dil Me Base Ho Tum is also story of Mustabashra Jamal & Ali Ayan Khan and Mahrosh Saeed & Murad Mansoor. We hope Fundayforum Readers will like this beautiful Urdu Romantic Novel and give their feedback.
  11. تم اک گورکھ دهنده ہو کھیل کیا تم نے اَزَل سے یہ رَچا رکھا ہے رُوح کو جسم کے پِنجرے کا بنا کر قیدی اُس پہ پھر موت کا پہرا بھی بٹھا رکھا ہے دے کے تدبیر کے پنچھی کو اُڑانیں تم نے دامِ تقدیر بھی ہر سَمْت بچھا رکھا ہے کر کے آرائشیں کونین کی برسوں تم نے ختم کرنے کا بھی منصوبہ بنا رکھا ہے لامکانی کا بہرحال ہے دعویٰ بھی تمہیں نَحْنُ اَقْرَبْ کا بھی پیغام سنا رکھا ہے یہ بُرائی، وہ بھلائی، یہ جہنّم، وہ بہشت اِس اُلْٹ پھیر میں فرماؤ تو کیا رکھا ہے؟ جُرم آدم نے کِیا اور سزا بیٹوں کو ! عدل و انصاف کا مِعیار بھی کیا رکھا ہے دے کے انسان کو دنیا میں خلافت اپنی اک تماشا سا زمانے میں بنا رکھا ہے اپنی پہچان کی خاطر ہے بنایا سب کو سب کی نظروں سے مگر خود کو چُھپا رکھا ہے تم اک گورکھ دھندا ہو نِت نئے نقش بناتے ہو، مٹا دیتے ہو جانے کس جُرمِ تمنّا کی سزا دیتے ہو کبھی کنکر کو بنا دیتے ہو ہیرے کی کَنی کبھی ہیروں کو بھی مٹی میں مِلا دیتے ہو زندگی کتنے ہی مردوں کو عطا کی جس نے وہ مسیحا بھی صلیبوں پہ سجا دیتے ہو خواہشِ دید جو کر بیٹھے سرِ طُور کوئی طُور ہی برقِ تجلّی سے جلا دیتے ہو نارِ نمرُود میں ڈلواتے ہو خود اپنا خلِیل خود ہی پھر نار کو گُلزار بنا دیتے ہو چاہِ کنعان میں پھینکو کبھی ماہِ کنعاں نُور یعقوب کی آنکھوں کا بجھا دیتے ہو بیچو یُوسُف کو کبھی مِصْر کے بازاروں میں آخرِ کار شَہِ مِصْر بنا دیتے ہو جذب و مستی کی جو منزل پہ پہنچتا ہے کوئی بیٹھ کر دل میں اَنا الْحَق کی صدا دیتے ہو خود ہی لگواتے ہو پھر کُفْر کے فتوے اُس پر خود ہی منصُور کو سُولی پہ چڑھا دیتے ہو اپنی ہستی بھی وہ اِک روز گنوا بیٹھتا ہے اپنے دَرْشَن کی لگن جس کو لگا دیتے ہو کوئی رانجھا جو کبھی کَھوج میں نکلے تیری تم اسے جھنگ کے بیلے میں رُلا دیتے ہو جستجو لے کے تمہاری جو چلے قَیس کوئی اس کو مجنوں کسی لیلیٰ کا بنا دیتے ہو جَوْت سَسّی کے اگر مَن مِیں تمہاری جاگے تم اسے تپتے ہوئے تَھل میں جلا دیتے ہو سوہنی گر تم کو مہینوال تصوُّر کر لے اس کو بِپھری ہوئی لہروں میں بہا دیتے ہو خود جو چاہو تو سرِ عرش بُلا کر محبوب ایک ہی رات میں مِعراج کرا دیتے ہو تم اک گورکھ دھندا ہو آپ ہی اپنا پردہ ہو تم اک گورکھ دھندا ہو جو کہتا ہوں، مانا، تمہیں لگتا ہے بُرا سا پھر بھی ہے مجھے تم سے بہرحال گِلہ سا چُپ چاپ رہے دیکھتے تم عرشِ بریں پر تپتے ہوئے کَربَل میں مؐحمد کا نوا سا کِس طرح پلاتا تھا لہو اپنا وفا کو خود تین دنوں سے وہ اگرچہ تھا پیاسا دُشمن تو بہر طور تھے دُشمن مگر افسوس تم نے بھی فراہم نہ کِیا پانی ذرا سا ہر ظلم کی توفیق ہے ظالم کی وِراثَت مظلوم کے حصّے میں تسلّی نہ دلاسا کل تاج سجا دیکھا تھا جس شخص کے سَر پر ہے آج اُسی شخص کے ہاتھوں میں ہی کاسہ یہ کیا ہے اگر پُوچُھوں تو کہتے ہو جواباً اِس راز سے ہو سکتا نہیں کوئی شناسا تم اک گورکھ دھندا ہو حیرت کی اک دنیا ہو تم اک گورکھ دھندا ہو ہر ایک جا پہ ہو لیکن پَتا نہیں معلوم تمہارا نام سُنا ہے، نِشاں نہیں معلوم تم اک گورکھ دھندا ہو دل سے اَرمان جو نکل جائے تو جُگنُو ہو جائے اور آنکھوں میں سِمَٹ آئے تو آنسو ہو جائے جاپ یا ہُو کا جو بے ہُو کرے ہُو میں کھو کر اُس کو سُلطانیاں مِل جائیں، وہ باہُو ہو جائے بال بِیکا نہ کسی کا ہو چُھری نیچے حَلْقِ اَصغَر میں کبھی تِیر ترازُو ہو جائے تم اک گورکھ دھندا ہو کس قدر بے نیاز ہو تم بھی داستانِ دراز ہو تم بھی مرکزِ جستجوِ عالمِ رنگ و بُو دَم بہ دَم جلوَہ گر تُو ہی تُو چار سُو ہُو کے ماحول مِیں، کچھ نہیں اِلّا ہُو تم بہت دِلرُبا، تم بہت خُوبرُو عرش کی عظمتیں، فَرش کی آبرو تم ہو کونین کا حاصلِ آرزو آنکھ نے کر لیا آنسوؤں سے وُضو اب تو کر دو عطا دید کا اِک سَبُو آؤ پَردے سے تم آنکھ کے روبرو چند لمحے مِلن، دو گھڑی گفتگو نازؔ جَپتا پِھرے جا بجا کُو بہ کُو ... وَحْدَہٗ، وَحْدَہٗ، لَا شَریک لَهٗ
  12. تُم کو بھی خبر ھوگی آنسوؤں کی جھیلوں کے سُرمئی کناروں پر نیند کے پرندوں کی ڈار آ نہیں سکتی ! ھجر کی مُسافت میں پاؤں ٹوٹ جائیں تو وصل کے دیاروں کو خواب بھی نہیں جاتے دل میں نارسائی کا شور گُونجتا ھو تو جلتی بُجھتی آنکھوں سے کون خواب دیکھے گا! تم کو بھی خبر ھوگی وصل کی تمنا جب تیرگی میں سوتی ھے آنکھ جاگ جاتی ھے! خواب رنگ کچے ھیں آنکھ بہنے لگتی ھے، رنگ دُھلنے لگتے ھیں خواب اور اُمیدیں ساتھ چھوڑ جائیں تو زندگی نہیں چلتی تُم کو بھی خبر ھوگی تُم کو ھم بتائیں کیا !!
  13. خزاؤں کی اداسی ہے جو اب تک دل میں چھپائی ہے بہاروں کا حسین موسم کہیں سے ساتھ لانا تم یہ مانا اور بھی تم کو جہاں میں ہیں بہت سے غم مگر دنیا کے میلوں میں ہمیں بھول مت جانا تم میرے اشعار ہیں جتنے‘ تمہارے نام کرتا ہوں غزل میری سنو جب بھی‘ غزل میں ڈوب جانا تم اگر تم سے کبھی کوئی میرے بارے میں پوچھے تو فقط اتنی سی خواہش ہے‘ مجھے اپنا بتانا تم کوئی جب الوداعی موسموں کا ذکر چھیڑے نمی آنکھوں میں مت رکھنا‘ ہمیشہ مسکرانا تم
  14. خزاؤں کی اداسی ہے جو اب تک دل میں چھپائی ہے بہاروں کا حسین موسم کہیں سے ساتھ لانا تم یہ مانا اور بھی تم کو جہاں میں ہیں بہت سے غم مگر دنیا کے میلوں میں ہمیں بھول مت جانا تم میرے اشعار ہیں جتنے‘ تمہارے نام کرتا ہوں غزل میری سنو جب بھی‘ غزل میں ڈوب جانا تم اگر تم سے کبھی کوئی میرے بارے میں پوچھے تو فقط اتنی سی خواہش ہے‘ مجھے اپنا بتانا تم کوئی جب الوداعی موسموں کا ذکر چھیڑے نمی آنکھوں میں مت رکھنا‘ ہمیشہ مسکرانا تم
  15. بیوفائی کے سِتم تم کو سمجھ آجاتے کاش ! تم جیسا اگر ہوتا تمھارا کوئی نہ وہ مِلتا ہے نہ مِلنے کا اِشارہ کوئی کیسے اُمّید کا چمکے گا سِتارہ کوئی حد سے زیادہ، نہ کسی سے بھی محبّت کرنا جان لیتا ہے سدا ، جان سے پیارا کوئی بیوفائی کے سِتم تم کو سمجھ آجاتے کاش ! تم جیسا اگر ہوتا تمھارا کوئی چاند نے جاگتے رہنے کا سبب پُوچھا ہے کیا کہَیں ٹُوٹ گیا خواب ہمارا کوئی سب تعلّق ہیں ضرورت کے یہاں پر، مُحسنؔ نہ کوئی دوست، نہ اپنا، نہ سہارا کوئی محسؔن نقوی
  16. خوش حال سے تم بھی لگتے ہو۔۔ یوں افسردہ تو ہم بھی نہیں۔۔ پر جاننے والے جانتے ہیں، خوش ہم بھی نہیں، خوش تم بھی نہیں۔۔! تم اپنی خودی کے پہرے میں، اور دامِ غرور میں جکڑے ہوئے، ہم اپنے زعم کے نرغے میں، اَنا ہاتھ ہمارے پکڑے ہوئے، اک مدّت سے غلطاں پیچاں، تم ربط و گریز کے دھاروں میں، ہم اپنے آپ سے اُلجھے ہوئے، پچھتاوے کے انگاروں میں، محصورِ تلاطم آج بھی ہو، گو تم نے کنارے ڈھونڈ لیے، طوفان سے سنبھلے ہم بھی نہیں۔۔ کہنے کو سہارے ڈھونڈ لیے، خاموش سے تم ہم مُہر بہ لب، جُگ بِیت گئے ٹُک بات کیے، سنو کھیل ادھورا چھوڑتے ہیں، بِنا چال چلے بِنا مات کیے، جو بھاگتے بھاگتے تھک جائیں، وہ سائے رُک بھی سکتے ہیں۔۔ چلو توڑو قسم اقرار کریں۔۔ ہم دونوں جھک بھی سکتے ہیں۔۔???? ۔۔۔۔
  17. "Hamein Ab KhO Ke Kehta Hai Mujhe Tum Yaad Aate Ho,, ----------------------------------------------------------- " Kisi Ka Ho Ke Kehta Hai Mujhe Tum Yaad Aate Ho,, ----------------------------------------------------------- "Samandar Tha To Zor-o-Shor Se Bahata Tha Lehren,, ----------------------------------------------------------- " Ab Qatra Ho Ke Kehta Hai Mujhe Tum Yaad Aate Ho,, ----------------------------------------------------------- " Bayaan Karte Jo Haal e Dil To Youn Muskura Dete,, ----------------------------------------------------------- " Ab Wohi To Ke Kehta Hai Mujhe Tum Yaad Aate Ho,, ----------------------------------------------------------- " Na Pooch Uss Ki Bad'naseebi Ka Aalam Mohsin,, ----------------------------------------------------------- " Wo Mujh Ko KhO Ke Kehta Hai Mujhe Tum Yaad Aate Ho..............!!!!!! ----------------------------------------------
  18. Hareem Naz

    Tum AA jao

    IK BHEEGI SHAAM K SAYE ME, CHUPKE SE AGAR TUM AAJAO.. Ye Sham Suhani Ho Jaye Rangeen Kahani Ho Jaye Wo Bat Jo Hm Na Keh Paye Ankhon Ki Zubani Ho Jaye Koi Pyar Ki Batain Tm Chero Koi Pyar Ki Bat Sunain Hm Phir Pyar Krain Yun Hm Dono Yeh Rat Suhani Ho Jaye Main Bethon Tere Pehlu Me Kuch Dil Ki Batain Ho Jain Tm Ungliyan Phairo Balon Me Hm Meethi Neendain So Jain AIK BHEEGI SHAAM K SAYE ME, CHUPKE SE AGAR TUM AA JAO
  19. Akele chor jaty ho,Ye Tm acha nahi karty Hamara dil jalaty ho Ye Tum acha nahi kArty kaha b tha Muhabat hy Muhabat hi isy rakho Tamasha jo banaty ho Ye tum acha nahi kArty Uthaty ho Sar-e-Mehfil falak tak Tum Humay lekin Utha kar jo giraty ho ye Tum acha nahi kArty koi jo poch le Tumse k rishta kya hy ab Un se To Nazron ko jhukaty ho ye Tum acha nahi kArty Bikhar jayen andheron main sahara Tum hi dety ho Magar phir chor jaty ho ye Tum acha nahi karty.
×
×
  • Create New...