Jump to content
Urooj Butt

دلِ پُر شوق کو پہلو میں دبائے رکھا,

Recommended Posts

دلِ پُر شوق کو پہلو میں دبائے رکھا
تجھ سے بھی ھم نے تیرا پیار چھپائے رکھا

چھوڑ اس بات کو اے دوست کہ تجھ سے پہلے 
ھم نے کس کس کو خیالوں میں بسائے رکھا

غیرممکن تھی زمانے کے غموں سے فرصت 
پھر بھی ھم نے تیرا غم دل میں بسائے رکھا

پھول کو پھول نہ کہتے تو اسے کیا کہتے؟
کیا ھوا غیر نے کالر پہ سجائے رکھا

جانے کس حال میں ہیں, کونسےشہروں میں ھیں وہ؟
زندگی اپنی جنہیں ھم نے بنائے رکھا

ھائے کیا لوگ تھے, وہ لوگ, پری چہرہ لوگ
ھم نے جن کے لیے دنیا کو بھلائے رکھا

اب ملیں بھی تو نہ پہچان سکیں ھم انکو
جن کو اک عمر خیالوں میں بسائے رکھا

 

FB_IMG_14576188061456812.jpg

  • Like 2

Share this post


Link to post
Share on other sites

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!

Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.

Sign In Now

  • Recently Browsing   0 members

    No registered users viewing this page.

  • Forum Statistics

    1,934
    Total Topics
    8,057
    Total Posts
×