Jump to content
Urooj Butt

جو لوگ کچھ نہیں کرتے کمال کرتے ہیں

Rate this topic

Recommended Posts

‎نگاہ پھیر کے،،،،،،،، عذرِ وصال کرتے ہیں 
‎مجھے وہ الٹی چھری سے حلال کرتے ہیں

‎زبان قطع کرو،،،،،،،،، دل کو کیوں جلاتے ہو
‎اِسی سے شکوہ، اسی سے سوال کرتے ہیں

‎نہ دیکھی نبض، نہ پوچھا مزاج بھی تم نے
‎مریضِ غم کی،،، یونہی دیکھ بھال کرتے ہیں

‎میرے مزار کو وہ ٹھوکوں سے ٹھکرا کر
‎فلک سے کہتے ہیں یوں پائمال کرتے ہیں

‎پسِ فنا بھی،،،، میری روح کانپ جاتی ہے 
‎وہ روتے روتے جو آنکھوں کو لال کرتے ہیں

‎اُدھر تو کوئی نہیں جس سے آپ ہیں مصروف
‎اِدھر کو دیکھیے،،،،،،، ہم عرض حال کرتے ہیں

‎یہی ہے فکر کہ ہاتھ آئے تازہ طرزِ ستم
‎یہ کیا خیال ہے،، وہ کیا خیال کرتے ہیں

‎وہاں فریب و دغا میں کمی کہاں توبہ 
‎ہزار چال کی،، وہ ایک چال کرتے ہیں

‎نہیں ہے موت سے کم اک جہان کا چکر
‎جنابِ خضر،،،،، یونہی انتقال کرتے ہیں

‎چھری نکالی ہے مجھ پر عدو کی خاطر سے
‎پرائے واسطے،،،،،،،،،،، گردن حلال کرتے ہیں

‎یہاں یہ شوق، وہ نادان، مدعا باریک
‎انھیں جواب بتا کر،،، سوال کرتے ہیں

‎ہزار کام مزے کے ہیں داغ،،،، الفت میں 
‎جو لوگ کچھ نہیں کرتے کمال کرتے ہیں

 

FB_IMG_14596902059699495.jpg

  • Like 3

Share this post


Link to post
Share on other sites

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!

Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.

Sign In Now

  • Recently Browsing   0 members

    No registered users viewing this page.

  • Forum Statistics

    1,934
    Total Topics
    8,057
    Total Posts
×