Jump to content

Welcome to Fundayforum. Please register your ID or get login for more access and fun.

Signup  Or  Login

house fdf.png

ADMIN ADMIN

Captain Marvel Movie 2019

IMDb - 6.3/10 Rotten Tomatoes Description: Captain Marvel gets caught in the middle of a galactic war between two alien races. Initial release: March 8, 2019 (USA) Directors: Anna Boden, Ryan Fleck Budget: 152 million USD Music composed by: Pinar Toprak Screenplay: Anna Boden, Ryan Fleck, Nicole Perlman, Geneva Robertson-Dworet, Meg LeFauve, Liz Flahive, Carly Mensch
Watch and Download

Alita - Battle Angel 2019

IMDb: 7.6/10 Genre : Action, Science Fiction, Thriller, Romance Director : Robert Rodriguez Stars : Rosa Salazar, Christoph Waltz, Ed Skrein, Mahershala Ali, Jennifer Connelly LANGUAGE: Hindi (Cleaned) – English Quality: 720p HD-Camrip PLOT: Six strangers find themselves in a maze of deadly mystery rooms, and must use their wits to survive.
Watch and Download
Anabiya Haseeb

Hum Nay Mana Keh Taghaful Na Karo Gay Lekin..

Rate this topic

Recommended Posts

Aah Ko Chahiyay Ik Umr Asar Honay Tak 
Kon Jeeta Hai Teri Zulf Keh Sar Honay Tak 

Daam-E-Har Mauj Main Hai Halqa-E-Sad Kaam-E-Nehang 
Dekhain Kya Guzray Hai Qatray Peh Gauhar Honay Tak 

Aashiqee Sabr Talab Aur Tamanna Baitab 
Dil Ka Kya Rang Karoon Khoon-E-Jigar Honay Tak 

Hum Nay Mana Keh Taghaful Na Karo Gay Lekin 
Khaak Ho Jaayen Gay Hum Tum Ko Khabar Honay Tak 

Partau-E-Khoor Say Hai Shabnam Ko Fana Kee Taaleem 
Main Bhee Hoon Aik Inayat Kee Nazr Honay Tak 

Yak Nazr Baish Nahin Fursat-E-Hastee Ghafil 
Garmi-E-Bazm Hai Ik Raqs-E-Sharar Honay Tak 

Gham-E-Hastee Ka 'Asad' Phir Say Ho Juzmarg Ilaaj 
Shamma Har Rang Main Jaltee Hai Sehar Honay Tak ,,,,,

 

  • Like 3

Share this post


Link to post
Share on other sites

کیوں جل گیا نہ، تابِ رخِ یار دیکھ کر
جلتا ہوں اپنی طاقتِ دیدار دیکھ کر

آتش پرست کہتے ہیں اہلِ جہاں مجھے
سرگرمِ نالہ ہاۓ شرربار دیکھ کر

کیا آبروۓ عشق، جہاں عام ہو جفا
رکتا ہوں تم کو بے سبب آزار دیکھ کر

آتا ہے میرے قتل کو پَر جوشِ رشک سے
مرتا ہوں اس کے ہاتھ میں تلوار دیکھ کر

ثابت ہوا ہے گردنِ مینا پہ خونِ خلق
لرزے ہے موجِ مے تری رفتار دیکھ کر

وا حسرتا کہ یار نے کھینچا ستم سے ہاتھ
ہم کو حریصِ لذّتِ آزار دیکھ کر

بِک جاتے ہیں ہم آپ، متاعِ سخن کے ساتھ
لیکن عیارِ طبعِ خریدار دیکھ کر

زُنّار باندھ، سبحۂ صد دانہ توڑ ڈال
رہرو چلے ہے راہ کو ہموار دیکھ کر

ان آبلوں سے پاؤں کے گھبرا گیا تھا میں
جی خوش ہوا ہے راہ کو پُر خار دیکھ کر

کیا بد گماں ہے مجھ سے، کہ آئینے میں مرے
طوطی کا عکس سمجھے ہے زنگار دیکھ کر

گرنی تھی ہم پہ برقِ تجلّی، نہ طو ر پر
دیتے ہیں بادہ’ ظرفِ قدح خوار’ دیکھ کر

سر پھوڑنا وہ! ‘غالبؔ شوریدہ حال’ کا
یاد آگیا مجھے تری دیوار دیکھ کر

  • Like 1

Share this post


Link to post
Share on other sites

دل میرا سوزِ نہاں سے بے محابہ جل گیا
آتشِ خاموش کی مانند گویا جل گیا
دل میں ذوقِ وصل و یادِ یار تک باقی نہیں
آگ اس گھر کو لگی ایسی کہ جو تھا جل گیا
میں عدم سے بھی پرے ہوں ورنہ غافل بارہا
میری آہِ آتشیں سے بال عُنقا جل گیا
عرض کیجیئے جوہرِ اندیشہ کی گرمی کہاں
کچھ خیال آیا تھا وحشت کا، کہ صحرا جل گیا
دل نہیں، تجھ کو دکھاتا ورنہ، داغوں کی بہار
اس چراغاں کا کروں کیا؟ کار فرما جل گیا
میں ہوں اور افسردگی کی آرزو غالب! کہ دل
دیکھ کر طرزِ تپاکِ اہل دنیا، جل گیا
مرزا اسداللہ غالب

Share this post


Link to post
Share on other sites

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!

Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.

Sign In Now

  • Recently Browsing   0 members

    No registered users viewing this page.

  • Forum Statistics

    1,960
    Total Topics
    8,601
    Total Posts
×