Jump to content

Welcome to Fundayforum. Please register your ID or get login for more access and fun.

Signup  Or  Login

house fdf.png

ADMIN ADMIN

Gully Boy 2019

IMDB: 8.1/10 || Size: 406MB || Language: Hindi(Clean Audio) Genre: Drama, Music Quality: 480p PreDVD Director: Zoya Akhtar Writers: Zoya Akhtar, Reema Kagti Stars: Alia Bhatt, Ranveer Singh, Kalki Koechlin Storyline: A coming-of-age story based on the lives of street rappers in Mumbai.
Watch and Download

Alita - Battle Angel 2019

IMDb: 7.6/10 Genre : Action, Science Fiction, Thriller, Romance Director : Robert Rodriguez Stars : Rosa Salazar, Christoph Waltz, Ed Skrein, Mahershala Ali, Jennifer Connelly LANGUAGE: Hindi (Cleaned) – English Quality: 720p HD-Camrip PLOT: Six strangers find themselves in a maze of deadly mystery rooms, and must use their wits to survive.
Watch and Download
waqas dar

poetry Ashk Daman Mai Bhare Khuwab Kamar Per Rakhye

Rate this topic

Recommended Posts

Ashk Daman Mai Bhare Khuwab Kamar Per Rakhye

اشک دامن میں بھرے خواب کمر پر رکھا

Poet: Ahmad Mushtaq

اشک دامن میں بھرے خواب کمر پر رکھا

پھر قدم ہم نے تری راہ گزر پر رکھا

ہم نے ایک ہاتھ سے تھاما شب غم کا آنچل
اور اک ہاتھ کو دامان سحر پر رکھا

چلتے چلتے جو تھکے پاؤں تو ہم بیٹھ گئے
نیند گٹھری پہ دھری خواب شجر پر رکھا

جانے کس دم نکل آئے ترے رخسار کی دھوپ
مدتوں دھیان ترے سایۂ در پر رکھا

جاتے موسم نے پلٹ کر بھی نہ دیکھا مشتاقؔ
رہ گیا ساغر گل سبزۂ تر پر رکھا

WaltzLostDreams.jpg

  • Like 2

Share this post


Link to post
Share on other sites

کہیں امید سی ہے دل کے نہاں خانے میں 
ابھی کچھ وقت لگے گا اسے سمجھانے میں
موسمِ گل ہو کہ پت چھڑ ہو بلا سے اپنی
ہم کہ شامل ہیں نہ کھلنے میں نہ مرجھانے میں
ہم سے مخفی نہیں کچھ راہگزرِ شوق کا حال
ہم نے اک عمر گزاری ہے ہوا خانے میں
ہے یوں ہی گھومتے رہنے کا مزا ہی کچھ اور
ایسی لذّت نہ پہنچنے میں نہ رہ جانے میں
نئے دیوانوں کو دیکھیں تو خوشی ہوتی ہے 
ہم بھی ایسی ہی تھے جب آئے تھے ویرانے میں
موسم کا کوئی محرم ہو تو اس سے پوچھو
کتنے پت جھڑ ابھی باقی ہیں بہار آنے میں
احمد مشتاق

  • Like 2

Share this post


Link to post
Share on other sites

مل ہی جائے گا کبھی، دل کو یقیں رہتا ہے
وہ اسی شہر کی گلیوں میں کہیں رہتا ہے
جس کی سانسوں سے مہکتے تھے در و بام ترے
اے مکاں بول، کہاں اب وہ مکیں رہتا ہے
اِک زمانہ تھا کہ سب ایک جگہ رہتے تھے
اور اب کوئی کہیں کوئی کہیں رہتا ہے
روز ملنے پہ بھی لگتا تھا کہ جُگ بیت گئے
عشق میں وقت کا احساس نہیں رہتا ہے
دل فسردہ تو ہوا دیکھ کے اس کو لیکن 
عمر بھر کون جواں، کون حسیں رہتا ہے
احمد مشتاق
-----

  • Like 2

Share this post


Link to post
Share on other sites

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!

Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.

Sign In Now

  • Recently Browsing   0 members

    No registered users viewing this page.

  • Forum Statistics

    1,923
    Total Topics
    8,508
    Total Posts
×