Jump to content

Recommended Posts

فرحت عباس شاہ

میرا شام سلونا شاہ پیا ♡

کبھی جڑوں میں زہر اتار لِيا 
کبھی لبوں کے پیچھے مار لِيا 
اس ڈر سے کہ دُکھ کی شدت میں 
کہیں نکل نہ جائے آہ پِيا

ميرا شام سلونا شاہ پِيا ♡

ہمیں جنگل جنگل بھٹکا دو 
ہمیں سُولی سُولی لٹکا دو 
جو جی چاہے سو يار کرو 
ہم پڑ جو گئے تيری راہ پِيا

ميرا شام سلونا شاہ پِيا ♡

تيری شکل بصارت آنکھوں کی 
تيرا لمس رياضت ہاتھوں کی 
تيرا نام لبوں کی عادت ہے 
ميری اک اک سانس گواہ پِيا

ميرا شام سالونا شاہ پِيا ♡

کہیں روح میں پياس پُکارے گی 
کہیں آنکھ میں آس پُکارے گی 
کہیں خون کہیں دل بولے گا 
کبھی آنا مقتل گاہ پِيا

ميرا شام سلونا شاہ پِيا ♡ 
ہمیں مار گئی تيری چاہ پِيا ♡

sham salona.jpg

Share this post


Link to post
Share on other sites

میرا اصل اصیل اداس پیا 
دل جانی رمز شناس پیا

کبھی آ مل تنہا لوگوں سے
میرے خاصوں میں بھی خاص پیا

تیری دید زیارت آنکھوں کی
تیری دوری دشت کی پیاس پیا

تیرا لمس ہوا کی سسکی میں
تیری پھولوں میں بھی باس پیا

میں مٹی بارش ترسی ہوں 
تو آوارا اک بدلی سا

کبھی برس میرے بھی دامن پر 
میری جل جائے گی گھاس پیا

اک تیرے گرد ہیں گردش میں
میری سوچ بچار قیاس پیا

میرا اصل اصیل اداس پیا
دل جانی رمز شناس پیا

  • Like 1

Share this post


Link to post
Share on other sites

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!

Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.

Sign In Now

  • Recently Browsing   0 members

    No registered users viewing this page.

  • Forum Statistics

    1,929
    Total Topics
    8,050
    Total Posts
×