Jump to content

Please Disable Your Adblocker. We have only advertisement way to pay our hosting and other expenses.  

Recommended Posts

Dil Hai Be-Khabar, Zara Hosla
دلِ بے خبر ، ذرا حوصلہ 
نہیں مُستقِل کوئی مَرحلہ

کوئی ایسا گھر بھی ھے شہر میں
جہاں ھر مکین ھو مطمئن
کوئی ایسا دن بھی کہیں پہ ھے
جسے خوفِ آمدِ شب نہیں
یہ جو گردبادِ زمان ھے
یہ ازل سے ھے کوئی اب نہیں

دلِ بے خبر ، ذرا حوصلہ 
نہیں مُستقِل کوئی مَرحلہ

یہ جو خار ھیں تیرے پاؤں میں
یہ جو زخم ھیں تیرے ھاتھ میں
یہ جو خواب پھرتے ھیں دَر بہ دَر
یہ جو بات اُلجھی ھے بات میں

یہ جو لوگ بیٹھے ھیں جا بجا
کسی اَن بَنے سے دیار میں
سبھی ایک جیسے ھیں سر گراں
غَمِ زندگی کے فشار میں

یہ سراب ، یونہی سدا سے ھیں 
اِسی ریگزارِ حیات میں
یہ جو رات ھے تیرے چار سُو
نہیں صرف تیری ھی گھات میں

دلِ بے خبر ، ذرا حوصلہ 
نہیں مُستقِل کوئی مَرحلہ

تیرے سامنے وہ کتاب ھے
جو بِکھر گئی ھے وَرَق وَرَق
ھمیں اپنے حصّے کے وقت میں
اِسے جَوڑنا ھے سَبق سَبق

ھیں عبارتیں ذرا مُختلف
مگر ایک اصلِ سوال ھے
جو سمجھ سکو ، تو یہ زندگی
کسی ھفت خواں کی مثال ھے

دلِ بے خبر، ذرا حوصلہ 
نہیں مُستقِل کوئی مَرحلہ

کیا عجب ، کہ کل کو یقیں بنے 
یہ جو مُضطرب سا خیال ھے
کسی روشنی میں ھو مُنقَلِب 
کسی سرخوشی کا نَقِیب ھو

یہ جو شب نُما سی ھے بے دِلی
یہ جو زرد رُو سا مَلال ھے۔

دلِ بے خبر، ذرا حوصلہ 
دِلِ بے خبر ، ذرا حوصلہ

امجد اسلام امجؔد

medium_IMG_4218.jpg

 

book of heart balloon of love love of life

Share this post


Link to post
Share on other sites

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!

Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.

Sign In Now

  • Recently Browsing   0 members

    No registered users viewing this page.

  • Forum Statistics

    1,829
    Total Topics
    8,186
    Total Posts
×