Jump to content

Welcome to Fundayforum. Please register your ID or get login for more access and fun.

Signup  Or  Login

house fdf.png

ADMIN ADMIN

Gully Boy 2019

IMDB: 8.1/10 || Size: 406MB || Language: Hindi(Clean Audio) Genre: Drama, Music Quality: 480p PreDVD Director: Zoya Akhtar Writers: Zoya Akhtar, Reema Kagti Stars: Alia Bhatt, Ranveer Singh, Kalki Koechlin Storyline: A coming-of-age story based on the lives of street rappers in Mumbai.
Watch and Download

Alita - Battle Angel 2019

IMDb: 7.6/10 Genre : Action, Science Fiction, Thriller, Romance Director : Robert Rodriguez Stars : Rosa Salazar, Christoph Waltz, Ed Skrein, Mahershala Ali, Jennifer Connelly LANGUAGE: Hindi (Cleaned) – English Quality: 720p HD-Camrip PLOT: Six strangers find themselves in a maze of deadly mystery rooms, and must use their wits to survive.
Watch and Download

Rate this topic

Recommended Posts

اب جو بچھڑے ہیں تو احساس ہوا ہے ہم کو

درد کیا ہوتا ہے تنہائی کسے کہتے ہیں

چار سو گونجتی رسوائی کسے کہتے ہیں

 

اب جو بچھڑے ہیں تو احساس ہوا ہے ہم کو

کوئی لمحہ ہو تِری یاد میں کھو جاتے ہیں

اب تو خود کو بھی میسر نہیں آپاتے ہیں

رات ہو دن ہو ترے پیار میں ہم بہتے ہیں

 

درد کیا ہوتا ہے تنہائی کسے کہتے ہیں

اَب جو بچھڑے ہیں تو احساس ہوا ہے ہم کو

 

جو بھی غم آئے اُسے دل پہ سہا کرتے تھے

ایک وہ وقت تھا ہم مل کے رہا کرتے تھے

اب اکیلے ہی زمانے کے ستم سہتے ہیں

 

درد کیا ہوتا ہے تنہائی کسے کہتے ہیں

اب جو بچھڑے ہیں تو احساس ہوا ہے ہم کو

ہم نے خوداپنے ہی رستے میں بچھائے کانٹے

گھر میں پھولوں کی جگہ لاکے سجائے کانٹے

زخم اس دِل میں بسائے ہوئے خود رہتے ہیں

 

درد کیا ہوتا ہے تنہائی کسی کہتے ہیں

اب جو بچھڑے ہیں تو احساس ہوا ہے ہم کو

یوں تو دنیا کی ہر اک چیزحسیں ہوتی ہے

پیار سے بڑھ کے مگر کچھ بھی نہیں ہوتی ہے

راستہ روک کے ہر اک سے یہی کہتے ہیں

 

اب جو بچھڑے ہیں تو احساس ہوا ہے ہم کو

درد کیا ہوتا ہے تنہائی کسے کہتے ہیں

چار سو گونجتی رسوائی کسے کہتے ہیں

اب جو بچھڑے ہیں تو……….!!

Screenshot_20190210_083145.png

  • Like 2

Share this post


Link to post
Share on other sites

 

طولِ شبِ فراق کا قصہ بیاں نہ ہو
خط یار کو لکھوں تو سیاہی رواں نہ ہو
مارا ہے ضبط نے مجھے عشقِ حبیب میں
مردہ مرا جلائیں تو اُس میں دھواں نہ ہو
صورت کوئی صفائی کی اب اے صنم! نہیں
جب تک ہمارے تیرے خدا درمیاں نہ ہو
اے آسماں نمود نہیں ہم کو چاہیے 
بعدِ فنا مزار کا اپنے نشاں نہ ہو
بلبل ہزار ذبح ہوں ٹوٹے نہ ایک گُل
صیّاد ہو چمن میں مگر باغباں نہ ہو
گلزار لطف و خلق شگفتہ رہے مدام
اس باغ کی بہار، الٰہی خزاں نہ ہو
عاشق تری گلی میں بہت خاک اڑاتے ہیں
اس سرزمیں کے گرد کہیں آسماں نہ ہو
دیر و حرم میں شیخ و برہمن رہیں خراب
ملتا ہے وہ کہاں، کہیں جس کا مکاں نہ ہو
سبزے پر اس ذقن کے نگہ جا کے رہ گئی
سچ کہتے ہیں کہ گھاس کے نیچے کنواں نہ ہو
نالوں کی بحث کا کسے آتش دماغ ہے
یا ہم نہ ہوویں یا جرسِ کارواں نہ ہ

  • Like 1

Share this post


Link to post
Share on other sites
واااااہ بہت خـــــــــوب ... بہت اعلیٰ

 

Share this post


Link to post
Share on other sites

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!

Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.

Sign In Now

  • Recently Browsing   0 members

    No registered users viewing this page.

  • Forum Statistics

    1,923
    Total Topics
    8,508
    Total Posts
×