Jump to content

Register now to gain access to all of our features. Once registered and logged in, you will be able to create topics, post replies to existing threads, give reputation to your fellow members, get your own private messenger, post status updates, manage your profile and so much more. If you already have an account, login here - otherwise create an account for free today!

Welcome to our forums
Welcome to our forums, full of great ideas.
Please register if you'd like to take part of our project.
Urdu Poetry & History
Here you will get lot of urdu poetry and history sections and topics. Like/Comments and share with others.
We have random Poetry and specific Poet Poetry. Simply click at your favorite poet and get all his/her poetry.
Thank you buddy
Thank you for visiting our community.
If you need support you can post a private message to me or click below to create a topic so other people can also help you out.

Ajwa Noor

Member
  • Content Count

    7
  • Joined

  • Last visited

Community Reputation

17 Neutral

4 Followers

About Ajwa Noor

  • Rank
    Popcorn Time

Recent Profile Visitors

1,119 profile views
  1. مُدّت سے کوئی جانبِ مقتل نہیں آیا قاتِل بھی توّقع سے پشیماں ہیں زیادہ جس تاج کو دیکھوں وہی کشکول نُما ہے اب کے تو فقیروں سے بھی سُلطاں ہیں زیادہ ہر ایک کو دعویٰ ہے یہاں، چارہ گری کا اب دِل کے اُجڑ جانے کے اِمکاں ہیں زیادہ احمد فراز
  2. Ajwa Noor   

    Welcome to Funday Forum Entertainment World.

    Please feel free to browse around and get to know the others. If you have any questions please don't hesitate to ask.

     

    Please click here and find out your name post at the end of last page of topic. So lets start your 1st post with your introduction. How about that :) 

     

    agchello2.gif.3a3d3caa66bf1cd3e07de35867

  3. ظلمت کدے میں میری شب غم کا جوش ہے اک شمع ہے دلیل سحر سو خاموش ہے داغ فراق صحبت شب کی جلی ہوئی اک شمع رہ گئی ہے سو وہ بھی خاموش ہے آتے ہیں غیب سے یہ مضامین خیال میں غالب سریر خامہ نوائے سروش ہے ظلمت کدے میں میری شب غم کا جوش ہے اک شمع ہے دلیل سحر سو خاموش ہے
  4. وادیءعشق سے کوئی نہیں آیا جاکر آو آواز لگائیں سر صحرا جا کر بزم جاناں میں تو سب اہل طلب جاتے ہیں کبھی مقتل میں بهی دکھلائیں تماشا جاکر کن زمینوں پہ مری خاک لہو روئے گی کس سمندر میں گریں گے میرے دریا جا کر ایک موہوم سی امید ہے تجه سے ورنہ آج تک آیا نہیں کوئی مسیحا جاکر دیکه یہ حوصلہ میرا مرے بزدل دشمن تجه کو لشکر میں پکارا تن تنہا جاکر اس شہ حسن کے در پر ہے فقیروں کا ہجوم یار ہم بهی نہ کریں عرض تمنا جا کر ہم تجهے منع تو کرتے نہیں جانے سے فراز جا اس کے در پہ مگر ہاته نہ پهیلا جا کر فراز احمد ...........
  5. ﻧﮑﮭﻮﮞ ﺳﮯ ﺧﻮﺍﺏ، ﺩﻝ ﺳﮯ ﺗﻤﻨﺎ ﺗﻤﺎﻡ ﺷﺪ ﺗﻢ ﮐﯿﺎ ﮔﺌﮯ، ﮐﮧ ﺷﻮﻕِ ﻧﻈﺎﺭﺍ ﺗﻤﺎﻡ ﺷﺪ ....خان ضمیر
  • Recently Browsing   0 members

    No registered users viewing this page.

×
×
  • Create New...